کورونا وائرس؛ ایک اورشہری فوت،ایک دن میں ریکارڈ 185 مثبت

۔ 4حاملہ خواتین ، 3پولیس اہلکار اور ایک ہی کنبے کے 9افراد بھی شامل،جموں کشمیر میں مجموعی تعداد 2222، اموات 28

تاریخ    30 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
 سرینگر //صدر اسپتال میں 70سالہ معمر شخص کی موت کے بعد کورونا وائرس سے مرنے والوںکی تعداد 28ہوگئی ہے۔ اس دوران جمعہ کو جموں کشمیر میں ایک دن میں وائرس متاثرین کی سب سے زیادہ ریکارڈ تعداد سامنے آئی ہے جو مجموعی طور پر 185ہے۔ان میں3پولیس اہلکار،4حاملہ خواتین، ایک سالہ بچی اور ایک ہی کنبے کے 9افراد شامل ہیں۔اس طرح جموں و کشمیر میں کورونا مریضوں کی تعداد2222تک پہنچ گئی ہے جن میں سے 436جموں جبکہ1786کشمیر سے ہیں۔جمعہ کو مثبت قرار دئے گئے185مریضوںمیں39سرینگر،19کولگام،19کپوارہ،18پلوامہ، 17اننت ناگ، 16شوپیاں، 10بڈگام، 7بارہمولہ، ایک بانڈی پورہ اور ایک گاندربل جبکہ14پونچھ، 7جموں،6کٹھوعہ،6راجوری،2سانبہ اور ایک کا تعلق پونچھ سے ہے۔ ( جمعہ کو حکومتی بیان میں تعداد صرف 128ظاہر کی گئی ہے ،اس میں 3بجے کے بعدجے وی سی بمنہ میں مثبت آنے والے 33مریضوں اور سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ میں آنے والے مزید 25افراد کو شامل نہیں کیا گیا تھا)۔

صدر اسپتال میں شہری فوت

جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب علیال پورہ باغندر شوپیان سے تعلق رکھنے والا 70سالہ معمر شخص فوت ہوگیا  ۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر ترجمان ڈاکٹرمحمد سلیم خان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’70سالہ شخص کوبدھ کی شام اسپتال میں ہائی بلڈ پریشر اور شوگر بیماری  کا علاج کرانے کیلئے داخل کیا گیا لیکن وہ دوران شب ہی فوت ہوگیا ‘‘۔ ڈاکٹر سلیم نے کہا ’’ مریض کی لاش کو کورونا رپورٹ آنے تک تحویل میں رکھا گیا اور جمعہ کی صبح اسکی رپورٹ مثبت آئی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ تدفین کیلئے وضع قوائد و ضوابط کی جانکاری دینے کے بعد لاش کو لواحقین کے حوالے کردیا گیا ۔ 

سکمز

 میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا’’ 24گھنٹوں کے دوران1430نمونوں کی تشخیص کی گئی اور اُ ن میں سے58مثبت جبکہ1372منفی قرار دئے گئے۔انہوں نے کہا ’’58مریضوں میں سے 27سرینگر،19کولگام،7بارہمولہ،4کپوارہ اور ایک کا تعلق پلوامہ ضلع سے ہے‘‘۔ ڈاکٹر جان نے بتایا ’’سرینگر کے 27مریضوں میں سے 7بمنہ ، 3حول،2نواکدل،2نوہٹہ،2لال بازار، بژھ پورہ ایک، حیدرپورہ ایک، عید گاہ ایک، آبی گذر لال چوک ایک، کرفلی محلہ ایک، امیرا کدل ایک، قمرواری ایک، سولنہ سرینگر ایک اورایک بادام و اری لال بازارکا رہنے والا ہے‘‘۔ ان کا کہنا تھا کہ کولگام کے 19مریضوں میں سے 10نرسنگ پورہ کولگام ، 8چھتہ بل کولگام اور ایک کا تعلق پولیس اسٹیشن منزگام کولگام سے ہے۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ کیمونٹی ہیلتھ سینٹر کپوارہ سے بھیجے گئے نمونوں میں سے 4مثبت آئے ، جن میں سے 2 مین ٹائون کپوارہ، ایک ہندوارہ اور ایک 30سالہ نوجوان کا تعلق ہائیہامہ کپوارہ سے ہے۔ انہوں نے کہا ’’بی ایم او سوپور کی جانب سے بھیجے گئے نمونوں میں سے 3کی رپورٹ مثبت آئی ، جن کا تعلق ونکورہ بارہمولہ سے ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ایک سالہ کمسن بچی سمیت سوپور کے 3افراد بھی مثبت قرار دئے گئے ہیں جبکہ تانترے محلہ پلہالن پٹن میں ایک شخص کی رپورٹ بھی مثبت آئی ‘‘۔  ڈاکٹر جان نے کہا کہ ترال پلوامہ میں بھی ایک 29سالہ نوجوان کی رپورٹ مثبت قرار دی گئی ۔انسٹی ٹیوٹ کے شعبہ عوامی رابطہ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار میںبتایا گیا ہے کہ ابتک کل483مشتبہ مریضوں کا داخلہ کیا گیا جن میں سے417مریضوں کو قرنطینہ کی مدت مکمل کرنے کے بعد گھر روانہ کردیا گیا جبکہ51مثبت قرار دئے گئے مریضوں کو گھر بھیجا گیا ہے۔ ابتک51109نمونوں کی تشخیص کی گئی ہے جن میں سے50266کو منفی قرار دیا گیا ہے جبکہ843مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں۔ 

سی ڈی اسپتال

 میڈیکل کالج ترجمان ڈاکٹر محمد سلیم خان نے بتایا’’ جمعرات کی شام6بجے سے لیکر جمعہ شام 6بجکر 15منٹ تک سی ڈی اسپتال میں842نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں58 مثبت قرار دئے گئے جبکہ784کی رپورٹیں منفی آئیں‘‘ ۔ڈاکٹر سلیم خان نے بتایا ’’ 58مریضوںمیں 18اننت ناگ، 17پلوامہ،15کپوارہ،4سرینگر، ایک بانڈی پورہ، ایک گاندربل اور ایک کا تعلق شوپیاں ضلع سے ہے۔ ڈاکٹر سلیم نے بتایا کہ اننت ناگ ضلع میں مثبت قرار دئے گئے 17افراد میں ایک ہی کنبہ کے 9افراد اور 4حاملہ خواتین بھی شامل ہیں۔ 

 جے وی سی سرینگر 

سکمز میڈیکل کالج بمنہ کے پرنسپل ڈاکٹر ریاض ایتو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا’’جمعرات 4بجے سے لیکر جمعہ5بجکر 30منٹ تک272نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 33مثبت قرار دئے گئے جبکہ 239کی رپورٹیں منفی آئیں‘‘۔ پرنسپل نے بتایا ’’ ضلع بڈگام کے 165نمونوں میں سے 10کی رپورٹ مثبت آئی ہے جن میں سے 2ڈی پی ایل بڈگام،5ریشو ،2آرتھ اور کلاش پورہ بڈگام کا ایک مریض شامل ہے‘‘۔ڈاکٹر ریاض نے بتایا’’ ضلع شوپیاں سے 50نمونے تشخیص کیلئے بھیجے گئے، جن میں وہیل شوپیاں کے 15نمونے مثبت قرار دئے گئے ہیں‘‘۔ پرنسپل جے وی سی کا مزید کہنا تھا کہ زکورہ سرینگر کے 15نمونوں میں سے 8کی رپورٹ مثبت آئی جن کا تعلق جیلان آباد زکورہ سے ہے۔ ڈاکٹر ریاض نے بتایا کہ ایس آر گنج سرینگر سے بھیجے گئے 45نمونے تشخیص کیلئے موصول ہوئے لیکن یہ سبھی منفی قرار دئے گئے ہیں۔ 

 جی ایم سی جموں

 گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں سے 36افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں جن میں سے 14پونچھ،6راجوری،6کٹھوعہ،2ادھمپور،7جموں اور ایک ادھمپور سے تعلق رکھتا ہے۔ 

حکومتی بیان

حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے128نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے92کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 36 کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد2,164تک پہنچ گئی ہے۔ میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے2,164 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے 1,261سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک 875اَفراد شفایاب ہوئے ہیںاور28اَفراد کی موت واقع ہوئی ہے ۔اِس دوران جمعہ مزید16 مریض صحتیاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے05 اور کشمیر صوبے کے 11 اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 1,56,010ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  29؍مئی 2020ء کی شام تک 1,53,846نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اب تک1,58,773افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ ان میں 34,495 اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ54 اَفراد کو ہسپتال قرنطین میں رکھا گیا ہے۔1,261کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ 41,525 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق81,410اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔بلیٹن کے مطابق ضلع اننت ناگ میں 295 مثبت معاملے سامنے آئے ہیںجن میں 170 سرگرم ہیں۔ 120 شفایاب ہوئے ہیں اور05 کی موت واقع ہوئی ہے۔کولگام میں273  مثبت معاملات پائے گئے ہیںجن میں246سرگرم معاملات ہیںاور 23صحتیاب ہوئے ہیںاور04 کی موت واقع ہوئی ہے۔اُدھر سری نگر میں اب تک کورونا وائرس کے 246 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں سے111 سرگرم معاملات ہیں ۔128 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ07 کی موت واقع ہوئی ہے جبکہ کپواڑہ میں 255مثبت معاملات درج کئے گئے ہیں اور 181 سرگرم معاملات ہیں اور74صحتیاب ہوئے ہیں۔ضلع بارہمولہ میں اب تک کورونامریضوں کی تعداد 177ہوئی ہیںجن میں سے 70سرگرم معاملات ہیں اور05مریضوں کی موت واقع ہوئی ہیںاور 102صحتیاب ہوئے ہیں۔بانڈی پورہ میں اب تک 145 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے12 سرگرم معاملات ہیں ، 132مریض صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔اِدھرضلع شوپیان میں 152 مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 44 سرگرم ہیں اور 107صحتیا ب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بڈگام میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی کُل تعداد اب تک 89ہوئی ہیںجن میں سے 35سرگرم ہیں اور52اَفراد صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ02 کی موت واقع ہوئی ہے ۔گاندربل میں کل 31مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں07 سرگرم معاملات ہیں اور 24 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔پلوامہ ضلع میں کووِڈ ۔19کے 65 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں53 سرگرم معاملات ہیں اور 12 صحتیاب ہوئے ہیں۔ اسی طرح  جموں میں وائر س کے 128مثبت معاملات پائے گئے ہیں جن میں89سرگرم معاملات ہیں اور37 صحت یاب ہوئے ہیںاور02 کی موت واقع ہوئی ہیجبکہ رام بن میں75معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 72سرگرم معاملات ہیں اور03 شفایاب ہوئے ہیںجبکہ کٹھوعہ میں65مثبت معاملہ سامنے آئے ہیںجن میں 46 سرگرم معاملات ہیںاور 19اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں۔ دریں اثنأاودھمپور ضلع میں اب تک کورونا مریضوں کی کُل تعداد 52 ہوئی ہیں جن میں سے 29معاملات سرگرم ہیں۔ 22صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ ضلع سانبہ میں 34 مثبت معاملے کی تصدیق ہوئی ہے جن میں 24 سرگرم معاملات ہیں اور 10اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔اس طرح پونچھ میں38 معاملے سامنے آئے ہیںجو سبھی معاملات سرگرم ہیں ۔راجوری ضلع میں کورونا کے اب تک21 مریض پائے گئے ہیںجن میں 16 معاملے سرگرم ہیں اور 05مریض شفایاب ہوئے ہیں اورریاسی میں بھی13 معاملات سامنے آئے ہیں جن میں10سرگرم ہیں اور03 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔ کشتواڑ میں08 مثبت معاملے سامنے آئے ہیں جن میں07 معاملے سرگرم ہیں اورایک مریض پوری طرح سے صحتیاب ہوا ہے جبکہ ڈوڈہ میں 02 معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے ایک معاملہ سرگرم ہے جبکہ ایک مریض پوری طرح صحتیاب ہوا ہے ۔
 

بین ریاستی نقل و حمل پر سختی کیساتھ پابندی عائد کی جائے :چیف سیکریٹری 

نیوز ڈیسک
 
جموں//ملک بھر میں لاک ڈاؤن 4.0 کے تحت ہوائی جہازوں اور ریل گاڑیوں کے ذریعے لوگوں کی نقل و حمل پر عائد پابندی میں نرمی برتنے کے بعد کووڈ 19 معاملات میں حالیہ اضافہ کے تناظر میں تیز تر کنٹیکٹ ٹریسنگ اور نگرانی لازمی ہے ۔ اس کا اظہار چیف سیکریٹری بی وی آر سبھرامنیم نے یونین ٹیر ٹری میں وباء کے خلاف جاری کوششوں کا جائیزہ لینے کیلئے منعقدہ ایک میٹنگ میں کیا ۔ میٹنگ میں یو ٹی کے ڈپٹی کمشنروں اور چیف میڈیکل افسران نے بذریعہ ویڈیو کانفرنس شرکت کی جبکہ فائنانشل کمشنر صحت و طبی تعلیم ، ڈویژنل کمشنران کشمیر و جموں اور ناظمینِ صحت جموں و کشمیربھی میٹنگ میں موجود تھے ۔ دوران میٹنگ فائنانشل کمشنر صحت نے جموں کشمیر میں کورونا وائرس معاملے کی تازہ صورتحال اور اس کیلئے  انتظامات سے متعلق ایک تفصیلی رپورٹ پیش کی ۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ کووڈ 19 بیماری سے شفا یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 44 فیصد ہے جو کہ قومی اوسط سے زیادہ ہے ۔ فائنانشل کمشنر نے پی پی ای ، وینٹی لیٹر ، نیوبلائیزر اور رئیل ٹائم پی سی آر مشینوں کی معقول تعداد دستیاب ہونے کی بھی جانکاری دی ۔  انہوں نے یو ٹی میں وباء پر قابو پانے کیلئے ڈویژنل اور ڈپٹی کمشنروں کو ٹیسٹنگ صلاحیت میں اضافے کا منصفانہ استعمال یقینی بنانے کیلئے کہا گیا ہے۔انہوں نے ڈپٹی کمشنروں کو سواستھ ندھی کا بہتر استعمال کر کے اس بیماری کی علامات رکھنے والے افراد کی نشاندہی کرنے کیلئے کہا ۔ انہوں نے آروگیہ سیتو ایپ کے استعمال کو بھی فروغ دینے کی متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کو ہدایت دی ۔ کچھ اضلاع میں کووڈ 19 معاملات میں اضافہ جموں کشمیر میں باہر سے آنے والوں کو سبب قرار دیتے ہوئے چیف سیکرٹری نے متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کو غیر ضروری بین ریاستی نقل و حمل پر پابندی عائد کرنے کیلئے کہا ۔ 
 

تھانے میں بند ملزم وائرس سے متاثر

۔10پولیس اہلکار کورنٹین منتقل

بڈگام اورکولگام کے3پولیس اہلکار بھی مثبت قرار

کپوارہ+سرینگر/اشرف چراغ +پرویز احمد/کپوارہ پولیس تھانہ میں بند ملزم  کا ٹیسٹ مچبت آنے کے بعد انکے رابطے میں آئے 10اہلکارو ں کو کورنٹین منتقل کیا گیا  ہے۔ با با پورہ ہایہامہ سے تعلق رکھنے والا ایک ملزم کسی کیس کی نسبت 9مئی سے پولیس تھانہ کپوارہ میں زیر حراست ہے۔ 4روز قبل انکے نمونے حاصل  کئے گئے جو مثبت قرار پائے۔انتظامیہ نے فوری طور ان کے رابطہ میں آئے 10پولیس اہلکارو ں کو کورنٹین منتقل کیا جبکہ ملزم کو ضمانت پر رہا کر کے آ یئسو لیشن سینٹر میں منتقل کیا گیا۔ادھر ڈسٹرکٹ پولیس لائنز بڈگام میں تعینات 2پولیس اہلکاروں کے نمونے مثبت قرار دیئے گئے ہیں۔دونوں کو ائیسولیشن میں رکھا گیا ہے اور انکے رابطوں میں آئے دیگر اہلکاروں کو قرنطین کیا گیا ہے۔ ادھر پولیس سٹیشن منزگام دمحال ہانجی پورہ کولگام میں تعینات ایک اور پولیس اہلکار کے نمونے مثبت قرار پائے گئے ہیں۔یاد رہے اب تک وادی میں 91 پولیس اہلکاروں کے نمونے مثبت پائے گئے ہیں۔ان میں بارہمولہ کے 4اہلکار بھی شامل ہیں جو سب سے پہلے مثبت پائے گئے تھے۔ دیگر اہلکار ڈسٹرکٹ پولیس لائنز اننت ناگ و کولگام اور ماگام پولیس سٹیشن کے دو کیس شامل ہیں۔بلک میڈیکل آفیسر بڈگام کا کہنا ہے کہ پولیس لائنز بڈگام میں 209پولیس اہلکاروں کے نمونے حاصل کئے گئے ہیں۔
 

۔99617 درماندہ شہریوں کی واپسی

نیوز ڈیسک
 
جموں //تقریباً 99617 جموں کشمیر کے لوگوں کو حکومت نے براستہ لکھن پور اور خصوصی ٹرینوں کے ذریعے اب تک لازمی رہنما خطوط اور قواعد و ضوابط پر سختی سے عمل پیرا رہ کر واپس لایا ہے۔متعلقہ ضلع انتظامیہ واپس آنے والوں کی طبی جانچ اور 14 دن کے کورنٹین کو یقینی بنانے کیلئے تمام تر اقدامات اٹھا  رہی ہیں ۔ سرکاری عداد و شمار کے مطابق1862 مسافر 28 مئی سے 29 مئی صبح تک لکھن پور کے راستے یو ٹی میں داخل ہوئے ہیں جبکہ 743 مسافر سولہویں دہلی کووڈ خصوصی ریل گاڑی کے ذریعے جموں پہنچے ۔ اب تک16 ریل گاڑیاں 13271 درماندہ مسافروں کو لیکر جموں پہنچی ہیںجبکہ 20 خصوصی ریل گاڑیاں 15640 مسافروں کو لیکر اودھمپور ریلوے سٹیشن پہنچی ہیں۔ 
 
 
 

بیرون ریاستوں سے لوٹے

مزید 94وائرس میں مبتلا پائے گئے

پرویز احمد
 
سرینگر // وادی میں گذشتہ 3روز کے دوران بیرون ریاستوں سے آنے والے 286افراد میں وائرس پایا گیا۔ جمعہ  بعد دوپہر 3بجے تک سرکاری طور پر جمع کئے گئے اعدوادوشمار کے مطابق 128 مثبت قرار دیئے گئے مریضوں میں سے 94 بیرون  ریاستوں کا سفر کرکے لوٹے ہیں ۔جموں و کشمیر میں 9مارچ سے لیکر 29مئی تک مثبت قرار دئے گئے  2164مریضوں میں سے 1174مقامی جبکہ 990افراد بیرون ریاستوں میں کورونا وائرس کے شکار ہوئے ہیں۔سرکاری اعدادشمار کے مطابق جموں و کشمیر میں55فیصد مریض مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ ضلع اننت ناگ کے295متاثرین میں سے 22افراد ایسے ہیں۔ کولگام ضلع میں متاثرہ 273افراد میں سے 205افرادکا سفری پس منظر ہے۔ضلع سرینگر کے246مریضوں میں سے 122متاثرین مختلف ممالک اور ریاستوں کا سفر کرکے واپس لوٹے ہیں۔ضلع کپوارہ کے 255متاثرین میں سے147افرا نے مختلف ممالک اور ریاستوں کا سفر کیا ہے۔ شمالی کشمیر کے بارہولہ ضلع میں177افراد میں سے 43بیرون ریاستوں سے سفر کرکے واپس لوٹے ہیں جبکہ بانڈی پورہ کے 145میں سے 17افراد نے مختلف ریاستوں اور ممالک کا سفر کیا ہے۔ شوپیاں ضلع میں متاثر ہونے والے152افراد میں سے 135مقامی سطح جبکہ 17کا سفری پس منظر ہے۔ بڈگام ضلع کے 89مریضوں میں سے 61افراد مقامی سطح پر جبکہ 28افراد بیرون ریاستوںسے آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے۔ گاندر بل ضلع کے 31افراد میں سے 26مقامی سطح جبکہ 5مریضوں نے کورونا سے متاثرہ علاقوں اور ممالک کا سفر کیا ہے۔پلوامہ ضلع کے 65مریضوں میں سے 30مقامی سطح جبکہ35نے مختلف ریاستوں کا سفر کیا ہے۔ جموں صوبے کے جموں ضلع میں 128افراد میں سے 47مقامی سطح پر متاثر ہوئے جبکہ 81افراد نے مختلف ممالک اور ریاستوں کا سفر کیا ہے۔ رام بن ضلع کے 75افراد میں سے 4مقامی طور پر متاثر ہوئے جبکہ 71افراد بیرون ممالک اور ریاستوں میں متاثر ہوئے ہیں۔ کٹھوعہ ضلع میں65میں سے 3مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے جبکہ62افراد نے مختلف ممالک اور ریاستوں کا سفر کیا ہے۔ ادھمپور ضلع میں52افراد وائرس سے متاثر ہوئے جن میں20مقامی رابطے کی وجہ سے اور32سفر کرنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔ سانبہ ضلع میں34میں سے 6 مقامی رابطے کی وجہ سے اور28مختلف ریاستوں کا سفر کرنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔ پونچھ کے 38مریضوں میں سے 2مقامی رابطے جبکہ36افراد نے مختلف ریاستوں اور ممالک کا سفر کیا ہے۔ راجوری ضلع کے21کورونا وائرس مریضوں میں سے20افراد نے مختلف متاثرہ ممالک اور ریاستوں کا سفر کیا ہے جبکہ ایک شخص رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہواہے۔ ریاسی ضلع میں 13افراد وائرس سے متاثر ہوئے ہیں جن میں سے 9نے مختلف ممالک اور ریاستوں کا سفر کیا ہے جبکہ 4افراد ان کے ساتھ رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔ کشتواڑ ضلع میں صرف 8افراد متاثر ہیں اور ان سبھی افراد نے کورونا وائرس سے متاثر ہ ممالک اور ریاستوں کا سفر کیا ہے۔ جموں کے ڈوڈہ ضلع میں 2افراد وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور ان دنوں کے مختلف ممالک کا سفر کیا ہے۔ 
 

تازہ ترین