سکولوں کو جون کے وسط میں کھولنے کا امکان

دستانے، ماسک ، سینی ٹائزر طلبا کو فراہم کرنے کی ہدایات

تاریخ    2 جون 2020 (00 : 03 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر // کورونا وائرس کے باعث سکولوں کو جون کے وسط میں کھولنے کا امکان ہے اور جموں کشمیر سرکار نے ڈائریکٹر سکول ایجو کیشن جموں اور کشمیر کو لازمی احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی غرض سے ضروری لوازمات پورا کرنے کیلئے کہا ہے۔ڈائریکٹر فائنانس سکول ایجو کیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جموں اور کشمیر کے ڈائریکٹروں کے نام یکم مئی کو ایک مکتوب روانہ کردیا ہے جس میں ان سے کہا گیا ہے ’’ حکومت اس بات کی کوشش میں ہے کہ جون کے وسط میں سکولوں کو کھولا جائے گا، مجھے اس بات کی ہدایت دی گئی ہے کہ آپ تک یہ بات پہنچائی جائے کہ سبھی سرکاری سکولوں میں کورونا وائرس کے پھیلائو سے بچنے کیلئے طلاب اور اساتذہ کیلئے ضروری احتیاطی بندوبست کیلئے لازمی چیزیں فراہم کی جائیں‘‘۔مکتوب میں مزید کہا گیا ہے ’’ اس ضمن میں سبھی سکولوں کے منتظمین کو ہدایات دی جائیں کہ وہ بار بار استعمال کرنے کے ماسک کا جوڑا اور ایک جوڑا دستانے ہر ایک طالب علم کو فراہم کریں نیز ایک ہزار ملی لیٹر ہینڈ سینی ٹائزر اور 1200ملی لیٹر سیال (liquid)  صابن ہر ایک سکول کے گیٹ پر رکھی جائیں‘‘۔ مکتوب میں کہا گیا ہے کہ اس مقصد کیلئے جو خرچہ آئے گا  وہ  سامگرا گرانٹس سے کاٹا جائے جو ہر ایک سکول کیلئے روز مرہ  کے اخراجات کیلئے فراہم کئے جاتے ہیں۔ 
 

تازہ ترین