تازہ ترین

جتنا محدود، اُتنا محفوظ | سخت اقدامات کیلئے معافی

لاک ڈائون کے بغیر چارہ نہ تھا، زندگی اور موت کی جنگ ہے: مودی

30 مارچ 2020 (12 : 12 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
 نئی دہلی //وزیر اعظم نریندر مودی نے 21دن کے ملک گیر لاک دائون کے اچانک اعلان کے بعد ملک بھر میں لوگوں، ملازمین ، کارکنوں اور مزدوروں کو درپیش مشکلات پر عوام سے معافی  مانگ لی۔ انہوں نے ماہانہ پروگرام’ من کی بات‘ میں قوم کے نام نشریئے میں کہا کہ کورونا کیخلاف جنگ غیر معمولی اہمیت کی حامل ہے، لہٰذا سخت اور غیر متوقع فیصلے لینے ہی تھے۔ انہوں نے کہا ’’ وائرس کیخلاف جنگ لڑنے کے سلسلے میںسماجی دوری اختیار کرنا پہلا قدم ہے، لیکن اسکا یہ ہر گز مطلب نہیں کہ ہم سماجی طور پر ایک دوسرے کیساتھ رابطے کم کریں‘‘۔ انہوں نے مزید کہاکہ بحران کی اس گھڑی میں ہمیں غریب اور بھوکے لوگوں کی مدد کرنی چاہئے، یہ ہماری تہذیب و ثقافت ہے۔انہوں نے بی اداروں میں کام کررہے ڈاکٹروں، نرسوں، طبی عملے کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا’’ میں خراج تحسین پیش کرتا ہوں انہیں خود کو وقف کرنے کیلئے کام کررہے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا’’ لوگ سوچتے ہونگے کہ میں کس قسم کا وزیر اعظم ہوں،لیکن لاک ڈائون ہمارے لئے آخری حل تھا‘‘۔انہوں نے کہا ’’ بہت سارے لوگ اب بھی لاک ڈائون کی خلاف ورزی کررہے ہیں،، یہ بہت دکھ کی بات ہے،دنیا بھر میں بہت سارے لوگوں نے ایسی ہی غلطی کی،جو لاک ڈائون کی خلاف ورزی کررہے ہیں وہ اپنی زندگیوں کیساتھ کھیل رہے ہیں‘‘۔وزیر اعظم کا کہناتھا کہ یہ زندگی اور موت کی جنگ ہے اور کورونا وائرس کو ہرانا کیلئے وقت پر لاک ڈائون کا فیصلہ لینے کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں تھا ۔انہوں نے کہا ’’ سخت اقدامات اٹھانے کیلئے میں معذرت خواہ ہوں،جن سے آپکو مشکلات پیش آئیں، خاصکر غریب لوگوں کو،میں جانتا ہوں کہ آپ میں کئی  مجھ سے ناراض بھی ہونگے، لیکن جنگ جیتنے کیلئے ایسے سخت ترین اقدامات اٹھانے لازمی تھے‘‘۔انہوں نے کہا کہ لاک ڈائون سخت قدم ہے لیکن اگر یہ قدم نہیں اٹھایا جاتا تو بحران مزید تیزی سے بڑھتا۔ اس بیماری کے انفیکشن سے نجات کا یہی ایک طریقہ تھا۔مودی نے کہا کہ اس اقدام سے غریب بہت متاثر ہوا ہے۔ ان کے سامنے بڑا بحران پیدا ہوا ہے ۔وزیر اعظم نریندر مودی نے 'من کی بات' پروگرام میں  لوگوں سے آنے والے کئی دن صبر بنائے رکھنے کی اپیل کی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں لکشمن ریکھا کی پیروی کرنی ہی ہے۔وزیر اعظم نے کوروناوائرس کے انفیکشن کو روکنے کیلئے نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن سے ہوئی پریشانی کیلئے لوگوں، خاص کر مزدوروں اور کم آمدنی والے لوگوں سے اتوار کومعافی مانگتے ہوئے ملک واسیوں سے کورونا کو ہرانے کیلئے ڈاکٹروں کی صلاح ماننے اور لاک ڈاؤن کا پالن کرنے کی اپیل کی۔ مودی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس نے پوری دنیا کو بحران میں ڈال دیا ہے اور اس کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے ملک میں لاک ڈائون کرنا پڑا جس کی وجہ سے بہت سے لوگوں خاص طور سے غریبوں کو دقت ہو رہی ہے۔ لہٰذا میں ان سے معذرت خواہ ہوں۔
 

تازہ ترین