جموںوکشمیر کی ’انڈیا گلوبل ویک ‘سہ روزہ ورچیول کانفرنس میں شرکت

ایک ملک ایک لائحہ عمل کا باب صحیح معنوںمیں کھولا ہے: ایل جی

تاریخ    13 جولائی 2020 (30 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//جموںوکشمیر حکومت نے اِنڈیا گلوبل ویک2020 ء کی سہ روزہ ورچیول کانفرنس میں شرکت کی۔ کانفرنس ،جس کا انعقاد انڈیا اِنگ گروپ کی جانب سے کیا ہے ،کا مرکزی خیال ’’بھارت اور بہتر نئی دنیا بحالی کی جانب‘‘ ۔کانفرنس میں 67ممالک کے 10,000 سے زائد ارکان نے شرکت کی جس کا مقصد عالمی سطح پر مثبت نظریوں کو فروغ دینا اور زندگی کے تمام شعبوں میں عالمی سطح کے غور و خوض کے لئے ایک پلیٹ فارم فراہم کرنا ہے۔جموں اینڈ کشمیر: ڈیولپمنٹ اینڈ بزنس فورم کے ایک خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر گریش چندر مرمو نے یوٹی حکومت کی جانب سے خطے کو ایک بڑے سرمایہ کاری منزل میں 12 شعبوں پر توجہ مرکوز کر کے تبدیل کرنے کے لئے کئے گئے اقدامات کو اُجاگر کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت جدید ترین بنیادی ڈھانچے کے توسط سے سرمایہ کاری موافق ماحول قائم کر رہی ہے جس کے لئے دو آئی ٹی پارکیں، دو اِن لینڈ کنٹینر ڈیپوئوں اور یوٹی کے 19 اضلاع میں 600ایکڑ سے زائد صنعتی اراضی بینک شامل ہیں۔اُنہوں نے کہاکہ ہم نے جموںوکشمیر اور بھارت کے درمیان تمام قواعد و ضوابط اور ادارہ جاتی رُکاوٹوں کو دُور کر کے ایک ملک ایک لائحہ عمل کا باب صحیح معنوںمیں کھولا ہے۔کمشنر سیکرٹری محکمہ صنعت و حرفت نے بھی جموںوکشمیر ’’ مواقع کی سرزمین ‘‘ کے موضوع پر پینل بحث میں اپنے خیالا ت کا اِظہار کیا۔کانفرنس کے دوران 75اجلاس منعقد ہوئے جس میں 250مقررین نے اپنے خیالات کا اِظہار کیا۔معروف مقررین میں وزیر اعظم نریندر مودی ، مرکزی وزیر برائے امور خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنکر ، مرکزی وزیر برائے ریلویز پیوش گوئیل ، برطانیہ کے خارجہ سیکرٹری ڈومنِک راب ، برطانیہ کے داخلہ سیکرٹری پریٹی پٹیل اور بھارت میں امریکہ کے سفارت کار کِن جسٹر شامل تھے۔
 

تازہ ترین