پلوامہ کا متاثرہ طالبعلم راجوری پہنچ گیا

ساتھی کے ہمراہ تیل ٹینکر کے اند رچھپ کر مغل شاہراہ سے سفر کیا

تاریخ    6 جولائی 2020 (00 : 02 AM)   


سمت بھارگو
راجوری //فلمی انداز میں پلوامہ کا ایک کورونا متاثرہ نوجوان طالبعلم شوپیاں کے اپنے ساتھی کے ہمراہ بذریعہ مغل شاہراہ تیل کے ٹینکر کے اندر چھپ کر پونچھ پہنچنے میں کامیاب ہوگیا جہاں سے ان دونوں نے دو مقامی افراد کی مدد سے راجوری کا سفر کیا ۔متاثرہ نوجوان کوراجوری میں آئیسو لیشن کردیاگیاہے جبکہ اس کے ساتھی کو انتظامی قرنطینہ میں رکھاگیاہے۔یہ طالبعلم بابا غلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی راجوری میں بی ٹیک تیسرے سمسٹر میں زیرتعلیم ہے ۔ذرائع نے بتایاکہ طالبعلم کے راجوری پہنچنے پر پلوامہ انتظامیہ سے پتہ چلاکہ وہ کورونا سے متاثر ہے ۔ذرائع نے بتایاکہ یہ طالبعلم شوپیاں کے ایک ساتھی طالبعلم کے ہمراہ پرائیویٹ ملازمت کے سلسلے میں راجوری آیا۔اس معاملے کی تحقیقات کررہے افسر نے بتایا’’پلوامہ کایہ نوجوان طالبعلم اپنے ساتھی کے ہمراہ تیل کے ایک ٹینکر میں چھپ کر بذریعہ مغل شاہراہ بفلیاز تک پہنچاجہاں سے وہ دونوں اس ٹینکر سے اترگئے اورپھر وہ وہاں ایک کار پر بیٹھ کر راجوری پہنچے ‘‘۔انہوں نے بتایاکہ راجوری پہنچنے پر انہیں پلوامہ انتظامیہ سے پتہ چلاکہ یہ نوجوان کورونا سے متاثر ہے جس کے بعد اسے آئیسو لیٹ کردیاگیاہے اور ساتھ ہی نمونے لیکر جانچ کیلئے بھیج دیئے گئے ہیں ۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجوری شیر سنگھ نے بتایاکہ پلوامہ سے حکام نے سنیچر کی شام کو بتایاکہ راجوری پہنچنے والا لڑکا کورونا پازیٹو ہے ۔انہوں نے بتایا’’ہماری ہسپتال کی ٹیموں نے اس لڑکے کو پکڑلیااور اس کے ساتھی کو بھی انتظامیہ قرنطینہ کیاگیاہے‘‘۔شیر سنگھ نے مزید بتایاکہ اس معاملے کی تحقیقات ہورہی ہے اور پونچھ انتظامیہ سے پتہ چلاہے کہ بہرام گلہ سرنکوٹ کے دو افراد نے کشمیر سے آنے والے ان لڑکوں کو اپنی کار میں بٹھاکر راجوری پہنچایا جو ان کے دوست ہیں ۔انہوں نے بتایاکہ پونچھ کے ان دونوں افراد کو بھی آئیسو لیٹ کردیاگیاہے۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرکاکہناتھا’’یہ کچھ لوگوں کی طرف سے لاپرواہی کا معاملہ ہے کہ دولڑکے مغل شاہراہ سے ایک ٹینکرکے اندرچھپ کر سفرکرکے یہاں پہنچے ہیں ‘‘۔
 

تازہ ترین