تازہ ترین

کل گلے شکوے وناراضگی , آج گلدستوں سے استقبال

تاریخ    28 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// سرینگر اور بانڈی پورہ میں سینئر ڈاکٹروں کیساتھ متعلقہ پولیس افسران و اہلکاروں کی بدسلوکی کے تین واقعات کے بعد منگل کو زونل پولیس ہیڈکوارٹر کی طرف سے سبھی ڈی آئی جیز اور ایس ایس پیز کو طبی عملے کے کام کاج کو یقینی بنانے کے واضح ہدایات دینے کے بعد بدھ کو وادی بھر میں صورتحال مختلف نظر آئی۔پولیس حکام نے منگل کی شام طبی عملے کو کورونا کیخلاف جنگ کے ہیرو قرار دیا تھا۔بدھ کی صبح وادی کے کم و بیش سبھی اسپتالوں کے باہر ڈیوٹیوں پر تعینات پولیس اہلکاروں کے ہاتھ میں پپھول تھے ، اور جو بھی ڈاکٹر وہاں سے گذرا انکی گاڑیاں روک کر انہیں پھول دیئے جاتے تھے۔پولیس حکام نے بتایاکہ اس خیرسگالی اقدام کامقصد یہ پیغام دیناہے کہ کورونا کیخلاف جاری جنگ میں طبی ونیم طبی عملہ کارول سب سے زیادہ اہم اورقابل سراہناہے ۔پولیس افسروں کی قیادت میں پولیس کے دستے جگہ جگہ ہاتھوں میں پھول لئے دیکھے گئے اورجوں ہی کوئی ڈاکٹر یاکوئی ا طبی ونیم طبی ملاز م انکے نزدیک پہنچتا، توپولیس افسراوراہلکار اُنھیں پھول پیش کرتے رہے ۔سری نگرمیں صدر اسپتال ،صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ ،جواہرلعل نہرئو اسپتال رعناواری ،سی ڈی اسپتال سری نگر ، لل دید،برزلہ اسپتال اور سبھی طبی مراکز کے نزدیک اوردوسرے مقامات پرایسے مناظر دیکھے گئے جہاں پولیس جوان ڈاکٹروں اوردیگرطبی ونیم طبی ملازمین کوروک کر انکا خیر مقدم پھولوں کے ساتھ کررہے تھے ۔جنوبی اور شمالی کشمیر کے اسپتالوں  کے باہر بھی ایسے مناثر دیکھنے کو ملے۔