بھارت میں تعداد 562تک پہنچ گئی

۔24گھنٹوں کے دوران کیسوں کی تعداد میں معمولی کمی واقع

26 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
نئی دہلی//  انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ کے اعدادوشمار میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ تین روز سے ملک بھر میں لاک ڈائون سختی کیساتھ نافذ کرنے کے  بعد کرونا کیسوں میں معمولی کمی آگئی ہے۔ بیان کے مطابق گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران 57کیس سامنے آئے جو اس سے قبل 24گھنٹوں کے دوران سامنے آنے والے کیسوںکی تعداد سے کم ہے۔ جو 67 تھی۔ انڈین کونسل نے کہا ہے کہ ابھی اس پر خوش ہونے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ پچھلے 5روز میں بھارت میں کرونا وائرس کیسوں کی تعداد اس سے قبل کے 5روز کے دوران دوگنی ہوگئی ہے۔ انکا کہنا ہے کہ اگر گذشتہ 5روز کی رفتار جاری رہتی تو اس ہفتے کے اختتام پر بھارت میں کرونا کیسوں کی تعداد 1000 سے تجاوز کر جائے گی۔ ادھر بھارت بھر میںکورونا وائرس سے متاثرہ کیسوں کی تعداد 562 ہوگئی ہے۔ نئے کیس جموں کشمیر، تلنگانہ، پنجاب، مہاراشٹرا، کرناٹک، گجرات، راجستھان ، اتر پردیش اور منی پور میں رجسٹر ہوئے ہیں۔ مرکزی وزارت صحت  کے مطابق فی الوقت ملک بھر میں 512کیس تصدیق شدہ ہیں، 40لوگوں کو رخصت کیا گیا ہے جبکہ 10امواتیں بھی ہوچکی ہیں۔کیرالا سب سے زیادہ متاثر ریاست ہے جہاں 109کیس سامنے آئے ہیں مہاراشٹرا میں 101کرونا وائرس کے مریض ہیں۔کرناٹک میں 46اور تلنگانہ میں 35ہیں۔ تامل ناڈو میں 18، اتر بردیش میں 35گجرات میں33اور دہلی میں 30 مریض ہیں۔جموں کشمیر میں11،لداخ میں13 کیس سامنے آئے ہیں۔مغربی بنگال، مدھیہ پردیش اور آندھرا پردیش میں 9نو کیسز ہیں۔ ہماچل پردیش اور بہار میں تین تین، اڈیسہ میں 2،پوڈیچری، منی پور اور چھتس گڑھ میں ایک ایک کیس سامنے آئے ہیں۔وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے ملک بھر میں 21روزہ مکمل لاک ڈائون کا آغاز بدھ سے ہوگیا ہے۔ ملک میں سبھی گھریلو اور بین الاقوامی اڑانیں معطل ہیں، ٹرینیں بند کردی گئی ہیں، سبھی ریاستوں میں پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی ہے حتیٰ کہ بین ریاستی ٹرانسپورٹ بھی بند ہے۔ ملک میں ہر طرح کے س۵رکاری دفاتر چاہیے سرکاری ہوں یا پرائیویٹ بند کئے گئے ہیں صرف لازمی سروسز کے دفاتر کھلے ہیں۔ فیکٹریاں، کارخانے، ہر طرح کی کمپنیاں بند کردی گئیں ہیں۔تعلیمی ادارے پہلے ہی بند کئے گئے تھے۔

تازہ ترین