تازہ ترین

اموات میں مزید 2کا اضافہ، تعداد83 | اتوار کو 122 مثبت ،81افراد کا سفری پس منظر تھا،4حاملہ خواتین، طبی عملہ کا ایک ملازم اور 12اہلکار بھی شامل

تاریخ    22 جون 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
 سرینگر //کشمیر میں کورونا وائرس سے اتوار 21جون کو مزید 2 اموات کے بعد مرنے والوں کی تعداد 83 ہوگئی ہے جن میں 10جموں جبکہ 73کشمیر صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔ اس دوران جموں و کشمیر میں 4 حاملہ خواتین ، پولیس ،فوج اورنیم فوجی دستوں کے 12 اہلکاروں سمیت 122 افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطرح متاثرین کی تعداد 5956ہوگئی ہے جن میں سے 1366جموں جبکہ 4590کشمیر صوبے سے ہے۔اتوار کو 122 متاثرین میں81سفر کر کے آپس آئے ہیں۔متاثرین میں سے 6 کولگام، 32 سرینگر، 15 اننت ناگ، 17 بارہمولہ، 5کپوارہ، ایک پلوامہ، 15 بڈگام، 10 بانڈی پورہ،  ایک گاندربل، 3 ادھمپور، ایک رام بن، 5 کٹھوعہ، 2 پونچھ، 8 راجوری اور ایک کشتواڑ سے تعلق رکھتا ہے۔

مزید 2فوت

اتوار کو متاثرین کی اموات کا سلسلہ سکمز صورہ سے شروع ہوا جہاں نوگام بارہمولہ سے تعلق رکھنے والا ایک 51سالہ شخص صبح سویرے فوت ہوگیا۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’51سالہ شخص کو28مئی کو اسپتال میں ہائی بلڈ پریشر اور گردوں میں خرابی کی وجہ سے داخل کیا گیا،کیونکہ مذکورہ شخص کے گردے کو سال 2011میں تبدیل کیا گیا تھا ‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا ’’ مریض کو ڈائلیسز(Dailysisٰ) کیلئے فیسچولا(AV fistula) لگانے کیلئے کی تیاری کررہے تھے کیونکہ اسکے خون میں Creatinineکی مقدار 8تک پہنچ گئی تھی اور اسکی رپورٹ پہلے ہی مثبت آئی تھی‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ fistulaلگانے سے قبل ہی مریض کی موت ہوگئی۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ شام 5بجکر 30منٹ پر کولگام سے تعلق رکھنے والی ایک 60سالہ خاتون کو صدمہ کی وجہ سے سنیچر کو صدر اسپتال سرینگر میں منتقل کیا گیا‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ خاتون کی نازک حالت دیکھ کر فوراً نمونے حاصل کرکے خاتون کو وارڈ 2اے میں منتقل کیا گیا لیکن وہ صدمہ سے باہر نہیں آئی اور فوت ہوگئی۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ مذکورہ خاتون کی رپورٹ بھی مرنے کے بعد مثبت آئی ہے۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ فوت ہونے والے افرادکے لواحقین کو قوائد و ضوابط کی جانکاری دی گئی اور پولیس کو بھی مطلع کیا گیا ہے۔  

سکمز صورہ

میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران2430نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں 37مثبت جبکہ 2393کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’20جون کو سرینگر ائیر پورٹ سے موصول 492نمونوں مین سے 8مثبت جبکہ 484نمونوں کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا ’’ 8متاثرین میں سے 3کولگام،2سرینگر، ایک بارہمولہ، ایک اننت ناگ اور ایک کا تعلق بانڈی پورہ سے ہے۔ڈاکٹر جان نے بتایا ’’ مختلف اسپتالوں سے موصول 1938نمونوں میں سے 29مثبت جبکہ1909کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ 29متاثرین میں سے 15انت ناگ،6بانڈی پورہ،2سرینگر،2کولگام، ایک گاندربل،  ایک آسام، ایک مغربی بنگال اور ایک کا تعلق مدھیہ پردیس سے ہے۔  انہوں نے کہا کہ اننت ناگ کے 15متاثرین میں سے 3میر میدان ڈورو، 4پنچل تھن(Panchalthan)2شانگس، ایک مہری پورہ اننت ناگ، ایک عادی گام اننت ناگ،چکن پورہ کرانگسو اننت ناگ، ایک ونپوہ اننت ناگ اور ایک بدس گام اننت ناگ سے تعلق رکھتا ہے۔ ڈاکٹر جان نے بتایا کہ بانڈی پورہ کے 6متاثرین سے 5اونہ گام  اور ایک وارڈ نمبر 6بانڈی پورہ سے تعلق رکھتا ہے۔  انہوں نے کہا کہ سکمز صورہ کے نمونوں میں سے  ایک وائے کے پورہ کولگام، ایک سکمز صورہ،  ایک رعناواری سرینگر، ایک گوپال پورہ  اننت ناگ اور ایک سبو کولگام سے تعلق رکھتا ہے۔  انہوں نے کہا کہ گاندربل کے ایک 49سالہ شخص کی رپورٹ بھی مثبت آئی ہے۔ ڈاکٹر جان نے بتایا کہ اس کے علاوہ تین غیر ریاستی باشندوں کی رپورٹیں بھی مثبت آئیں ہیں جن میں سے ایک موری گائوں آسام، ایک مالڈہ مغربی بنگال اور ایک کا تعلق گولیار مدھیہ پردیس سے ہے۔ انسٹی ٹیوٹ کے شعبہ عوامی رابطہ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار میںبتایا گیا ہے کہ ابتک کل605مشتبہ مریضوں کا داخلہ کیا گیا جن میں سے479مریضوں کو قرنطینہ کی مدت مکمل کرنے کے بعد گھر روانہ کردیا گیا جبکہ69مثبت قرار دئے گئے مریضوں کو گھر بھیجا گیا ہے۔ابتک86852نمونوں کی تشخیص کی گئی ہے جن میں سے829648کو منفی قرار دیا گیا ہے جبکہ1734مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔

جے وی سی سرینگر

پرنسپل سکمز میڈیکل کالج ڈاکٹر ریاض احمد اینتو نے بتایا ’’پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 646نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 22مثبت جبکہ 624نمونوں کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر ریاض احمد اینتو نے بتایا ’’ 22متاثرین میں سے 15بڈگام اور 7سرینگر شہر سے تعلق رکھتے ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ بڈگام کے 15متاثرین میں سے 8نورپورہ ہمہامہ،4کائرہ ماگام، ایک رتسنہ، ایک کانی ہامہ اور ایک کا تعلق ایس کے پورہ سے ہے۔ ڈاکٹر ریاض کا کہنا تھا کہ سرینگر کے 7متاثرین میں سے 2صورہ، ایک کرن نگر، ایک رعناواری، امدا کدل، ایک لال بازار اور ایک درگاہ حضرتبل سے تعلق رکھتا ہے۔  

سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ

سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 640نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 36مثبت جبکہ 604کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں۔سی ڈی سپتال میں موجود ذرائع نے بتایا کہ 36متاثرین میں سے14خانپورہ بارہمولہ،2دوبی ون، ایک ملنگ پورہ، 8دلنہ بارہمولہ سے تعلق رکھتے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ سرینگر شہر کے9متاثرین میں سے 3ایچ ایم ٹی، ایک نائوپورہ خانیار، ایک رامباغ، ایک نوا کدل، ایک راجوری کدل اور ایک بمنہ سرینگر سے تعلق رکھتا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ اس کے علاوہ بی بی کنٹ بادامی باغ میں92بٹالین کے ایک اہلکار اور53بٹالین سی آر پی ایف بٹالین کا ایک اہلکار بھی شامل ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ اس کے علاوہ  ایک سوپور اور ایک متاثر ترال سے تعلق رکھتا ہے۔ 

جموں

جموں صوبے میں اتوار کو 20افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں  جن میں سے9 کرشنا لیبارٹری،8آئی آئی آئی ایم، 2جی ایم سی سرینگر جبکہ ایک مسافر کو جموں میں سکرینگ سے بچنے کیلئے فرار ہونے کی کوشش کے دوران پکڑا گیا اور بعد میں اسکی رپورٹ بھی مثبت آئی ہے۔محکمہ صحت کے ذرائع نے بتایا کہ اس کے علاوہ چھٹی کے بعد ڈیوٹی واپس لوٹنے 10بی ایس ایف اہلکاروں کی رپورٹ بھی لال پتھ لیبارٹری سے مثبت آئی ہے۔ 

حکومتی بیان

حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے122نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے102کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 20 کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد5,956تک پہنچ گئی ہے۔ میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے5,956 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے 2,492سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک3,382اَفراد شفایاب ہوئے ہیں ۔جموں وکشمیر میں کوروناوائرس سے مرنے والوں کی تعداد82تک پہنچ گئی ،جن میں سے 72کاتعلق کشمیر  صوبہ سے اور10کاتعلق جموں صوبہ سے ہیں۔اِس دوران اتوار کو مزید46 مریض صحتیاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے38 اور کشمیر صوبے کے 08 اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 3,07,638ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  21؍جون2020ء کی شام تک 3,01,682نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اب تک2,53,942افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ ان میں 38,829 اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ30 اَفراد کو ہسپتال قرنطین میں رکھا گیا ہے۔2,492کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ46,651 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق1,65,858اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔بلیٹن کے مطابق کولگام میں681مثبت معاملات پائے گئے ہیںجن میں199سرگرم معاملات ہیںاور 473صحتیاب ہوئے ہیںاور09 کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بارہمولہ میں اب تک کورونامریضوں کی تعداد 599ہوئی ہیںجن میں سے 318سرگرم معاملات ہیں اور14مریضوں کی موت واقع ہوئی ہیںاور 267صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ سری نگر میں اب تک کورونا وائرس کے 673 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں سے428 سرگرم معاملات ہیں ۔226 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ19 کی موت واقع ہوئی ہے۔اُدھر ضلع اننت ناگ میں 606 مثبت معاملے سامنے آئے ہیںجن میں175 سرگرم ہیں۔ 426 شفایاب ہوئے ہیں اور05 کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع شوپیان میں 614 مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں184 سرگرم ہیں اور 420صحتیا ب ہوئے ہیںجبکہ 10کی موت واقع ہوئی ہے۔ اِدھرکپواڑہ میں 440مثبت معاملات درج کئے گئے ہیں اور 118 سرگرم معاملات ہیں اور317صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ 05 کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بانڈی پورہ میں اب تک 270 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے51 سرگرم معاملات ہیں ، 218مریض صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بڈگام میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی کُل تعداد اب تک 326ہوئی ہیںجن میں سے 191سرگرم ہیں اور129اَفراد صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ06 کی موت واقع ہوئی ہے ۔پلوامہ ضلع میں کووِڈ ۔19کے 313 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں240 سرگرم معاملات ہیں اور 70  مریض صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ03 کی موت واقع ہوئی ہے۔ گاندربل میں کل 68مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں09 سرگرم معاملات ہیں اور 59 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔اسی طرح  جموں میں وائر س کے 309مثبت معاملات پائے گئے ہیں جن میں109سرگرم معاملات ہیں اور193صحت یاب ہوئے ہیںاور07 کی موت واقع ہوئی ہیجبکہ رام بن میں208معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 74سرگرم معاملات ہیں اور134 شفایاب ہوئے ہیںجبکہاودھمپور ضلع میں اب تک کورونا مریضوں کی کُل تعداد 212 ہوئی ہیں جن میں سے 94معاملات سرگرم ہیں۔ 117اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔دریں اثنأ کٹھوعہ میں194مثبت معاملہ سامنے آئے ہیںجن میں 88 سرگرم معاملات ہیںاور 106اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں۔اس طرح پونچھ میں110معاملے سامنے آئے ہیں جن میں 42سرگرم معاملات ہیں جبکہ68مریض شفایاب ہوئے ہیں۔ضلع سانبہ میں 127 مثبت معاملے کی تصدیق ہوئی ہے جن میں 77 سرگرم معاملات ہیں اور 50اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔راجوری ضلع میں کورونا کے اب تک82 مریض پائے گئے ہیںجن میں 46 معاملے سرگرم ہیں اور 35مریض شفایاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے اورریاسی میں بھی32 معاملات سامنے آئے ہیں جن میں09سرگرم ہیں اور23 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔ کشتواڑ میں25 مثبت معاملے سامنے آئے ہیں جن میں15 معاملے سرگرم ہیں اور10 مریض پوری طرح سے صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ڈوڈہ میں 67 معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے25معاملات سرگرم ہیں جبکہ41مریض پوری طرح شفایاب ہوئے ہیں اور ایک مریض کی موت واقع ہوئی ہے۔
 
 
 

 منفی رپورٹ کے باوجود شہری لقمہ اجل | 3ساتھیوں کی رپورٹ مثبت 

سید امجد شاہ 

جموں //ضلع کٹھوعہ میں ایک ادھیڑ عمر کا شہری قرنطین سنٹر میں وفات پاگیاجبکہ اس کی کورونا رپورٹ بھی منفی آئی ہے ۔تاہم انتظامیہ نے اس کی نعش کی آخری رسومات کی ادائیگی کورونا ایس او پی کے مطابق انجام دینے اور دوبارہ سے کورونا جانچ کروانے کا فیصلہ کیاہے کیونکہ اس کے کمرے میں ٹھہرائے گئے 3افراد کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ڈپٹی کمشنر کٹھوعہ اوپی بھگت نے بتایا’’ہیرا نگر کا 47سالہ شخص 15جون کوممبئی سے واپس لوٹا جہاں وہ مزدوری کرتاتھا‘‘۔انہوں نے بتایاکہ وہ پہلے سے ہی بیمار تھا اور اس کا گورنمنٹ میڈیکل کالج و ہسپتال میں معائنہ بھی کروایاگیا،وہ بیماری کی دوائی بھی لے رہاتھا ،تاہم اس کی گزشتہ روز آنیوالے کورونا رپورٹ منفی تھی لیکن اس کے کمرے میں رہ رہے 3دیگر افراد کی رپور ٹ مثبت آئی  ۔ڈپٹی کمشنر نے اس کی موت پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا’’آج صبح وہ وفات پایاگیا ،ہوسکتاہے کہ اسے دل کا دورہ پڑا ہو لیکن ہم نے اس کی نعش کورونا پروٹوکول کے تحت رکھی ہے ،اس کا دوسرا نمونہ لیاگیاہے ‘‘۔کسی بھی قرنطینہ سنٹر کے اندر ہونے والی یہ پہلی موت ہے ۔ڈپٹی کمشنر نے مزید بتایا’’ضلع کٹھوعہ میں کورونا کے پانچ نئے معاملات سامنے آئے ہیں جس کے ساتھ ہی کل تعداد194ہوگئی ہے جن میں سے اب تک 102مریض صحت یاب ہوچکے ہیں جبکہ 92کیس متحرک ہیں‘‘۔
 
 
 

فورسز کے مزید 13اہلکار متاثر

پر ویز احمد

سرینگر// وادی میں سنیچر کو بھی پولیس و فورسز کی مختلف ایجنسیوں سے وابستہ12 اہلکاروں کی رپورٹیں مثبت آئیں۔ سرینگر کے ایک قرنطین سینٹر میں رکھے گئے بی ایس ایف  کے 10اہلکاروں میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ اس طرح ابتک متاثرہ بی ایس ایف اہلکاروں کی تعداد 15تک پہنچ گئی ہے۔ اتوار کو سی آر پی  ایف  کے ایک اہلکار کی رپورٹ مثبت آئی ہے جو50بٹالین بارہمولہ میں تعینات ہے۔ بادامی باغ میں تعینات فوج کا ایک اہلکار بھی مثبت قرار پایا ہے۔متاثرہ سی آر پی ایف اہلکاروں کی تعداد150تک پہنچ گئی ہے جبکہ فوج کے مزید ایک اہلکار کیساتھ ہی متاثرہ فوجی اہلکاروں کی تعداد 16تک پہنچ گئی ہے۔سی آئی ایس ایف کا ایک اہلکار بھی متاثر ہوا ہے۔ وادی مٰن کورونا وائرس سے ابتک 203 پولیس اہلکار بھی وائرس میں مبتلاہوچکے ہیں۔
 
 

۔ 2,290مسافر پروازوں میں آئے | 1لاکھ 55ہزار کی ریل و بس سے واپسی

نیوز ڈیسک

 جموں//جموں وکشمیر یونین ٹریٹری میں گھریلو پروازوں کے دوبار ہ چالوہونے کے28واں دِن  2,290 مسافروں کو لے کر اتوار کو 20 پروازیں جموں اور سری نگر ہوائی اڈے پر اتریں ۔878مسافر جموں اور  1,412مسافروں کو لے کر11 پروازیں سری نگرمیں اتریں۔ادھرسرکاری اعداد و شما ر کے مطابق  ملک کی مختلف ریاستوں اور یوٹیز سے48,333درماندہ مسافر بسوں سے براستہ لکھن پور اور1,06,201افراد کو حکومت نے 60کووِڈ خصوصی ریل گاڑیوںکے ذریعے اودھمپو ر اور جموں ریلوے سٹیشنوں پر لایا۔
 

تازہ ترین