نجی اسکولوں کی انجمنوں کامشترکہ بیان | پرائیویٹ اسکول طالبعلموں سے فیس کاتقاضانہ کریں

30 مارچ 2020 (12 : 12 AM)   
(      )

مانیٹرنگ ڈیسک
سرینگر// جموں میں کئی سکولوں کی طرف سے موجودہ بحرانی صورتحال کے دوران بھی طالب علموں پر فیس ادا کرنے کیلئے دبائو ڈالنے کا نوٹس لیتے ہوئے جموں کشمیر پرائیویٹ سکولز کارڈی نیشن کمیٹی اور پرائیویٹ سکولز ایسو سی ایشن آف جموں کشمیر نے سبھی سکولوں سے کہاہے کہ وہ آزمائش کی موجودہ گھڑی میں طالب علموں سے فیس کا تقاضا کرنے سے گریز کریں۔دونوں انجمنوں نے کہا ہے کہ موجودہ وقت مجموعی طور پر پورے سماج کیلئے ایک چیلنج ہے ۔دونوں انجمنوں کے سربراہان جی این وار اور رامیشور منہاس نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا’’اس وقت ہم سب ایک سنگین صورتحال سے دوچار ہیں جو ہماری سلامتی کیلئے ہی ایک خطرہ ہے،یہ وقت تجارت کا نہیں ہے،کیونکہ لوگ پہلے ہی بہت سارے اخراجات کا شکار ہیں،ہمار ی کوشش ہونی چاہئے کہ کسی طرح لوگوں کی مدد کریں، اس کے برعکس نہیں‘‘۔انہوں نے کہا کہ جموں میں قائم چند سکولوں کے طرز عمل کا سنجیدہ نوٹس لیا گیا ہے۔اُن کا کہنا تھا’’ہمیں معلوم ہوا ہے کہ CBSCپڑھانے والے کچھ سکولوں نے طالب علموں کو فیس جمع کرانے کی نوٹس جاری کی ہے،ہم نے پہلے ہی سکولوں کو موجودہ حالات میںفیس جمع کرنے سے اجتناب کیلئے کہا ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ اگر حکومت کی طرف سے بھی کوئی ایڈوائزری جاری کی جاتی ہے تو وہ اس پر بھی عمل کریں گے۔دونوں  انجمنوں نے کہا ہے کہ وہ حکومت کی خیراتی سرگرمیوں میں تعاون کرنے کیلئے بھی تیار ہیں۔
 

تازہ ترین