تازہ ترین

سرنولاک ڈائون سے زندگی کی رفتار تھم گئی

سڑکیں سنسان،بازارویران،ہرسوخاموشی،پبلک ونجی ٹرانسپورٹ بھی متاثر

تاریخ    14 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//سرینگر سمیت وادی کے دیگر اضلاع میں سر نو لاک ڈائون کے نتیجے میں عام زندگی کی رفتار پھر سے تھم گئی،جبکہ ہر سو ایک بار پھر سڑکیں جہاں ویرانی کا منظر پیش کر رہی تھیں وہی بازار سنسان تھے۔ انتظامیہ نے یوم شہداء کے پیش نظر  پائین شہر میں واقع زیارت نقشبند صاحب ؒ کے علاقے کو سیل کیا تھا۔ وادی میں کرونا وائرس کے کیسوں اور اموات کی تعداد میں ہوشربا اضافے کے بعد پیر سے غیر معینہ عرصہ تک کیلئے ضلع سطحوں پر  بیشتر علاقوں میں سر نو لاک ڈائون نافذکیا گیا۔انتظامیہ نے سرینگر کے88علاقوں کی نشاندہی کی اور یہاں لوگوں کی آزاد انہ نقل وحمل روکنے کیلئے سخت ترین بندشیں عائد کی گئیں ۔اس مقصد کے لئے آہنی سلاخوں سے ریڈ زونز کو مکمل طور پر سیل کیا گیا ۔ شہر میں سوموار کو سنا ٹا چھایا رہا کیونکہ تجارتی مرکز لالچوک کو اتوار کی شام  ہی فورسز نے مکمل طور پر سیل کیا تھا ۔شہر کے کئی علاقوں میں پولیس گاڑیوں پر نصب لائوڈ اسپیکروں کے ذریعے پابندیوں اور بندشوں کو نافذ کرنے کا اعلان کیا گیا اور عوام سے تعاون دینے کی اپیل کرتے ہوئے لوگوں سے غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نہ آنے کی تلقین کی گئی ۔شہر میں سوموار کو سڑکیں سنسان اور بازار مکمل طور پر ویران نظر آئے،جبکہ دکان ،کاروباری و تجارتی مراکز بند رہے ، پبلک ٹرانسپورٹ کیساتھ ساتھ نجی گاڑیوں کی نقل وحرکت بھی مسدود رہی ۔سرینگر کے پائین شہر میں13جولائی1931کے شہداء کے حوالے سے منائے جانے والے دن کے پیش نظر حساس علاقوں میں اضافی فورسز اور پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا،جبکہ حضرت نقشبندصاحبؒ کے آستان عالیہ،جہاں پر یہ شہدا سپرد خاک ہے، کو بھی سیل کیا گیا تھا۔یوم شہداء کے سلسلے میں مزار شہداء پر گزشتہ7دہائیوں میں پہلی مرتبہ کوئی بھی سرکاری تقریب منعقد نہیں ہوئی۔حکام کے مطابق ضلع مجسٹریٹ گاندربل شفقت اقبال نے ضلع بھر میںکل 13اورآج 14 جولائی کو دفعہ144 نافذ رکھنے کے احکامات صادر کئے ہیں۔یہ احکامات کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کیلئے جاری کئے گئے ہیں، تاہم پابندیوں کا اطلاق ایمرجنسی سروسز پر نہیں ہوگا۔ ضلع بڈگام میں بھی سوموار کو دفعہ144کے تحت پابندیاں وبندشیں عائد رہیں ۔نامہ نگار اشرف چراغ اور فیاض بخاری کے مطابق،بانڈی پورہ ،کپوارہ اور بارہمولہ میں پہلے ہی تین روزہ لاک ڈائون کا اعلان انتظامیہ کی جانب سے کیا گیا ہے  ۔نامہ نگاروں کے مطابق جنوبی کشمیر کے پلوامہ ،کولگام ،شوپیان اور اننت ناگ میں پابندیاں اور بندشیں دوبارہ عائد کی گئیں ۔سوسوموار کو پوری واد ی میں دوبارہ کورونا لاک ڈائون کے تحت نافذ کی گئی بندشوں کے باعث معمو لات زندگی مکمل طور پر مفلوج ہوکر رہ گئے ۔شہر ودیہات کی سڑکیں سنسان اور بازار ویران نظر آرہے ہیںاورہر طرف پولیس اور فورسز اہلکار نظر آرہے ہیں ۔