سیلانیوں کو گگن گیرمیں نہ روکا جائے،بیوپار منڈل سونہ مرگ کی اپیل

تاریخ    23 جون 2020 (00 : 03 AM)   


غلام نبی رینہ
کنگن//لاک ڈاؤن میں نرمی کے باوجود بھی صحت افزا مقام سونہ مرگ کی طرف مقامی سیلانیوں کو آنے کی اجازت نہیں ہے ۔سونہ مرگ کے دوکانداروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے باوجود صحت افزا مقام سونہ مرگ کی طرف آنے والے مقامی سیلانیوں کو گگن گیر سے آگے آنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جس کی وجہ سے سونہ مرگ میں تجارت پیشہ سے وابستہ افراد پریشان ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ جب لاک ڈاؤن چل رہا تھا تو سونہ مرگ میں چند ایک دوکاندار موجود تھے لیکن جب لاک ڈاؤن میں نرمی دی گئی تو یہاں 50فیصد دوکانداروں نے اپنا کاروبار شروع کیا لیکن سیلانیوں کو گگن گیر سے آگے بڑھنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ بیو پار منڈل سونہ مرگ کے صدر شبیر احمد لون نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سونہ مرگ میں شہر سرینگر اور دوسرے علاقوں سے تجارت پیشہ سے وابستہ لوگ چھ ماہ تک روز گار حاصل کرنے کی تلاش میں آتے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے باوجود بھی صحت افزا مقام سونہ مرگ کی طرف مقامی سیلانیوں کو گگن گیر سے آگے آنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جو اُن کے ساتھ زیادتی ہے ۔انہوںنے ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل شفقت اقبال، ایس ایس ایس گاندربل خلیل احمد پو سوال سے اپیل کی ہے کہ سونہ مرگ میں لطف اندوز ہونے کیلئے سیلانیوں کو گگن گیر میں ہی روکنے کا سلسلہ ترک کیا جائے۔
 

تازہ ترین