قمرواری میں پینے کے پانی کی سخت قلت | لوگ بوتل بند پانی خریدنے پر مجبور

تاریخ    12 جولائی 2020 (30 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر //درجہ حرارت میں مسلسل اضافہ اور سخت گرمی کے بیچ شہر کے قمروارری علاقہ میںلوگ پینے کے پانی کی بوند بوند کیلئے ترس رہے ہیں۔ قمرواری کے لوگوں نے بتایاکہ پورے قمرواری علاقے میں پینے کے پانی کی شدید قلت ہے ، خاص طور پر ارم پورہ قمرواری کے سیکٹرA1 کالونی میںپچھلے تین مہینوں سے پانی کی قلت کا مسئلہ لوگوں کیلئے سخت مشکلات کا باعث بن رہا ہے جس کے باعث کے ہزاروں نفوس پرمشتمل آ بادی پانی کی ایک ایک بوند کے لئے ترس رہی ہے۔طارق شفیع خان نامی شہری نے کہاکہ علاقہ میںصرف ایک گھنٹہ تک پانی آتا ہے اور اس ایک گھنٹہ میں فراہم ہونے والے پانی کا دباؤ اتنا کم ہوتاہے کہ ضرورت کے مطابق پانی ذخیرہ کرنا عملی طور پر ناممکن ہے۔لوگو ں کا کہنا ہے کہ اس علاقہ میں پینے کے پانی کا کوئی متبادل انتظام نہیں ہے جس کے نتیجے میں وہ دکانو ں سے پانی کی بوتلیں خریدکرکے استعمال کرتے ہیں جبکہ متعلقہ محکمہ کی نو ٹس میں معاملہ لانے کے با وجود بھی ان کے مشکلات کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر ضرورت کے مطابق پانی سپلائی نہیں کیا گیا تو کوویڈ 19 وبائی بیماری اور گرمی کے یہ شدید دن لوگوں کے حالات  مزیدبدتر کریں گے۔انہوں نے علاقے میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کی بحالی کے لئے چیف انجینئر پی ایچ ایچ ای سے فوری درخواست کی ۔ دریں اثنا ، چیف انجینئرپی ایچ ای افتخار احمد نے اس مسئلے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے شکایت کا نوٹس لیا ہے اور علاقے میں پانی کی قلت کے مسئلے کو حل کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ متعلقہ ایگزیکٹو انجینئر کو جلد از جلد اس مسئلے کو حل کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔(سی این ایس)
 

تازہ ترین