تازہ ترین

مزید 3مثبت، تعداد 109 | کشمیر میں تعداد 88تک پہنچ گئی،صورہ اور سی ڈی اسپتالوں میں 84افرادکی رپوٹیں آنا باقی

7 اپریل 2020 (44 : 01 AM)   
(      )

پرویز احمد
 سرینگر //سوموار کو مزید 3مشتبہ مریضوں کی رپورٹ مثبت آنے کے ساتھ ہی جموں و کشمیر میں کورونا وائرس مریضوں کی کل تعداد 109ہوگئی ہے جن میں سے کشمیر کے88 جبکہ جموں کے21افراد شامل ہیں۔ان میں سے 4صحت یاب ہو کر گھروں کو روانہ کئے جاچکے ہیں جبکہ 2کی موت واقع ہوئی ہے۔سوموار کو مثبت قرار دئے گئے مریضوں  میں سے ایک کا تعلق شمالی کشمیر کے اوڑی جبکہ 2نوجوانوں کا تعلق سرینگر شہر سے ہے۔

سکمز صورہ

 شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز  صورہ کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’26میں سے 3مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں جن میں اوڑی سے تعلق رکھنے والی 35سالہ خاتون بھی شامل ہے جس کے شوہر کی رپورٹ حالیہ دنوں مثبت آئی تھی لیکن وہ جی ایم سی بارہمولہ میں زیر علاج ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ 2کا تعلق ضلع سرینگر سے ہے جن میں نوشہرہ  کا 27سالہ  اور چھتہ بل کا 25سالہ نوجوان شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں نوجوان حالیہ دنوں دلی کا سفر کرکے لوٹے تھے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ مختلف اسپتالوں سے سکمز کو پیر کے روز مزید 26نمونے تشخیص کیلئے موصول ہوئے ہیں جبکہ سوموار کو ایک نئے مشتبہ مریض کا داخلہ بھی ہوا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ کورونا وائرس میں مبتلا26مریض ابھی بھی سکمز کے آئیسولیشن وارڈ میں داخل ہیں‘‘۔ سکمز کے شعبہ عوامی رابطہ کی جانب سے سوموار کی شام جاری  کئے گئے بیان میں بتایا گیا ہے کہ کل 310مریضوں کا علاج و معالجہ کیا گیاجن میں 282کو گھر بھیج دیا گیا   جبکہ 26 مریض آئیسولیشن وارڈ میں زیر علاج ہیں۔ 40مشتبہ مریض تشخیص کا انتظار کررہے ہیں۔ مائکروبائولاجی لیبارٹری میں کل 577نمونوں کی تشخیص ہوئی جن میں 498منفی جبکہ 48مثبت قرار دئے گئے ہیں۔

سی ڈی اسپتال

 کشمیر میں کورونا وائرس کیلئے نامز دوسرے بڑے اسپتال سی ڈی ڈلگیٹ میں سوموار کو مزید 3مشتبہ مریضوں کو داخل کیا گیا ۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر محمد سلیم ٹاک نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’آئیسولیشن وارڈ میں داخل 18مریضوں میں سے 6کی تشخیصی رپورٹیں منفی آئی ہیں جنہیںکشمیر ویلی نرسنگ ہوم منتقل کیا گیا۔ انہوں نے کہا ’’3مشتبہ مریضوں کے داخلے کے ساتھ اب آئیسولیشن وارڈ میں صرف 15 جبکہ قرنطینہ وارڈ میں مزید8مریض داخل ہیں۔ یہاں قائم لیبارٹری میں سوموار کو 36نمونوں کی تشخیص کی گئی جو منفی قرار دئے گئے جبکہ 48خون کے نمونوں پر تشخیصی کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا ’’ لیبارٹری میں سوموار کو 80نمونے تشخیص کیلئے موصول ہوئے ہیں‘‘۔

رعناواری اسپتال

 رعناواری اسپتال میں سوموار کو کوئی بھی نیا مریض داخل نہیں ہوا اور نہ سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ کی تشخیصی لیبارٹری سے کسی نمونے کی رپورٹ موصول ہوئی۔ جے ایل این ایم رعناواری میں کورونا وائرس کیلئے تعینات  خاتون نوڈل آفیسر ڈاکٹر بلقیس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ اتوار کو 33جبکہ سوموار کو مزید 53مشتبہ مریضوں کے نمونے تشخیص کیلئے بھیجے گئے ہیں اور اب رعناواری میں 86 نمونوں کی رپورٹیں آنا باقی ہیں۔ 

حکومتی بیان

حکومت نے کہا ہے کہ جموںوکشمیر میں پیر کو نوول کورونا وائر س کے 03 مثبت نئے معاملات سامنے آئے اور ان سبھی کا تعلق کشمیر صوبے سے ہیں۔اس طرح جموں وکشمیر میں مثبت معاملات کی کل تعداد 109تک پہنچ گئی ہے۔ حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلٹین میں بتایا گیا ہے کہ  109 مثبت معاملات میں سے 103 سرگرم معاملات ہیں ،04 مریض صحتیاب ہوئے ہیں اور 02کی موت واقع ہوئی ہے۔ان معاملات میں سے 85معاملات کشمیر صوبے سے جبکہ 18معاملات جموں صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔اب تک 35,243 ایسے اَفراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفری پس منظر ہے یا جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں ۔ ان میں سے 10,556 اَفراد کو ہوم کورنٹین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے کورنٹین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ615 اَفراد کو ہسپتال کورنٹین میں رکھا گیا ہے۔103کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ 17,506 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق6,463اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔بلیٹن میں مزید بتایا گیا ہے کہ اب تک 1,708نمونے جانچ کے لئے بھیجے گئے ہیں جن میں سے 1,583 نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے اور 16کی روپورٹیں 06؍اپریل 2020 ء تک آنا باقی ہے ۔
 

تازہ ترین