کورونا وائرس: مزید5مثبت،تعداد 75

۔ 57وادی کے 18کا تعلق جموں سے،34کی رپورٹ کا انتظار

4 اپریل 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

پرویز احمد +ظفر اقبال
 سرینگر +اوڑی// جمعہ کو مزید 5مشتبہ مریضوں کی تشخیصی رپورٹ مثبت آنے کے ساتھ ہی جموں و کشمیر میں کورونا وائرس مریضوں کی تعداد 75تک پہنچ گئی ہے جن میں 18جموں جبکہ 57کشمیر صوبے کے ساتھ تعلق رکھتے ہیں۔ جمعہ کو مثبت قرار دئے گئے 5مریضوں میں سے 4کا تعلق کشمیر جبکہ ایک جموں سے تعلق رکھتا ہے۔کشمیر میں 3 افرادکورونا وائرس مریضوں کے ساتھ رابطے کی وجہ سے  بیماری میں مبتلا ہوگئے ہیں جبکہ ایک نے دلی میں ایک اجتماع میں شرکت کی تھی۔شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ میں3جبکہ سی ڈی اسپتال  میں ایک شخص کے نمونے مثبت قرار دیئے گئے۔سکمز میں مثبت قرار دیئے گئے تین مریضوں میں سے 2کا تعلق بارہمولہ کے اوڑی قصبے سے ہے جبکہ ایک کا تعلق سرینگر کے عید گاہ  سے ہے۔میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ مائکروبائولاجی لیبارٹری میں جمعہ کو 3رپورٹیں مثبت آئیں جن میں 2جی ایم سی بارہمولہ جبکہ ایک سکمز کی تھی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ سکمز میں مثبت قرار دئے گئے مریض کا تعلق عید گاہ سے ہے جو کسی کورونا وائرس مریض کے ساتھ رابطے میں آنے کی وجہ سے بیماری میں مبتلا ہوگیا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ جمعہ کو مزید 18مشتبہ مریضوں کا داخلہ ہوا جن کے نمونے حاصل کرکے تشخیص کیلئے بھیج دئے گئے ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ آئیسولیشن وارڈ میں مریضوں کی تعداد 34ہوگئی ہے جن میں 16پہلے سے ہی کورونا وائرس میں مبتلا ہیں جبکہ جمعہ کو مزید 18داخل کئے گئے ۔ اوڑی میں مثبت قرار دئے گئے دونوں اشخاص نے جموں کے ضلع سانبہ میں 13مارچ کو منعقد کی گئی ایک کانفرنس میں حصہ لیا تھا ۔ ایس ڈی ایم اوڑی ریاض احمد ملک نے بتایا ’’ دونوں نے سانبہ سے لوٹنے کے بعد 17مارچ کو مسجد نور اوڑی میں ایک اجتماع کا انعقاد کیا جس میں 120افراد شامل ہوئے ‘‘۔ ریاض احمد ملک نے بتایا کہ تمام لوگوں کی تلاش کا کام شروع کردیا گیا ہے اور ان لوگوں کی گھروں میں سکریننگ کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اوڑی کے 7نمونوں کو تشخیص کیلئے بھیجا گیا تھا جن میں 2مثبت، 2منفی جبکہ 3کا ابھی انتظار ہے۔ جمعہ کومثبت قرار دئے گئے چوتھے مریض کا تعلق سرینگر کے چھتہ بل علاقے سے ہے اور وہ صدر اسپتال سرینگر میں زیر علاج تھا۔ سی ڈی اسپتال سرینگر کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر محمد سلیم ٹاک نے بتایا ’’ 4نئے مشتبہ مریضوں کو اسپتال میں داخل کیا گیا جبکہ اسپتال سے مثبت قرار دئے گئے مریض کو بھی سی ڈی اسپتال منتقل کیا گیا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ پہلے مثبت قرار دئے گئے 18مریضوں میں سے 2کی رپورٹ منفی آئی ہے اور رپورٹ منفی آنے کے بعد سنیچر کو انہیں قرنطینہ کیلئے کشمیر نرسنگ ہوم منتقل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سی ڈی اسپتال کے آئیسولیشن وارڈ میں رہنے والے مریضوں کی کل تعداد 10ہوگئی ہے۔ ڈاکٹر محمد سلیم ٹاک نے بتایا ’’ شعبہ مائکروبائولاجی کو بھیجے گئے 24نمونوں میں سے ایک کی رپورٹ مثبت آئی ہے جبکہ 23منفی آئے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ لیبارٹری میں مزید 34نمونوں کی تشخیص ہونا ابھی باقی ہے اور اُمید ہے کہ سنیچر کو مزید 34مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں موصول ہونگی‘‘۔ 
 
 

بارہمولہ منتقل کئے گئے کرناہ کے 6 مشتبہ افراد

۔36رشتہ دارہوم قارنطین میں 

رابطہ میں آئے 297افراد زیر نگرانی

سرینگر /اشفاق سعید /کرناہ کے 6مشتبہ مریضوں کو بارہمولہ منتقل کرنے کے بعد انکے 36رشتہ داروں اور انکے رابطہ میں آئے دیگر افراد کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔ ان میں سے ابھی تک ایک کا ٹیسٹ کیا جاچکا ہے جو منفی آیا ہے۔ادھر بیرون ممالک اور ملک سے باہر کی ریاستوں سے جو قریب تین سو کے قریب کرناہ آئے انہیں بھی طبی زیر نگرانی رکھا گیا ہے۔ایس ڈی ایم کرناہ ڈاکٹر بلال محی الدین نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ جن 6 مشتبہ لوگوں کو انتظامیہ نے بارہمولہ منتقل کیا ہے ان میں سے ابھی تک ایک شہری کا ٹسٹ منفی آیا ہے او ر ان 6افراد کے 36رشتہ داروں کو بھی ہوم قارنطین میں رکھا گیا ہے، جہاں ان کا طبی معائینہ کیا جاتا ہے ۔اس کے علاقے 297افراد جو ان 6افراد کے رابطہ میں آئے ہیں، ان کی لسٹ بھی بنائی گئی ہے ،جنہیں ضرورت پڑنے پر ڈگری کالج کے قارنطین سنٹر میں بھرتی کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کرناہ میں چار ہوم قارنطین سنٹر قائم کئے گئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ڈگری کالج کرناہ میں 120بستروں پر مشتمل قارنطین سنٹر قائم کیا گیا ہے ۔ ڈاکٹر بلال نے کہا کہ علاقے میں 5کنٹرول روم قائم کئے گئے ہیں جس میں ایک کنٹرول روم بیرون ریاستوں سے یہاں کام کرنے کیلئے آئے مزدوروں کیلئے بھی ہے ۔
 
 
 

جموں کشمیر میں 34 علاقے ریڈ زون قرار

بلال فرقانی
 
سرینگر//حکام نے کہا ہے کہ جموں کشمیر کے 34علاقوں کومحدود نقل و حمل کا علاقہ’’ ریڈ زون‘‘ قرار دیا گیا ہے ، جن میں کشمیر کے 24اور جموں کے 10علاقے شامل ہیں۔حکومتی ترجمان رہت کنسل نے بتایا کہ جموں کشمیر میں 34علاقوں کو ریڈ زون میں رکھا گیا ہے ،اور یہ وہ علاقے یا زون ہیں، جہاں  سے کورونا وائرس کے مثبت کیس سامنے آئے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ ان میں سے 24کشمیر جبکہ  جموں کے 10علاقوں میںجموں ضلع کے 4 راجوری میں 5اور ادھم پورمیں ایک علاقے کو کورنا وائرس کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد ریڈ زون میں رکھا گیا ہے ۔محدود نقل و حمل کا علاقہ(ریڈ زون) کی نشاندہی اس رہائشی کالونی کی سرحد سے کی گئی ہے،جہاں سے کورئونا وائرس میں مبتلا کیس سامنے آئے ہیں جبکہ اضافی5کلو میٹر کے دائرے والے علاقے کو اس کی حد قرار دیا گیا ہے۔
 

تازہ ترین