تازہ ترین

وراٹ کی سلیجنگ کرنے سے ڈرتے ہیں آسٹریلوی کھلاڑی :کلارک

8 اپریل 2020 (25 : 02 AM)   
(      )

یو این آئی
میلبورن//آسٹریلیا کے سابق کرکٹ کپتان مائیکل کلارک نے آسٹریلوی ٹیم کے بارے میں بڑا اور متنازعہ بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ آئی پی ایل میں اچھا معاہدہ حاصل کرنے کی وجہ سے آسٹریلوی کھلاڑی ہندستانی کپتان وراٹ کوہلی کے تئیں نرم رہتے ہیں اور ان کی سلیجنگ کرنے سے ڈرتے ہیں۔کلارک نے بگ اسپورٹس بریک فاسٹ پر بات چیت میں کہا کہ سب جانتے ہیں کہ آئی پی ایل کے ساتھ بین الاقوامی یا گھریلو سطح پر کھیل کے مالیاتی حصہ کے طور پر ہندستان انتہائی طاقتور ہے ۔ آئی پی ایل تو ویسے بھی بے شماردولت سے بھرپور ہے جہاں کھلاڑیوں کو موٹی رقم ملتی ہے ۔ مجھے لگتا ہے کہ آسٹریلیائی کرکٹ یا پھر دنیا کی کوئی اور دیگر ٹیم ہندستان کے خلاف انتہائی نرم ہو گئی ہے ۔ کوئی بھی کھلاڑی یا ٹیم وراٹ یا کسی دوسرے ہندوستانی کھلاڑی کی سلیجنگ کرنے سے بہت ڈرتے تھے کیونکہ انہیں اپریل میں انہی کے ساتھ آئی پی ایل کھیلنا ہوتا ہے ۔آسٹریلیا کو ہندستان سے پچھلی گھریلو ٹیسٹ سیریز میں پہلی بار 1-2 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ اس سیریز میں آسٹریلوی ٹیم اسٹیون اسمتھ اور ڈیوڈ وارنر کے بغیر کھیلی تھی جس میں گیند سے چھیڑ چھاڑ کرنے کی وجہ سے ایک سال کی پابندی برداشت کر رہے تھے ۔ کلارک نے کہا کہ یہ ایسا دور تھا جب آسٹریلوی کھلاڑی وراٹ کی سلیجنگ کرنے سے بچ رہے تھے ۔سابق کپتان کلارک نے پروگرام کے دوران کہا کہ کھلاڑیوں نے ایک طرح سے وراٹ کی سلیجنگ کرنے سے انکار کر دیا تھا کیونکہ وہ شاید بنگلور کی ٹیم میں شامل ہو کر 10 کروڑ کی ڈیل حاصل کرنا چاہتے تھے ۔میرا خیال ہے کہ ایک وقت ایسا تھا جب ہمارے کھلاڑی نرم ہو گئے تھے یا اتنے مضبوط نہیں نظر آئے جتنے عام طور پر نظر آتے ہیں۔غور طلب ہے کہ 2019 دسمبر میں آئی پی ایل کے لئے ہوئی نیلامی میں آسٹریلیا کے تیز گیند باز پیٹ کمنز 15.5 کروڑ روپے میں کولکتہ کی ٹیم میں بکے تھے جو آئی پی ایل کی تاریخ میں کسی غیر ملکی کھلاڑی کے لئے آج تک کی سب سے بڑی رقم ہے ۔آل راؤنڈر گلین میکسویل کو پنجاب نے 10.75 کروڑ روپے اور ناتھن کولٹر نائل کو ممبئی انڈینس نے بڑی بولی لگا کر 8 کروڑ روپے میں خریدا تھا۔اس کے علاوہ آل راؤنڈر مارکس اسٹوئنس کو دہلی کیپٹلس نے 4.8 کروڑ، آسٹریلوی کپتان آرون فنچ کو بنگلور نے 4.4 کروڑ، فاسٹ بولر کین رچرڈسن کو بنگلور نے ہی 4 کروڑ،ایلیکس کیری کو دہلی نے 2.4 کروڑ، مشیل مارش کو حیدرآباد نے 2 کروڑ اور جوش ھیزلوڈ کو چنئی سپر کنگز نے دو کروڑ اور اینڈریو ٹائی کو راجستھان رائلز نے ایک کروڑ روپے میں خریدا تھا۔کلارک خود بھی آئی پی ایل میں پنے کی طرف سے کھیلے تھے ۔ کلارک کا محسوس کرنا ہے کہ آسٹریلوی کھلاڑی ٹیسٹ سیریز کے دوران اپنے رنگ میں نہیں تھے اور انہوں نے لڑنے کا جذبہ نہیں دکھایا۔