حراست کیخلاف میاں قیوم کی عرضی عدالت عالیہ میں مسترد

تاریخ    28 مئی 2020 (49 : 03 PM)   
(File pic)

نیوز ڈیسک
سرینگر//جموں کشمیر کی عدالت عالیہ نے جمعرات کو کشمیر ہائی کورٹ بار ایسو سی ایشن کے محبوس صدر ایڈوکیٹ میاں قیوم کی وہ عرضی مسترد کردی جو اُنہوں نے پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت اپنی قید و بند کیخلاف دائر کی تھی۔
قیوم کو گذشتہ برس ماہ اگست میں گرفتار کیا گیا تھا جب مرکزی سرکار نے جموں کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت ختم کرکے خطے کو مرکز کے زیر انتظام دو علاقوں میں تقسیم کرلیا۔
اطلاعات کے مطابق عدالت عالیہ کے ایک ڈویژن بینچ نے سنگل بینچ کے فیصلے کو برقرار رکھا جو مذکورہ بینچ نے 2فروری2020کو دیا تھا۔قیوم نے اسی فیصلے کیخلاف ڈویژن بینچ میں اپیل کی تھی جو آج مسترد کردی گئی۔
 تاہم ڈویژن بینچ نے محبوس قیوم کے وکیل کو تجویز دی کہ وہ اپنے موکل کی طرف سے ایک درخواست پیش کرےں جس میں یہ بتایا جائے کہ اُن کے موکل یعنی میاں قیوم نے اپنی ”سوچ تبدیل “ کی ہے اور وہ” اپنی رہائی کا فیصلہ متعلقہ حکام پر چھوڑ تے ہیں “۔
یاد رہے کہ قیوم دلی کے تہاڑ جیل میں مقید ہیں۔
 

تازہ ترین