راجپورہ پلوامہ میں پولیس کی بھر وقت کارروائی، اونتی پورہ جیسا خود کش حملہ ٹل گیا

۔45کلو گرام بارودی مواد ناکارہ ،سینٹرو کار بھی تباہ

تاریخ    29 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


سید اعجاز +بلال فرقانی
پلوامہ +سرینگر//پولیس نے راجپورہ پلوامہ کے ایک نزدیکی گائوں میں ایک لاوارث سینٹرو کار میں نصب بھاری مقدار میں بارودی مواد ناکارہ بنا کر پچھلے سال اونتی پورہ میں کی گئی کارروائی کی طرح ایک بہت بڑے حادثے کا ٹالا ہے۔پولیس نے کہا ہے کہ کار کا نمبر پلیٹ جعلی تھا اور اس میں قریب 45کلو باردو نصب کیا گیا تھا جسے ناکارہ بنانے کے دوران زوردار دھماکے سے کار کے پرخچے اڑ گئے۔ دھماکہ اس قدر زوردار تھا کہ آس پاس درجنوں مکانوں کے شیشے چکنا چور ہوئے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ جمعرات علی الصبح این گنڈ نامی گائوں کے باہر فائرنگ کی آواز سنی گئی تاہم بعد میں صورتحال معمول پر آگئی البتہ فورسز اہلکاروں نے لوگوں کو گائوں سے باہر آنے کی اجازت نہیں دی۔انہوں نے کہا کہ این گنڈ سڑک پر ڈسپنسری کے نزدیک ایک لاوارث سفید رنگ کی سینٹرو کار پڑی تھی جس میں موجودبارودی مواد ناکارہ بنایا گیا۔انسپکٹر جنرل آف پولیس (آئی جی پی )وجے کمار نے پلوامہ میں ایک بارودی سرنگ  ناکرہ بنانے کے بعدجمعرات کو سرینگر میںپریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ،کہا کہ جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں حزب اور لشکر طیبہ سے وابستہ جنگجوئوں نے ایک نجی گاڑی میں فورسز کو نقصان پہنچانے کی غرض سے 40سے45کلو وزن کی بارودی سرنگ کو نصب کیا تھا،جبکہ واقعے کے حوالے سے بھر وقت اطلاع ملنے کے فوراً بعد فورسز نے کارروائی کو عمل میں لاتی ہوئے کار کا پتہ لگا کر ایک بڑے حادثے کو ٹال دیا  ۔وجے کمار نے کہا کہ  ضلع میںاس حوالے سے سیکورٹی کو متحرک کر کے متعدد مقامامات پر خصوصی ناکے بٹھائے گئے تھے۔انہوں نے بتایاکہ راجپورہ کے آئین گنڈ علاقے میں 2مقامات پر ناکے کی ڈیوٹی پر تعینات اہلکاروں نے یہاں سے گزر نے والی کارکو رکنے کا اشارہ کیا،جس دوران دونوں جگہوں پرفورسز نے وارنگ شارٹس بھی فائر کئے ،تاہم خود کش حملہ آور دونوں مقامات پر چھلانک لگا کر فرار ہوا۔آئی جی پی کا کہنا تھا صبح ہوتے ہی فورسز نے آئین گنڈ راجپورہ نامی گائوں کے نزدیک ایک لاوارث سفید رنگ کی سنٹرو گاڑی کو مشکوک حالت میں پایا ۔ابتدائی تحقیقات کے دوران  معلوم ہواکہ گاڑی میں40سے45کلو وزن کا بارودی مواد نصب کیا گیا تھا،جس کے فوراًبعد بم ڈسپوزل سکارڑ طلب گیا کیا۔آئی جی پی  نے بتایا ہمیں لگا تھا کہ یہ10سے15کلو گرام تک ہوسکتا ہے،لیکن ہم نے بعد میں اس وقت یہ اندازہ لگایاجب سرنگ کو ناکارہ بنا لیا گیا تو گاڑی15میٹر ہوا میںاڑ گئی  ۔وجے کمار نے بتایا اس کارروائی میں عادل احمد جو لشکر اور جیش کے لئے کام کرتاہے کے علاوہ دیگر2حزب اور جیش کے جنگجوئوں کا ہاتھ ہے ۔آئی جی پی نے بتایا کہ مزکورہ جنگجوئوں نے17ماہ رمضان (جنگ بدر) کے روز یہ کو اس حملے کی تیاری کی تھی ،تاہم فورسز کی وجہ سے آپریشنوں میں تیزی لانے کے نتیجے میں وہ ایسا نہیں کر سکے  ۔انہوں نے کہا کہ بھر وقت کارروائی کی وجہ سے ایک بڑا حادثہ ٹل گیا ہے، جس کے لئے میں فوج سی آر پی ایف اور پولیس کی اس کامیاب آپریشن کی سراہنا کرتا ہوں ۔دریں اثناء تھانہ پولیس راجپورہ نے اس سلسلے میں کیس زیر ایف آئی آر نمبر40/2020 درج کرکے اس سلسلے میں مزید تحقیقات شروع کردی۔
 

تازہ ترین