گیلاس کے میوہ پر ٹرانسپورٹ کرایہ میں چھوٹ

مرکز 50فیصد سبسڈی دیگا، احکامات عنقریب

تاریخ    9 جون 2020 (00 : 03 AM)   


اشفاق سعید
سرینگر //گیلاس میوہ کو بیرون ریاستوں کی منڈیوں تک پہنچنانے کیلئے محکمہ باغبانی نے پہلی بار مرکزی سرکار کو ٹرانسپورٹ کرایہ میں 50فیصد سبسڈی دینے کی ایک تجویز بھیج دی تھی جس کی مرکزی سرکار نے منظوری دی ہے۔ ملک گیر سطح پر جاری لاک ڈائون کے بیچ گلاس کا میو ہ بیرون ریاستوں کی منڈیوں تک پہنچانے کیلئے محکمہ باغبانی نے پہلی بار مرکزی سرکار کو  ٹرانسپورٹ کرایہ میں50فیصد سبسڈی کیلئے ایک تجویز بھیج دی تھی۔معلوم ہوا ہے کہ مرکز نے اس تجویز کو منظوری دی ہے اور آئندہ کچھ روز میں اس ضمن میں باضابطہ طور پر احکامات صادر کئے جارہے ہیں۔محکمہ کے ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ کشمیر وادی میں اس وقت 15ہزار 9سو10 میٹرک ٹن گلاس کی پیداوار ریکارڈ ہو رہی ہے اور اس میں سے 7سے8ہزار میٹرک ٹن بیرون منڈیوں میں بھیجا جاتا ہے اور باقی کی کھپت یہاں ہوتی ہے ۔ لیکن اس سال کورونا وائرس کے پیش نظر یہ میوہ بیرون ریاستوں تک نہیں جا سکا ہے ۔اس شعبہ سے وابستہ ہزاروں لوگ جہاں نقصان کے حوالے سے انتظامیہ سے بڑے مالی پیکیج کا مانگ کر رہے ہیں۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ محکمہ نے 50فیصد ٹرانسپورٹ سبسڈی کیلئے ایک تجویز مرکزی اور یو ٹی حکام کو روانہ کی ہے اور اس حوالے سے وزارت فوڈ پروسسنگ عنقریب احکامات صادر کرنے جارہی ہے۔ ڈائریکٹر اعجاز احمد بٹ نے بتایا کہ گلاس میوہ سے وابستہ ڈیلروں کو میوہ بیرون منڈیوں تک پہنچانے پر کافی خرچہ آتا ہے اور اس سال بھی لاک ڈائون سے اُن کا کافی نقصان ہو اہے۔انہوں نے کہا کہ گلاس کے میوہ کو بیرون منڈیوں تک پہنچانے کیلئے زیادہ رقم درکار نہیں ہوگی اور اس پر کل 5کروڑ روپے کا خرچہ آئے گا ۔ 
 

تازہ ترین