تازہ ترین

خو د معذور ،اکلوتابیٹا بھی معذور، مکان پچھلے سال بارشوں میں ڈھہ گیا

حد متارکہ پر بسنے والے محمد اسحق کاکوئی پرسان حال نہیں،پی ایم اے وائی سکیم بھی کام نہ آئی

تاریخ    30 جون 2020 (00 : 03 AM)   


جاوید اقبال
مینڈھر//خود جسمانی طور پر ناخیز ، اکلوتابیٹابھی معذوراور مکان بھی ڈیڑھ سال قبل بھاری بارشوں کے باعث ڈھہ گیا ۔یہ کہانی ہے حد متارکہ پر بسنے والے محمد اسحق ولد غلام محمد کی جو دانے دانے کا محتاج ہے اور اس کی اہلیہ لوگوں کے گھروں میں محنت مزدوری کرکے اس خاندان کی کفالت کررہی ہے ۔محمد اسحق مینڈھر کے منکوٹ سیکٹر میں حد متارکہ پر واقع دھلاڑ تراڑاں ساگرہ علاقے میں رہتاہے ۔وہ پہلے سے ہی مالی تنگدستی اوردیگر مسائل کاسامناکررہاتھاتاہم ڈیڑھ سال قبل اس وقت اس پر آفت ٹوٹ پڑی جب بارشوں کے سبب اس کا مکان گر گیاتھااوراس وقت اس کا خاندان صرف ایک کمرے میں رہ رہاہے جو بھی خستہ حالی کاشکار ہے۔اس کی 4 جوان بیٹیاں ہیں جبکہ ایک ہی بیٹا ہے اور بھی جسمانی طور پر معذور ہے ۔اسحق کی اہلیہ گائوں میں لوگوں کے گھروں میں کام کاج کرکے گھر کا خرچہ چلارہی ہے اور اسے گھر میں موجود دو معذوروں کی دیکھ ریکھ بھی کرناپڑتی ہے ۔اگرچہ حکومت کی طرف سے ایسے افرادکی فلاح و بہبود کے نام پر کئی سکیمیں چلائی جارہی ہیں تاہم اس کنبے کو ان سکیموں سے بھی دور رکھاگیاہے۔ خاص طور پر مکانات کی تعمیر میں معاونت والی پردھان منتری آواس یوجنا کا بھی اسے فائدہ نہیں ملا۔مقامی لوگوں کاکہناہے کہ محکمہ دیہی ترقی و پنچایتی راج نے اس کی پی ایم اے وائی کے تحت مکان کی تعمیر میں کوئی معاونت نہیں کی اور اس کانام مکانات کی فہرست میں شامل ہے بھی یا نہیں،اس بارے میںبھی تذبذب پایاجارہاہے ۔مقامی سرپنچ نے بتایاکہ محمد اسحق کا لسٹ میں نام نہیں ہے البتہ سیکریٹری پنچایت نے بتایاکہ نام 69نمبر شمار پر موجودہے ۔متعلقہ سرپنچ زینب خاتون نے بتایاکہ بارہا محکمہ کے ملازمین و افسران سے گزارش کی گئی کہ اس کے مکان کو ترجیح دی جائے کیونکہ اسے واقعی میں پریشانی کاسامناہے لیکن کوئی سنوائی نہیں ہورہی ۔ان کاکہناہے کہ ان کی پنچایت میں250مکانات کی فہرست مرتب کی گئی تھی تاہم ان میں سے صرف 1مکان کو جیو ٹیگ کیاگیاہے اور محکمہ کے ملازمین من مرضی سے کام کررہے ہیں ۔انہوں نے بتایاکہ ان کی پنچایت سرحد پر واقع ہے جہاں کے زیادہ تر لوگ غریب ہیں جن کوحکومتی امداد کی ضرورت ہے۔رابطہ کرنے پر بلاک ڈیولپمنٹ افسر منکوٹ اعجاز قریشی نے رابطہ کرنے پر بتایاکہ زیادہ تر پنچایتیں فائرنگ کی رینج میں ہیں جہاں کشیدگی کے دوران کام نہیں ہوپایا اور نہ ہی جیو ٹیگ کا کام ہوسکاہے۔انہوں نے بتایاکہ جب بھی ڈپٹی کمشنر سے میٹنگ ہوتی ہے تو وہ اس پریشانی کو بتاتے ہیں ۔محمد اسحق کے معاملے میں انہوں نے کہاکہ مکان کی تعمیر کیلئے ترجیح دی جائے گی۔