یاری پورہ کولگام میں پولیس پارٹی پر حملہ

محکمہ صحت کا ملازم زخمی، شوپیان پولیس تھانہ بھی نشانہ

تاریخ    5 جون 2020 (00 : 03 AM)   


خالد جاوید+شاہد ٹاک
کولگام+شوپیان//یاری پورہ کوگام میںجنگجوئوں نے پولیس پارٹی پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں گولیوں کا تبادلہ ہوا جس میں محکمہ صحت کا ایک ملازم زخمی ہوا جبکہ جنگجو فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔ یاری پورہ علاقے میں جمعرات  بعد دو پہر 3بجے کے قریب جنگجوئوں نے ایک پولیس افسر کی گاڑی پرفائرنگ کی ، جس کے نتیجے میں یہاں افرا تفری کا ماحول پیدا ہوا ہے ۔ ایس ایچ او یاری پورہ کہیں جا رہے تھے ،جس دوران جب انکی گاڑی کانجی کلا یاری پورہ کے مقام پر پہنچی، تویہاں گھات میں بیٹھے جنگجوئوں نے پولیس گاڑی پر شدید فائرنگ کی۔  پولیس افسر کی حفاظت پر مامور اہلکاروں نے بھی جوابی کارروائی میں گولیاں چلائیں  اور کچھ دیر تک فائرنگ کا سلسلہ جاری رہا اور جنگجو فرار ہوئے۔تاہم گولیوں کا تبادلے میں محکمہ صحت کا ایک ملازم امتیاز احمد ملک ساکن لارم گنجی پورہ ونپو ہ زخمی ہوا۔ بلاک میڈیکل افسر کولگام ڈاکٹر نگہت نے بتایا کہ مذکوہ ملازم یاری پورہ سب ضلع ہسپتال میں تعینات ہے ۔انہوں نے بتایا زخمی ملازم کو جی ایم سی اننت ناگ منتقل کیا گیا ہے ۔انسپکٹر جنرل آف پولیس کشمیرزون وجے کمار نے بتایاکہ یاری پورہ کولگام میں ایک گاڑی میں سوارجنگجوئوں نے ایک پولیس پارٹی پرگولیاں چلائیں تاہم پولیس کے کسی اہلکارکوکوئی گزند نہیں پہنچی ۔انہوں نے کہاکہ فائرنگ کے اس واقعے میں ایک عام شہری زخمی ہوا۔آئی جی پی کشمیرنے کہاکہ سیکورٹی فورسزنے حملہ آوروں کی تلاش شروع کردی ہے۔ادھر حملے کے بعد کولگام کے ریڈونی بالا اور برازلو جاگیر میں تلاشی کارروائی عمل میں لائی گئی۔ سکیورٹی فورسز نے پورے علاقے کو اپنے محاصر ے میں لیا اور گھر گھر تلاشی کارروائی عمل میں لائی ۔ ادھر پولیس اور فوج نے مینڈھر پونچھ کے 8 دیہاتوں میںتلاشی کارروائی کا آغاز کیا ،جو شام دیر گئے تھے جاری تھی۔ دریں اثناء جمعرات کی شب قریب 10بجے مشتبہ جنگجوئوں نے پولیس سٹیشن شوپیان پر گرینیڈ پھینکا جو نشانہ چوک کر سڑک پر گرا لیکن نہیں پھٹ سکا۔ بعد میں بم ڈسپوزل سکارڈ کو طلب کیا گیا جس نے اسے ناکارہ بنایا۔
 

تازہ ترین