کورونا وائرس؛ معمر خاتون فوت، مزید182متاثر

مہلوکین کی تعداد 36 تک پہنچ گئی، مزید67 واپس لوٹنے والے بھی وائرس میں مبتلا

تاریخ    6 جون 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //صدر اسپتال سرینگر میں بٹہ مالو سے تعلق رکھنے والی 65سالہ خاتون کی موت واقع ہونے سے جموں و کشمیر میں کورونا وائرس مہلوکین کی تعداد 36ہوگئی ہے۔ کورونا سے مرنے والوں میں 4جموں جبکہ 32افراد کشمیر میں لقمہ اجل بن گئے۔ جمعہ کو7حاملہ خواتین، 5ڈاکٹروں اور3پولیس اہلکاروں سمیت جموں و کشمیر میں182 مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں اور اس طرح جموں و کشمیر میں کورونا متاثرین کی تعداد 3324ہوگئی ہے جن میں سے809جموں جبکہ 2515کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ مثبت قرار دئے گئے 182مریضوں میں سے 42 شوپیان، 26ادھمپور، 22سرینگر، 13کپوارہ، 12جموں، 11رام بن، 11کٹھوعہ، 9بڈگام، 7بارہمولہ، 6اننت ناگ، 5ڈوڈہ،4بانڈی پورہ، 4سانبہ، 2پلوامہ، 2کولگام، 2پونچھ، 2راجوری، 1گاندربل اورایک ریاسی سے تعلق رکھتا ہے۔ 

خاتون فوت

بٹہ مالو سے تعلق رکھنے والی 65سالہ معمر خاتون صدر اسپتال سرینگر میں جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب وائرس کا 36واں شکار بن گئی۔ صدر اسپتال سرینگر کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر نذیر احمد چودھری نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ خاتون پہلے سے ہی کئی بیماریوں کی شکار تھی اور جمعرات کی صبح اس کو نمونیا کی وجہ سے اسپتال لایا گیا‘‘۔ ڈاکٹر نذیر چودھری نے بتایا ’’ جمعرات کو رات دیر گئے اسکی رپورٹ مثبت آئی لیکن وہ جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب کو ہی فوت ہوگئی‘‘۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ ابتک سرینگر ضلع میں سب سے زیادہ 9ا مواتیں ہوئی ہے۔

سی ڈی اسپتال 

سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 2469نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 64مثبت قرار دئے گئے جبکہ 2405نمونے منفی آئیں ہیں۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کے اعدادوشمار کے مطابق 64مثبت نمونوں میں24شوپیاں،13سرینگر،5بارہمولہ،4اننت ناگ، 5بڈگام، 1کپوارہ، 1کرگل، 1پلوامہ اور 2کولگام سے تعلق رکھتے ہیں۔ عدوشمار کے مطابق شوپیان کے 24مریضوں میں سے 15باغندر شوپیان،5پنجورہ شوپیان، ایک شوپیان ٹائون، ایک کیگام شوپیان اور ایک نارپورہ شوپیان سے تعلق رکھتا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ سرینگر ضلع کے 13مریضوں میں4خانیار، ایک نٹی پورہ، ایک شالیمار،4راولپورہ جن میں صدر اسپتال سرینگر میں تعینات 3ڈاکٹر بھی شامل ہیں اور ایک بٹہ مالو سے تعلق رکھتا ہے۔گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کے ذرائع کے مطابق سی ایم او پی سی آر کی جانب سے بھیجے گئے نمونوں میں سے 2ڈاکٹروں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ بتہ مالو کی 65سالہ خاتون فوت ہوگئی ہے۔ بارہمولہ ضلع کے 6مثبت مریضوں میں سے 3ونکورہ بارہمولہ،  ایک خاتون پورہ بارہمولہ اور ایک بارہمولہ ضلع سے تعلق رکھتا ہے۔ ذرائع کے مطابق بڈگام کے 5مریضوں میں سے4بیروہ بڈگام اور ا ایک ریشی پورہ کھاگ سے تعلق رکھتا ہے۔عدوشمار کے مطابق اس کے علاوہ کپوارہ، کرگل اور پلوامہ میں ایک ایک کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ سرحدی ضلع کپوارہ میں بھی ایک سب انسپکٹر اور پولیس اہلکار کی رپورٹ مثبت آئی ہے

سکمز صورہ

سکمز صورہ میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 2315نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 34مثبت آئیں ہیں جبکہ 2281نمونوں کی رپورٹ منفی قرار دی گئی ۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’ مثبت قرار دئے گئے 34مریضوں میں سے 12کپوارہ،8سرینگر،4بانڈی پورہ، 3شوپیان، 2بارہمولہ، ایک اننت ناگ، ایک راجوری اور ایک کولگام سے تعلق رکھتا ہے‘‘۔ ڈاکٹر جان نے بتایا ’’ کیمونٹی ہیلتھ سینٹر  اوڑی سے موصول  نمونوں میں سے 2مثبت مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں جن میں سے ایک کھان پورہ بارہمولہ اور ایک بونیار بارہمولہ سے تعلق رکھتا ہے۔  انہوں نے کہا کہ سی ایم او بانڈی پورہ سے موصول ہونے والے نمونوں میں سے 4کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں جن میں سے ایک مگنی پورہ جبکہ تین مریضوں کا تعلق بنکوٹ بانڈی پورہ سے تعلق رکھتے ہیں۔  انہوں نے کہا کہ سکمز صورہ کے نمونوں میں سے  3مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں جن میں سے ایک نائوپورہ شوپیان، ایک عشمقام اننت ناگ اور ایک کا تعلق ڈی ایچ پورہ کولگام سے ہے۔ ڈاکٹر جان نے بتایا کہ سی ایم او سرینگر کی طرف سے بھیجے گئے نمونوں میں سے 8کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں جن میں سے ایک بیروہ بڈگام، ایک لال بازار سرینگر، ایک پاندان نوہٹہ، ایک بمنہ سرینگر، ایک شوپیان ، ایک کلن سرینگر اور ایک کا تعلق پنتھ چوک سرینگر سے ہے. ڈاکٹر جان نے بتایا کہ اس کے علاوہ نوگام سرینگر کے 3مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں بھی مثبت قرار دی گئیں ہیں۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ نے بتایا’’ کیمونٹی ہیلتھ سینٹر کپوارہ، ایک ڈی پی ایل کپوارہ، ایک سلطان پورہ کپوارہ جبکہ دیگر 9وارنو کپوارہ سے تعلق رکھتے ہیں۔ڈاکٹر جان نے بتایا’’  ڈی پی ایل کپوارہ میں پولیس سب انسپکٹر اور ایک اہلکار متاثرین مین شامل ہیں۔انسٹی ٹیوٹ کے شعبہ عوامی رابطہ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار میںبتایا گیا ہے کہ ابتک کل506مشتبہ مریضوں کا داخلہ کیا گیا جن میں سے432مریضوں کو قرنطینہ کی مدت مکمل کرنے کے بعد گھر روانہ کردیا گیا جبکہ54مثبت قرار دئے گئے مریضوں کو گھر بھیجا گیا ہے۔ ابتک60523نمونوں کی تشخیص کی گئی ہے جن میں سے58990کو منفی قرار دیا گیا ہے جبکہ1008مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں۔ 

 جے وی سی بمنہ

 سکمز میڈیکل کالج بمنہ کے پرنسپل ڈاکٹر ریاض احمد ایتو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ پچھلے24گھنٹوں کے دوران ضلع اسپتال شوپیاں کی طرف سے بھیجے گئے 300نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے9مثبت جبکہ291رپورٹیں منفی قرار دی گئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر ریاض ایتو نے بتایا ’’مثبت قرار دئے گئے سبھی9مریضوں کا تعلق شوپیان ضلع سے ہے۔ انہوں نے کہا کہ9مریضوں میں سے 7وہیل شوپیان ،2کپرن شوپیان جبکہ ایک میمندر شوپیان، ایک کاری پورہ، ایک پوش ہامہ اور ایک گڈہ پورہ سے تعلق رکھتا ہے۔ 

 جموں

جموں صوبے میں جمعہ کو مثبت قرار دئے گئے75مریضوں میں سے42کی رپورٹ کمانڈ اسپتال جموں، 20جی ایم سی جموں،7کرشنا لیبارٹری جموں، 5مارڈرلیبارٹری اور ایک کی رپورٹ ’’کور‘‘لیبارٹری جموں سے مثبت آئی ہے۔ 

حکومتی  بیان

حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے182نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے108کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 74 کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد3,324تک پہنچ گئی ہے۔میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے3,324 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے 2,202سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک 1,086اَفراد شفایاب ہوئے ہیں ۔اِس دوران جمعہ کو مزید38 مریض صحتیاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے16 اور کشمیر صوبے کے 22 اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔جموں کشمیر میں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی مجموعی تعداد36تک پہنچ گئی ہے جس میں وادی کشمیر میں32جبکہ صوبہ جموں میں 4 اَفراد کی موت واقع ہوئی ہے ۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 2,02,257ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  05؍جون2020ء کی شام تک 1,98,933نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اب تک2,04,900افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ ان میں 44,017 اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ48 اَفراد کو ہسپتال قرنطین میں رکھا گیا ہے۔2,202کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ 55,520 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق1,03,077اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔بلیٹن کے مطابق ضلع اننت ناگ میں 383 مثبت معاملے سامنے آئے ہیںجن میں 223 سرگرم ہیں۔ 155 شفایاب ہوئے ہیں اور05 کی موت واقع ہوئی ہے۔کولگام میں364 مثبت معاملات پائے گئے ہیںجن میں309سرگرم معاملات ہیںاور 51صحتیاب ہوئے ہیںاور04 کی موت واقع ہوئی ہے۔اُدھر سری نگر میں اب تک کورونا وائرس کے 366 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں سے214 سرگرم معاملات ہیں ۔143 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ09 کی موت واقع ہوئی ہے جبکہ کپواڑہ میں 331مثبت معاملات درج کئے گئے ہیں اور 248 سرگرم معاملات ہیں اور82صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بارہمولہ میں اب تک کورونامریضوں کی تعداد 308ہوئی ہیںجن میں سے 197سرگرم معاملات ہیں اور07مریضوں کی موت واقع ہوئی ہیںاور 104صحتیاب ہوئے ہیں۔بانڈی پورہ میں اب تک 180 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے43 سرگرم معاملات ہیں ، 136مریض صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔اِدھرضلع شوپیان میں 282 مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں146 سرگرم ہیں اور 133صحتیا ب ہوئے ہیںجبکہ 03کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بڈگام میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی کُل تعداد اب تک 138ہوئی ہیںجن میں سے 69سرگرم ہیں اور67اَفراد صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ02 کی موت واقع ہوئی ہے ۔گاندربل میں کل 42مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں16 سرگرم معاملات ہیں اور 26 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔پلوامہ ضلع میں کووِڈ ۔19کے 121 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں108 سرگرم معاملات ہیں اور 13  مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ اسی طرح  جموں میں وائر س کے 190مثبت معاملات پائے گئے ہیں جن میں125سرگرم معاملات ہیں اور63صحت یاب ہوئے ہیںاور02 کی موت واقع ہوئی ہیجبکہ رام بن میں164معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 148سرگرم معاملات ہیں اور16 شفایاب ہوئے ہیںجبکہ کٹھوعہ میں94مثبت معاملہ سامنے آئے ہیںجن میں 62 سرگرم معاملات ہیںاور 32اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں۔دریں اثنأاودھمپور ضلع میں اب تک کورونا مریضوں کی کُل تعداد 123 ہوئی ہیں جن میں سے 93معاملات سرگرم ہیں۔ 29اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ ضلع سانبہ میں 55 مثبت معاملے کی تصدیق ہوئی ہے جن میں 34 سرگرم معاملات ہیں اور 21اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔اس طرح پونچھ میں65معاملے سامنے آئے ہیں جن میں 63سرگرم معاملات ہیں جبکہ02مریض شفایاب ہوئے ہیں۔راجوری ضلع میں کورونا کے اب تک48 مریض پائے گئے ہیںجن میں 43 معاملے سرگرم ہیں اور 05مریض شفایاب ہوئے ہیں اورریاسی میں بھی18 معاملات سامنے آئے ہیں جن میں15سرگرم ہیں اور03 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔ کشتواڑ میں17 مثبت معاملے سامنے آئے ہیں جن میں13 معاملے سرگرم ہیں اور04 مریض پوری طرح سے صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ڈوڈہ میں 35 معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے 33معاملات سرگرم ہیں جبکہ ایک مریض پوری طرح صحتیاب ہوا ہے اور ایک مریض کی موت واقع ہوئی ہے۔
 
 

مزید 3پولیس اہلکار مثبت

متاثرہ اہلکاروں کی تعداد122

 اشرف چراغ+شاہد ٹاک
 
کپوارہ+شوپیان// وادی میں مزید 3پولیس اہلکاروں میں وائرس پایا گیا ہے جن میں ایک سب انسپکٹر بھی شامل ہے۔ اس طرح کورونا سے متاثر ہوئے پولیس اہلکاروں کی تعداد 122 تک پہنچ گئی ہے۔جمعہ کو کپوارہ پولیس سٹیشن میں تعینات ایک سب انسپکٹر کا ٹیسٹ  مثبت آیا ہے جبکہ ڈسٹرکٹ پولیس لائنز کپوارہ میں تعینات آئی آر پی فورتھ بٹالین سے وابستہ ہیڈ کانسٹیبل بھی مثبت قرار دیا گیا ہے۔ کپوارہ پولیس سٹیشن  تین روز قبل ایک ملزم کے نمونے مثبت آئے تھے جس کے بعد تھانے میں تعینات میںسب انسپکٹر سمیت 10 اہلکاروں کو قرنطین کرلیا گیا جن میں سے مذکورہ آفیسر کا ٹیسٹ منفی آیا جبکہ دیگر 9ا ہلکار منفی قرار دیئے گئے۔ضلع پولیس لائنز کے جس ہیڈ کانسٹیبل کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے وہ 10روز  کیلئے رخصت پر گیا تھا اور واپسی پر اسکا ٹیسٹ کیا گیا جو مثبت آیا۔ادھر شوپیان پولیس لائنز میں تعینات ایک اور کانسٹیبل کا ٹیسٹ مثبت قرار دیا گیا۔مذکورہ اہلکار جب چھٹی سے واپس آیا تو 3جون کو اسکا ٹیسٹ کیا گیا جو جمعہ کو مثبت آیا۔واضح رہے کہ گھریلو تشدد کے الزام میں پولیس سٹیشن نوہٹہ میں بند ایک ملزم کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد اسکے رابطے میں آئے  7پولیس اہلکاروں کو قرنطین کر لیا گیا ہے۔قابل ذکر ہے کہ وادی میں کورونا وائرس سے متاثرہ پولیس اہلکاروں کی تعداد 122تک پہنچ گئی ہے ۔ بدھ کو کپوارہ میں سرحدی حفاظتی فورس کے 4اہلکاروں میں بھی وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔ادھر وادی میں پہلے ہی کپوارہ ڈسٹرکٹ پولیس لائنز کے دو اہلکاروں، ماگام پولیس سٹیشن میں 8 ، بارہمولہ میں5، پولیس لائنز اننت ناگ  میں 78،کولگام پولیس کیمپ میں 21، دمحال ہانجی پورہ پولیس کیمپ میں ایک، بانڈی پورہ میں 2اہلکاروںکے علاوہ بڈگام پولیس لائنز میں 2اہلکار وں کے نمونے مثبت قرار پائے گئے تھے۔  ترہگام کپوارہ  میں 102بٹالین بی ایس ایف کیمپ میں تعینات 4اہلکاروں کو بھی وائرس ہوا ہے۔
 
 

وادی میںکورونا کا سب سے کم عمر کیس

کولگام میں3دن کی نو زائیدہ بچی متاثر

پرویز احمد
 
 سرینگر //چڈر کولگام میں 3دن کے ایک نوزائید ہ بچی کی رپورٹ مثبت آئی ہے اور اس طرح تین دنوں کی بچی جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے متاثرہونے والا سب سے کم عمر معاملہ ہے۔ پرنسپل گورنمنٹ میڈیکل کالج اننت ناگ ڈاکٹر شوکت جیلانی نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ 3دنوں کی بچی کی رپورٹ جمعہ کو مثبت آئی جبکہ اسکی ماںکی رپورٹ جمعرات کو مثبت آئی تھی‘‘۔ڈاکٹر جیلانی نے بتایا’’ سب سے کم عمر معاملہ کو جی ایم سی اننت ناگ میں ماں کے ساتھ ہی رکھا گیا ہے‘‘۔ ڈاکٹر شوکت جیلانی نے بتایا کہ تین دنوں کی بچی کو وقفہ وقفہ سے دودھ کی ضرورت پڑے گی ، اسلئے ماں بیٹی کو ایک ساتھ رکھا گیاہے۔  انہوں نے کہا کہ دونوں ماں بیٹی میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی کوئی علامت ابتک ظاہر نہیں ہوئی ہے۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل جموں کے ستواری علاقے میں 20دنوں کے ایک بچے کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ بلاک میڈیکل آفیسر کیمو ڈاکٹر عبدالغنی نے بتایا کہ دونوں ماں بیٹی میں کوئی علامت نہیں ہے اور اسلئے انہیں جی ایم سی اننت ناگ منتقل کیا گیا ہے۔  انہوں نے کہا کہ 3دنوں کی بچی کی رپورت مثبت آنے سے ہم بھی حیران ہوئے ہیں۔ڈاکٹر عبدالغنی نے بتایا کہ حاملہ خواتین اکثر سرکاری اسپتال اور نجی کلنکوں میں ملاحضے کیلئے جاتے ہیں اور وہاں کورونا سے متاثر ہونے کا زیادہ خطرہ رہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسکی وجہ سے نوزائد بچے بھی متاثر ہورہے جو پریشان کن صورتحال ہے۔ ادھر خیار بانڈی پورہ میں لوگ اسوقت پریشان و حیران رہ گئی جب  جمعرات کو ایک معمر خاتون کی رپورٹ منفی قرار دینے کے بعد جمعہ کو اسکی رپورٹ مثبت قرار دی گئی۔ 
 
 

تازہ ترین