وادی میں تیسری موت واقع،متاثرین میں 15کا اضافہ | جموں کشمیر میں 125وائرس میں مبتلا، 368نمونوں کی تشخیص ہونا باقی

تاریخ    8 اپریل 2020 (19 : 12 AM)   


پرویز احمد
سرینگر // جموں کشمیر میں کورونا وائرس سے تیسری موت واقع ہوگئی ہے۔تازہ واقعہ میں سوموار رات دیر گئے گنڈ جہانگیر حاجن کا ایک شخص جاں بحق ہوا۔ دوسری طرف وادی میں کورونا وائرس سے متاثرین کی تعداد متواتر طور پر بڑھ رہی ہے اور منگل کو اس میں مزید 9کا اضافہ ہوا جبکہ جموں میں مزید 6افراد مبتلا پائے گئے۔اس طرح منگل کو مزید15ٹیسٹ مثبت آنے کے ساتھ ہی  جموں کشمیر میںکورونا وائرس مریضوں کی کل تعداد 125ہوگئی ہے۔ ریاستی سرکار کے ترجمان روہت کنسل نے اپنے ایک ٹیوٹ میںجانکاری دی’’کورونا وائرس مریضوں کی تعداد اب 125ہوگئی ہے، 118زیر علاج ہیں جن میں 24جموں اور 94کشمیر میں ہیں‘‘۔ کنسل نے اپنے ٹیوٹ میں مزید لکھا’’ منگل کو جموں میں 6 اور کشمیر میں 9نئے معاملے سامنے آئے ‘‘۔کنسل نے اپنے ٹیوٹ میں مزید لکھا ’’ رابطوں کی تلاش اور ریڈزون قرار دینے کا عمل جاری ہے‘‘۔حکومتی ترجمان نے فوت ہوئے شخص کی جانکاری نہیں دی لیکن جموں کشمیر سرکار کی جانب سے روزانہ بلیٹن میں اسکا ذکر کیا گیا ۔

صدر اسپتال

 صدر اسپتال سرینگر میں سوموار رات دیر گئے فوت ہونے والے شخص کی تفصیلات دیتے ہوئے گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کے ترجمان ڈاکٹر محمد سلیم خان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ سب ضلع اسپتال حاجن سے سوموار کو دن 2بجکر 30منٹ پر ایک65سالہ مریض کا داخلہ کیا گیاجو دمہ، بلغم اور دیگر بیماریوں میں مبتلا تھا‘‘۔ ڈاکٹر سلیم  نے بتایا ’’ کورونا وائرس کی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹروں نے خون کی تشخیص کیلئے نمونے حاصل کئے لیکن سوموار کو ہی رات 10بجے اسکی موت واقع ہوئی ‘‘۔ ڈاکٹر سلیم نے بتایا ’’  مذکورہ مریض کی تشخیصی رپورٹ آنے تک لاش کو اسپتال میں ہی رکھا گیا اور صبح رپورٹ مثبت آنے کے بعد ہی لاش دفنانے کیلئے انتظامی سطح کی کارروائی کی گئی‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ مریض نے حالیہ مہینوں میں کوئی سفر نہیں کیا اور نہ ہی وہ کسی کورونا وائرس مریض کے رابطے میں آیا ہے لیکن کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کی وجوہات کا پتہ لگانے کیلئے ٹیمیں کام پر لگ گئیں ہیں۔ ڈاکٹر سلیم نے کا کہنا ہے کہ سوموار کوموصول ہوئے 96تشخیصی نمونوں میں سے 26کی تشخیص مکمل ہوگئی ہے جن میں سے 24منفی جبکہ 2کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مثبت قرار دئے گئے 2مریضوں میں سے بانڈی پورہ کے عمر رسیدہ شخص کی موت واقع ہوگئی ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ سرینگر کے دریش کدل سے تعلق رکھنے والی 20سالہ لڑکی کی رپورٹ بھی مثبت آئی ہے لیکن حیران کن بات یہ ہے کہ اس لڑکی نے بھی کہیں سفر نہیں کیا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ لیبارٹری میں ابھی 96نمونے زیر تشخیص ہیں جبکہ منگل کو مختلف اسپتالوں سے مزید 110نمونے حاصل ہوئے ہیں۔

رعناواری اسپتال

 جے ایل این ایم اسپتال رعناواری میں منگل کو 3کمسن بچوں کی رپورٹیں بھی مثبت آئی ہیں۔ نوڈل آفیسر ڈاکٹر بلقیس نے بتایا ’’ہم نے اتوار کو 31اور سوموار کو 53نمونے تشخیص کیلئے بھیجے تھے لیکن ہمارے پاس مثبت قرار دی گئی رپورٹیں ہی موصول ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا ’’ لال بازار سرینگر کے تین کمسن بچوں کے نمونے مثبت قرار دئے گئے ہیں جن میں 9سال اور11سال کی 2 کمسن بچیاں شامل ہیں جبکہ انکے13سالہ چچازاد بھائی کی رپورٹ بھی مثبت آئی ہے‘‘۔ ڈاکٹر بلقیس نے بتایا ’’ بچیوں کے والد 17مارچ کو کولکتہ سے واپس لوٹے تھے اور بعد میں رپورٹ مثبت آنے کی وجہ سے اسکو سکمز میں داخل کیا گیا تھا‘‘۔ ڈاکٹر بلقیس نے بتایا ’’ منگل کو مزید 12افراد کے خون کے نمونے تشخیص کیلئے بھیجے گئے ہیں‘‘۔

سکمز صورہ

 شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ میں منگل کو 4مریضوں کی تشخیصی رپورٹ مثبت آئی ۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ سکمز ڈاکٹر فاروق احمد جان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ سکمز میں داخل 2مریضوں کی رپورٹ مثبت آئی جن کا تعلق بانڈی پورہ سے ہے‘‘۔ فاروق جان نے بتایا ’’ 23سالہ نوجوان نے کہیں سفر نہیں کیا اور نہ ہی کسی کے رابطے میں رہا ہے جبکہ 58سالہ عمررسیدہ شخص مارچ میں مہاراشٹرا کا سفر کرکے آیا ‘‘۔ فاروق جان نے بتایا ’’ جی ایم سی بارہمولہ سے موصول ہوئے نمونوں میں سے 2کی رپورٹ مثبت آئی ہے جن میں سوپور کی ایک 51سالہ خاتون اور گزہامہ گاندربل کی رہنے والی 17سالہ لڑکی شامل ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ سوپور سے تعلق رکھنے والی خاتون کورونا وائرس مریض کے رابطے میں آئی ہے جبکہ 17سالہ لڑکی کی سفری تفاصیل دستیاب نہیں۔انہوں نے کہا ’’ آئیسولیشن وارڈ میں اب زیر علاج مریضوں کی تعداد 29ہوگئی ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’منگل کو سکمز میں لئے گئے 60نمونوں کے علاوہ شعبہ مائکرو بائولاجی کو مختلف اسپتالوں سے 90نمونے حاصل ہوئے ہیں اور اسطر ح ابھی 150نمونوں کی تشخیص ہونا باقی ہے۔  

حکومتی بیان

حکومت نے منگل کو کہا کہ بیرون ریاست یا بیرون ممالک سے آئے کل 37,713اَفراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے اور اب تک جموںوکشمیر میں 125اَفراد کورونا وائرس میں مبتلا پائے گئے ہیں۔حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلٹین میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے 125 مثبت معاملات میں سے 118 سرگرم معاملات ہیں ،04 مریض صحتیاب ہوئے ہیں اور 03کی موت واقع ہوئی ہے۔ اب تک9209 اَفراد کو ہوم کورنٹین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے کورنٹین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ567 اَفراد کو ہسپتال کورنٹین میں رکھا گیا ہے۔118کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ 20,735 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق7084اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔بلیٹن میں مزید بتایا گیا ہے کہ اب تک 1900نمونے جانچ کے لئے بھیجے گئے ہیں جن میں سے 1763 نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے اور 12کی روپورٹیں 07؍اپریل 2020 ء تک آنا باقی ہے ۔
 

تازہ ترین