زرعی اراضی پر تجارتی مراکز کا قیام | گاندربل ضلع میں سلسلہ جاری

تاریخ    6 جولائی 2020 (00 : 02 AM)   


ارشاد احمد
گاندربل//ضلع گاندربل کے مختلف علاقوں میں زرعی اراضی پر تعمیرات کا سلسلہ شدومد سے جاری ہے ۔سمبل سے منیگام تک 2010 میں ٹریفک کا دباو¿ کم کرنے کے لئے بائی پاس عوام کے نام وقف کیا گیا جس کے ساتھ ہی بارسو،کرہامہ،کھرانہامہ،لار ،وتہ لار ،بنہ ہامہ اور منیگام میں آبی اول اراضی میں ریونیو ایکٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بڑے بڑے تجارتی مراکز،دوکانیں اور دیگر کاروباری مراکز تعمیر کئے گئے ۔کرہامہ اور بارسو کے کئی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ان علاقوں میں بہترین دھان کی پیداوار ہوتی تھی لیکن بائی پاس تعمیر کرنے کے بعد تین تین چار چار منزلہ تجارتی مراکز تعمیر کئے گئے اور آج بھی یہ سلسلہ بلا روک ٹوک جاری ہے۔ ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل شفقت اقبال نے اس سلسلے میں کہا کہ آبی اول میں کسی بھی شخص کو ناجائز تعمیرات کھڑی کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ کرہامہ اور بارسو سے متعلق مفصل رپورٹ حاصل کی جائے گی ۔
 

تازہ ترین