عوام کی لاپرواہی ناقابل برداشت: ڈی سی بارہمولہ

۔45 دوکانیں اور14 جم سینٹر سربمہر، 59ہزار روپے جرمانہ وصول، 3ایف آئی آر درج

تاریخ    13 جولائی 2020 (30 : 01 AM)   


فیاض بخاری
بارہمولہ// ضلع مجسٹریٹ بارہمولہ غلام نبی انتو نے اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ انتظامیہ کورونا وائرس کے پھیلائو کے خطرے کو کم کرنے کیلئے تمام معیاری عملیاتی طریقہ کار (ایس او پی) اور ہدایات پر سختی سے عملدرآمد کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس بات کو یقینی بنانے کیلئے ایک قابل عمل میکانزم تیار کیا گیا ہے اور عوامی مفاد کیلئے کسی بھی قسم کی لاپرواہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ پریس کانفرنس کے دوران ضلع ترقیاتی کمشنر نے کہاکہ کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے واقعات ضلع انتظامیہ نے وبا کے پھیلاؤ پر قابو پانے کیلئے سنجیدہ اقدامات کئے ہیں لیکن ان طریقوں سے عام لوگوں کے تعاون کے بغیر کوئی مثبت نتیجہ برآمد نہیں ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوامی خدمات جن میں سب سے اہم اشیاء خوردنی کی تقسیم شامل ہیں ، متاثر نہیں ہونگی ۔ انہوںنے کہا کہ ایک خصوصی خواتین دستہ تشکیل دیا جائے گا جو خواتین کے ذریعہ مطلوبہ ایس او پیز پر عمل درآمد کی نگرانی کرے گا۔ ڈی سی نے کہا کہ ہر دوکاندار کے لئے مجاز اتھارٹی کے ذریعہ کووڈ19 منفی سند جاری کرنا لازمی ہوگا جس کے بغیر دکاندار کو اپنی دکانیں کھولنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ انتظامیہ نے ہر ہفتے میں ایک بار پوری مارکیٹ کی صفائی عمل میں لائی جائے گی تاکہ صفائی برقرار رہے۔ ڈی سی نے کہا کہ ضلع میں ابھی تک  45 دوکانیں اور14 جم سینٹر سیل کردئے گئے ہیںجبکہ کووڈ 19 لاک ڈاؤن کے SOP کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں لوگوں سے  59ہزار 5سوروپے جرمانہ وصول کیا گیا اور 3ایف آئی آر بھی درج کئے گئے ہیں۔ضلع میں 61 ریڈ زون جبکہ 39 علاقے ہارٹ سپارٹ قرار دئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ضلع بارہمولہ میں آج تک 2800 لوگوں کے کووڈ ٹیسٹ کرائے گئے جس میں سے 1251 معاملات مثبت پائے گئے ہیں جن میں سے 513  افراد صحت یاب ہوئے ہیں اور 707  افراد ضلع کے مختلف کووڈ سینٹروں میں زیر علاج ہیں۔انہوںنے کہاکہ ضلع میں اب تک کورونا وائرس سے 32 افراد کی موت واقع ہوئی ہے، لاک ڈاون اوپن 1 پر سختی سے عمل کرانے کے لئے پولیس اور مجسٹریٹس کی مختلف ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیںاورزنانہ پولیس کوبھی متحرک کیاگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسی  بھی شخص کو ماسک پہنے بغیر پایا گیا تو اس سے موقع پر ہی جرمانہ وصول کیا جائے گا۔ انہوں نے مذید کہا کہ تفریح پارکوں میں داخلہ سرکار ی حکام نامہ کے مطابق ایس او پیز کی پیروی کے تحت جاری رہے گا ۔
 

تازہ ترین