نوگام سیکٹر میں جھڑپ2جنگجوجان بحق | فوج کا دراندازی کی کوشش ناکام بنانے کا دعویٰ

تاریخ    12 جولائی 2020 (30 : 01 AM)   


اشرف چراغ
سرینگر//کپوارہ کے نوگام سیکٹر میں فوج نے دراندازی کی ایک کوشش کو ناکام بنانے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ اس دوران جھڑپ میں دوجنگجو جان بحق ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق حدمتارکہ پرتعینات اہلکاروں نے نوگام سیکٹر میں اُس پار مشتبہ نقل وحرکت دیکھی۔فوج نے ان کی نگرانی شروع کی اور دراندازوں کو پکڑنے کیلئے گھات لگائی ۔ فوجی ذرائع کے مطابق اس دوران جنگجوئوں نے سرحد پر لگائی گئی تار کو کاٹنے کی کوشش کی اور فوج نے تیزی سے کارروائی کرتے ہوئے اُنہیں للکاراتاہم جنگجوئوں نے فوج پر فائرنگ شروع کی۔فوج نے بھی جواب میں فائرنگ کی اور دوجنگجوئوں کو مارگرایا،جو اس پار آنے کی کوشش کررہے تھے۔بھاری اسلحہ سے لیس جنگجوفوجی وردی میں ملبوس تھے۔اُن کے قبضے سے دواے کے بندوقیں ،بارہ میگزین ،ایک پستول ،چار ہتھ گولے اور ریڈیوسیٹ برآمد کیا گیا۔ اس کے علاوہ ان کے پاس بھاری مقدار میں اشیائے خوردنی، پاکستان میں بنے ادویات اورڈیڑھ لاکھ روپے کی بھارتی اور پاکستانی کرنسی بھی برآمدہوئی۔  فوج نے فوری طور علاقہ کے ایک وسیع حصہ کو گھیرے میں لیکر تلاشی کاروائی شروع کی جو آخری اطلاعات تک جاری تھی جبکہ علاقہ میں مزید فوجی کمک طلب کی گئی ۔

پونچھ میں حدمتارکہ کے متصل جنگلات کی تلاشی 

یواین آئی

 
جموں// جموں و کشمیر کے ضلع پونچھ میں ہفتے کے روز سیکورٹی فورسز نے حدمتارکہ کے متصل جنگلات کے علاقوں کی بڑے پیمانے پر تلاشی کارروائی شروع کی۔ ایس ایس پی پونچھ رمیش کمار انگرال نے اس آپریشن کو معمول کی ایک کڑی قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ آپریشن قصبے کو محفوظ رکھنے کے لئے کئے جانے والے آپریشنز کی ایک کڑی تھی۔انہوں نے کہا،’’قصبے کو محفوظ رکھنے کے لئے جتنے بھی جنگلات کے علاقے اور مضافات ہیں، ان میں لگاتار آپریشنز کئے جاتے ہیں اور آج کا یہ آپریشن اسی سلسلے کی ایک کڑی تھی‘‘۔موصوف ایس ایس پی نے کہا کہ اس طرح کے آپریشنز سے ایک تو ان علاقوں کی سینیٹائزیشن ہوجاتی ہے اور دوسرا جوانوں کی بھی اورینٹیشن ہوجاتی ہے کہ اگر اس طرح کے حالات بن جائیں تو انہیں کس طرح رد عمل کرنا ہے۔انہوں نے کہ مستقبل میں بھی 15 اگست اور دیگر تہواروں کے پیش نظر اس طرح کے مزید آپریشنز کئے جائیں گے اور چیکنگ اور جامہ تلاشی کی کارروائیوں کو بھی مزید بڑھا دیا جائے گا۔ 
 

ایل او سی کے اُس پار300جنگجو دراندازی کیلئے تیار :میجر جنرل واٹس

فیاض بخاری
 
 بارہمولہ //حدمتارکہ کے اُس پار 250سے300جنگجو اِس پار دراندازی کرکے داخل ہونے کیلئے تیار ہیں۔اس بات کااظہار فوج کی19انفینٹری ڈویژن کے جنرل آفیسر کمانڈنگ میجر جنرل وریندرواٹس نے بارہ مولہ میں سنیچرکو ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ فوج نے کپوارہ میں دراندازی کی ایک کوشش کو ناکام بناتے ہوئے دودراندازوں کو مارگرایا جن کے قبضے سے اسلحہ اور گولہ بارود کے علاوہ ڈیڑھ لاکھ روپے کی بھارتی اور پاکستانی کرنسی بھی برآمد ہوئی ۔جنرل رویندر واٹس نے کہا کہ جب سے5اگست کو بھارت نے ایک بڑے فیصلے کا اعلان کیا،پاکستان کوششیں کررہا ہیں کہ وادی میں جنگجوئوں کو دھکیلا جائے،جو لوگوں کو بھڑکا کرامن امان کا مسئلہ پیدا کریں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان طویل عرصہ سے اس میں ناکام رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ فوج کو ایسی اطلاعات موصول ہوئی ہیں کہ شمالی کشمیرمیں جنگجو ممکنہ طور حملہ کرسکتے ہیں  اور ایسی تمام کوششوں کوناکام بنانے کیلئے فوج مستعداور چوکنا ہے ۔جنرل واٹس نے کہا کہ حدمتارکہ کے اُس پار لانچنگ پیڈوں پر جنگجوئوں کا مکمل قبضہ ہے اورہمارے اندازے کے مطابق 250سے300جنگجو اس پار دراندازی کرکے داخل ہونے کی تاک میں ہیں۔سنیچرصبح کو نوگام سیکٹر میں کی گئی کارروائی کے بارے میں انہوں نے کہا کہ نوگام سیکٹر میں حدمتارکہ کے پاس دو جنگجو فوج کے ساتھ مڈبھیڑ میں ہلاک ہوئے۔انہوںنے کہا کہ یہ درانداز سرحدی باڑھ کاٹ کر علاقہ میںداخل ہونے کی کوشش کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ فوج حدمتارکہ کا تقدس  برقرار رکھنے کیلئے پرعزم ہے اور کسی بھی نقل وحرکت کو ناکام بنایاجائے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان جنگجو ئوں کو بھڑکارہا ہے تاکہ وہ وادی میں اپنی کارروائیوں میں تیزی لائیں۔انہوں نے کہا کہ آنے والے دو چار ماہ کے دوران دراندازی میں اضافہ ہوسکتا ہے لیکن فوج کسی بھی  چیلنج کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہے۔
 

تازہ ترین