عوام کی راحت کیلئے ٹھوس اقدامات ضروری:این سی

1 اپریل 2020 (37 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//جموںوکشمیر نیشنل کانفرنس نے کہا ہے کہ عالمگیر وباء کورونا وائرس سے پیدا شدہ صورتحال کاعام لوگوں پر براہ راست اثر روکنے کیلئے انتظامیہ پر فرض بنتا ہے کہ وہ عوام کی راحت رسانی میں مزید سرعت لائے اور زمینی سطح پر لوگوں کو درپیش مسائل و مشکلات کا ازالہ کرنے کیلئے کارگر اور ٹھوس اقدامات کرے۔ پارٹی کے ترجمان عمران نبی ڈار نے ایک بیان میںکہا کہ لاک ڈائون کے دوران اس بات کو یقینی بنانا ضروری ہے کہ لوگوں کو ضروریاتِ زندگی اُنکی دہلیز پر دستیاب اور تمام سہولیات بآسانی میسر ہوں۔ غذائی اجناس کی فراہمی کے علاوہ اس بات کو بھی یقینی بنانا ضروری ہے کہ بیماروں کو علاج و معالجہ کی سہولیات میسر ہوں اور ادویات کی سپلائی ہر حال میں جاری رہنی چاہئے۔ اس کے علاوہ ہر ایک جگہ پر ایمرجنسی کی صورت میں ایمبولنسوں کی دستیابی بھی ہونی چاہئے۔ ترجمان نے حکومت سے پُرزور اپیل کی کہ غریبی کی  سطح سے نیچے زندگی بسر کرنے والے کنبوں کو مفت راشن اور مالی امداد پہنچانے کیلئے جنگی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ 8ماہ سے جاری بے چینی اور غیر یقینیت کے دوران پہلے ہی یہاں اقتصادی اور معاشی بدحالی کا عالم تھا اور اس دوران مزدور، کاریگر، دکاندار حضرت اور پرائیویٹ سیکٹر میں کام کرنے والے نان شبینہ کے محتاج بن گئے تھے۔ انتظامیہ کو چاہئے کہ ایسے کنبوں کی بھر پور مالی امداد کی جائے جن کا روزگار لاک ڈائون سے متاثر ہوا ہے۔ترجمان نے انتظامیہ پر زوردیا کہ چھوٹے ہسپتالوں، ہیلتھ سینٹروں، سب ہیلتھ سینٹروں اور ڈسپنسریوں پر طبی و نیم طبی عملے کی حاضری کو یقینی بنانے کے علاوہ ضروری ساز و سامان اور ادویات بھی میسر رکھی جائیں تاکہ لوگوں کو اپنے اپنے علاقوں میں ہی علاج و معالجہ کی سہولیات میسر ہوں۔ پارٹی نے عوام سے اپیل کی کہ وہ سرکاری احکامات پر عمل پیرا ہوکر اس مہلک اور وبائی بیماری کیخلاف جنگ میں اپنا اپنا رول نبھائی اور کسی بھی صورت میں کورونا وائرس کے پھیلائو کا ذریعہ نہ بنیں۔
 

تازہ ترین