کورونا بحران | ملک مشکل ترین دور کیلئے تیار رہے

ہندوستانی طبی ماہرین کا سخت انتباہ

تاریخ    14 جون 2020 (00 : 03 AM)   


یو این آئی
نئی دلی //ہندوستان کے طبی ماہرین نے سخت انتباہ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں عالمگیر وبا ’’کورونا بحران ‘‘کا اب آغازہوا ہے جبکہ لوگ مشکل ترین دور کے لئے ذہنی طور تیار رہیں ۔ ہندوستان میں مسلسل کورونا وائرس کے کیسوں میں اچھال دیکھنے کو مل رہا ہے ،جسکی وجہ سے صورتحال تشویشنا ک رک اختیار کرتی جارہی ہے ۔ایک رپورٹ کے مطابق ملک میں کورونا کے مریضوں کی تعداد تین لاکھ کے پار ہوگئی ہے جبکہ اب تک ساڑھے 8 ہزار سے زیادہ لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ کورونا وائرس نے اب ملک میں رفتار پکڑ لی ہے اورہر روز اوسطا ً10 ہزار سے زیادہ نئے کیس سامنے آرہے ہیں۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ یہ بس ابھی آغاز ہے اور آنے والے دن اور بھی مشکل ہو سکتے ہیں۔ کئی تحقیق اور مطالعہ میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ جولائی اور اگست میں مریضوں کی تعداد میں ریکارڈ اضافہ ہو سکتا ہے۔ دہلی کے میکس اسپتال کے ڈاکٹر دیون جنیجا نے کہا کہ مشکل دور کے لئے ہر کسی کو تیار رہنا چاہئے۔ انہوں نے کہا ’ کورونا کے معاملے کب عروج پر پہنچیں گے یہ فی الحال ہم نہیں کہہ سکتے، ہم سب اچھے کی امید کر رہے ہیں، لیکن ذہنی اور جسمانی طور پر ہم کورونا سے لڑنے کے لئے تیار ہیں‘۔ ڈاکٹر جنیجا کے مطابق، ’حال کے دنوں میں مریضوں کی تعداد میں بھاری اضافہ ہوا ہے اور بیڈ کی مانگ کافی زیادہ بڑھ گئی ہے۔ ایسے میں ان پر دبائو ضرور بڑھا ہے، لیکن اس مشکل دور میں وہ ایک دوسرے کا حوصلہ بڑھا رہے ہیں‘۔ایک اور رپورٹ کے مطابق دہلی کے میکس اسپتال میں ایمبولینس سے مسلسل کورونا کے مریضوں کو لایا جا رہا ہے۔ یہاں کے 20فیصد بیڈ کورونا کے مریضوں کے لئے ’ریزرو‘ مخصوص کر دئیے گئے ہیں۔ یہاں کی ایک نرس جیوتی ایسٹر کا کہنا ہے کہ انہیں بھی تھوڑا ڈر لگتا ہے کیونکہ پتہ نہیں کہ کورونا وائرس ان پر کہاں سے اور کب حملہ کر دے۔ ڈاکٹروں اور نرسوں کے لئے پی پی ای کٹ پہن کر کام کرنا بھی بے حد مشکل چیلنج ہے۔ 
یہاں کی ایک نرس ونیتا ٹھاکر کا کہنا ہے کہ گرمی کے اس موسم میں طویل وقت تک اس کٹ کو پہننے کے لئے آپ کو ذہنی اور جسمانی طاقت کی ضرورت ہے۔(ایجنسئز)
 
 
 
 
 مودی 16اور17جون کووزرائے اعلیٰ سے تبادلہ خیال کریں گے
نئی دلی //ہندوستان میں کورونا وائرس وبا مسلسل بڑھتی ہی جارہی ہے۔ ہر دن کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔ ایسے میں وزیر اعظم نریندر مودی ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال پر وزرائے اعلی کے ساتھ تبادلہ خیال کیلئے16 اور17 جون کو پھر میٹنگ کریں گے۔ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ یہ میٹنگ ہوگی۔وزیر اعظم دفتر نے بھی اس کی تصدیق کردی ہے۔ویڈیو کانفرنس کے ذریعے ہونے والی بات چیت کا پروگرام دیتے ہوئے اس ٹوئٹ میں یہ بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم کس دن کس ریاست کے وزیراعلیٰ سے بات چیت کریں گے۔وزیر اعظم نریندر مودی 16 جون کی شام 3 بجے پنجاب ، آسام ، کیرالہ ، اتراکھنڈ ، جھارکھنڈ ، چھتیس گڑھ ، تری پورہ ، ہماچل پردیش ، چنڈی گڑھ ، گوا ، منی پور ، ناگالینڈ ، لداخ ، پڈوچیری ، اروناچل پردیش ، میگھالیہ ، میزورم ، انڈومان اور نکوبار ، دادر نگر حویلی اور دمن دیپ اور سکم و لکشدیپ کے وزرائے اعلی سے بات چیت کریں گے۔اس کے بعد وزیر اعظم نریندرمودی17 جون کی شام3 بجے مہاراشٹر ، تمل ناڈو ، دہلی ، گجرات ، راجستھان ، اترپردیش ، مدھیہ پردیش ، مغربی بنگال ، کرناٹک ، بہار ، آندھرا پردیش ، ہریانہ ، جموں و کشمیر ، تلنگانہ اور اوڈیسہ کے وزرائے اعلی اور لیفٹیننٹ گورنروںکے ساتھ میٹنگ کریں گے اور ریاستوں میں کورونا کی صورتحال پر تبادلہ خیال کریں گے۔قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے29 مئی کو کورونا کے خلاف لاگو لاک ڈاون پر وزیر اعظم نریندرمودی اور مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے ریاستوں کے وزرائے اعلی کے ساتھ میٹنگ کی تھی۔ اس کے بعد لاک ڈاون میں سلسلہ وار طریقہ سے راحت دینے کیلئے ’ان لاک ‘کی شروعات کی گئی تھی۔
 

تازہ ترین