تازہ ترین

کورونا کا بڑھتا قہر| ایک دن میں 26 ہزار سے زائد کیس سامنے

ملک میں متاثرین کی تعداد 8لاکھ کے قریب پہنچی

تاریخ    11 جولائی 2020 (45 : 02 AM)   


 نئی دلی //ملک میں تیزی سے بڑھ رہے کورونا وائرس کے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 26ہزار506 کیس سامنے آئے ، جو اب تک ایک دن میں سب سے زیادہ ہیں۔مرکزی وزارت برائے صحت و خاندانی بہبود کی کی جانب سے جمعہ کے روز جاری اعداد و شمار کے مطابق ملک بھر میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے26ہزار506 نئے کیس سامنے آئے ہیں ، جس سے ملک میںکورونا متاثرین کی تعداد 7لاکھ93ہزار802 ہو گئی ہے۔تاہم اس وبا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے اور اس دوران19ہزار135 مریض صحت یاب ہوئے ہیں ، جن کو ملا کرمجموعی طورپر4لاکھ95ہزار513 مریض صحت یاب ہوئے ہیں۔ فی الوقت ملک میں کورونا وائرس کے2لاکھ76ہزار685 ایکٹو کیس ہیں۔اس دوران ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 475 ہلاکتوں سے ہلاک شدگان کی تعداد21ہزار604 ہوگئی ہے۔کورونا وبا سے سب سے زائد متاثر مہاراشٹر میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 6ہزار875 کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی تعداد 2لاکھ30ہزار599 ہوگئی اور 219 افراد ہلاک ہوگئے ، جس کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 9ہزار667 ہوگئی۔ تامل ناڈو میں متاثرین کی تعداد 1.25 لاکھ سے تجاوز کر گئی ۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ریاست میں کورونا کے کیسز کی تعداد 4ہزار231 بڑھ کر 1لاکھ26581 ہوگئی ہے اور اسی دوران 65 ہلاکتوں سے ہلاک شدگان کی بڑھ کر 1765 ہوگئی ہے ۔ قومی دارالحکومت دہلی میں کورونا وبا کی صورتحال اب کچھ قابو میں ہے اور کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کی شرح میں قدرے کمی آئی ہے ۔ دارالحکومت میں اب تک 1لاکھ07ہزار051 افراد کورونا سے متاثر ہوئے ہیں اور اس وبا کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد 3ہزار258 ہوگئی ہے ۔ریاست گجرات کووڈ 19 متاثرین کی تعداد کے معاملے میں چوتھے مقام پر ہے ، لیکن ہلاکتوں کی تعداد کے معاملے میں یہ مہاراشٹر اور دہلی کے بعد تیسرے مقام پر ہے ۔ گجرات میں اب تک 39ہزار194 افراد اس وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں اور 2ہزار800 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ اتر پردیش میں اب تک کورونا وائرس کے 32ہزار362 کیسز سا منے آئے ہیں اور 862 افراد اس وائرس کی وجہ سے ہلاک ہوگئے ہیں جبکہ 21ہزار127 مریض صحت یاب ہو ئے ہیں۔ کرناٹک میں 31ہزار105 افراد متاثر ہوئے ہیں اور 486 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ تلنگانہ میں متاثرین کی تعداد 30ہزار946 تک پہنچ چکی ہے اور 331 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔مغربی بنگال میں 25ہزار911 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور 854 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ آندھرا پردیش میں متاثرین کی تعداد میں تیزی سے اضافے کی وجہ سے ،یہ فہرست میں راجستھان سے اوپر آ گئی ہے ۔
 

۔ 12 جولائی سے 19 جولائی تک بھوپال بند

۔بھوپال// مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں کورونا کا قہر جاری ہے۔ کورونا کے بڑھتے قہر کو دیکھتے ہوئے ضلع انتظامیہ نے راجدھانی بھوپال کے ان علاقوں میں مکمل لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جہاں پر کورونا مریضوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔ فیصلہ کے تحت راجدھانی کے ابراہیم گنج اور اس سے متصل علاقوں میں ایک ہفتے کے لئے مکمل لاک ڈاؤن ہوگا۔راجدھانی بھوپال میں اَن لاک میں یہ پہلا موقع ہوگا، جب کچھ علاقوں میں مکمل لاک ڈاؤن ہوگا۔ لاک ڈاؤن 12 جولائی سے 19 جولائی تک رہے گا۔ بھوپال ضلع کلکٹر اویناش لاوانیا نے اس کا اعلان کردیا ہے۔انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ بھوپال کا ابراہیم گنج اور اس سے متصل علاقہ شہر میں نیا ہاٹ اسپاٹ کی شکل میں ابھر کر سامنے آیا ہے۔ ان علاقوں میں 12 جولائی سے 19 جولائی تک مکمل لاک ڈاؤن رہے گا۔
 

پٹنہ میں ایک ہفتہ کا لاک ڈاؤن نافذ

پٹنہ// بہار کے پٹنہ شہر میں 1600 سے زیادہ کورونا مریضوں کی تعداد ہو گئی ہے۔ لگاتار بہار کے دارالحکومت پٹنہ میں بڑھ رہی کورونا مریضوں کی تعداد کے بعدپٹنہ ضلع انتظامیہ نے پٹنہ کے شہری علاقہ میں ایک ہفتہ کے لئے لاک ڈاؤن لگایا ہے۔ تاہم، لاک ڈاون میں ضروری چیزیں جیسے میڈیکل اسٹور، کرانہ، پھل، دودھ کی دکان، سبزی مارکیٹ وغیرہ کو ایک خاص وقت میں کھولنے کی اجازت دی گئی ہے۔دس جولائی سے لیکر سولہ جولائی تک لاک ڈاون رہے گا جس میں صبح چھ بجے سے دس بجے تک اور شام چار بجے سے سات بجے تک ضروری اشیاء کی دکانیں کھلی رہیں گی۔ 
 

مغربی بنگال میں ماسک نہ 

پہننے والوں پر جرمانہ عائد ہوگا

نئی دلی //مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتابنرجی نے پولیس کو کنٹینمنٹ زون علاقوں میں سختی برتے کی اپیل کی ہے۔ ماسک کے بغیر نظر آنے والے لوگوں پر جرمانہ عائد کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ کولکاتا  کے 25 علاقوں میں لاک ڈاؤن ہے جبکہ شمالی 24 پرگنہ کے 95 علاقوں اور جنوبی 24 پرگنہ کے 63 علاقوں میں لاک ڈاؤن شروع ہوگیا ہے۔ اس کے علاوہ ہوڑہ کے 148، مالدہ کے 61 اور سلی گوڑی کے 51 علاقوں میں لاک ڈاؤن شروع ہوچکا ہے۔ حکومت کے ذرائع کے مطابق ان علاقوں میں سختی کی جائے گی اور آمد ورفت مکمل طور پر بند رہے گا۔ کولکاتا کے 25 علاقوں میں لاک ڈاؤن ہے جب کہ شمالی 24 پرگنہ کے 95 علاقوں اور جنوبی 24 پرگنہ کے 63 علاقوں میں لاک ڈاؤن شروع ہوگیا ہے۔لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ اس کی وجہ سے کولکاتا ہائی کورٹ کو بھی جمعہ سے اگلے چار دن کے لئے بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے حکومت کے مطابق کنٹیمنٹ زون علاقوں میں مکمل  لاک ڈاؤن 7 دن تک جاری رہے گا۔ 7 دن کے بعد لاک ڈاؤن کے سلسلے میں ریاستی حکومت فیصلہ کرے گی۔ تاہم لاک ڈاؤن میں ہنگامی خدمات کو چھوٹ دی گئی ہے۔