حد بندی کمیشن کا حصہ نہیں بنوں گا:حسنین مسعودی

تاریخ    29 مئی 2020 (47 : 03 PM)   
(File pic)

نیوز ڈیسک
سرینگر//حد بندی کمیشن کے ممبر کے طور منتخب کئے جانے پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے ممبر پارلیمان حسنین مسعودی نے جمعہ کے روز کہا کہ وہ اُس عمل کا حصہ نہیں بنیں گے جس کو اُنہوں نے چیلنج کیاہے۔
یاد رہے کہ لوک سبھا کے سپیکر اُوم برلا نے گذشتہ روز نیشنل کانفرنس کے ارکان پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبد اللہ، محمداکبر لون اور مسعودی کو اُس حد بندی کمیشن کے ارکان کے طور نامزد کیا تھا جس کو جموں کشمیر کی اسمبلی و پارلیمانی نشستوں کی نئی حد بندی عمل میں لانے کا کام سونپا گیا ہے۔
پارٹی صدر فاروق نے تاہم ابھی اس سلسلے میں کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا ہے۔
مسعودی نے بھی اس بات کی وضاحت کی ہے کہ اُن کی پارٹی نے ابھی تک اس سلسلے میں کوئی حتمی فیصلہ نہیں لیا ہے۔
اطلاعات کے مطابق انہوں نے کہا کہ کمیشن کے ارکان کی نامزدگی سے پہلے اُنہیں اعتماد میں نہیں لیا گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ اُن کی پارٹی اس ضمن میں صلاح مشورہ کررہی ہے تاہم وہ ذاتی طور اس کمیشن میں شامل نہیں ہونگے ۔
نیشنل کانفرنس کے ایک اور رکن پارلیمان اکبر لون نے بھی کہا ہے کہ نامزدگی سے قبل اُنہیں اعتماد میں نہیں لیا گیا۔لون کہنا تھا کہ اُن کی پارٹی کا یہی موقف ہے کہ وہ سیاسی قیدیوں کی رہائی سے قبل کسی سیاسی عمل کا حصہ نہیں بنے گی۔
 

تازہ ترین