جیلوں میں نظربندقیدیوں کو رہا کیاجائے:حسنین مسعودی،التجامفتی

24 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

 سرینگر//جموںوکشمیر کی سیاسی پارٹیوں نے کورنا وائرس کے پیش نظر سبھی قیدیوں کی رہائی اور فو ر جی موبائیل انٹرنیٹ خدمات کی بحالی کا مطالبہ کیا۔ یو پی آئی کے مطابق ممبر پارلیمنٹ اننت ناگ حسنین مسعودی نے مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کو خط کے ذریعے آگاہ کیا کہ جموںوکشمیر یوٹی اور ملک کی مختلف ریاستوں میں قید کشمیریوں کو فوری طورپر رہا کیا جائے ۔ انہوںنے کہاکہ کورنا وائرس کے پیش نظر قیدیوں کی رہائی ناگزیر ہے کیونکہ اگر ایسا نہیں کیا گیا تو اس سے وائرس پھیلنے کا خدشہ ہے۔ انہوںنے کہاکہ چونکہ پورے ملک میں ٹراول ایڈوائزری جاری کی گئی ہے لہذا اس صورت میں والدین کیسے اپنے لخت جگروں کے ساتھ ملاقات کرنے کیلئے جا سکتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ والدین کو موجودہ صورتحال میں راحت دینے کی اشد ضرورت ہے۔ حسنین مسعود ی نے وزیر داخلہ کو بتایا کہ فی الحال سبھی قیدیوں کو رہا کیا جائے ۔ ممبر پارلیمنٹ نے وزیر داخلہ سے جموںوکشمیر میں فو ر جی انٹرنیٹ خدمات کی بحالی کا بھی مطالبہ کیا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اس وقت سبھی کالج اور اسکول بند ہیں لہذا بچوں کو انٹرنیٹ کے ذریعے ہی آن لائن پڑھایا جا رہا ہے جس کو مد نظر رکھتے ہوئے فور جی سروس کی بحالی ناگزیر ہے۔ حسنین مسعودی نے وزیر داخلہ کو بتایا کہ پہلے مرحلے پر ملک کی مختلف ریاستوں میں نظر بند سبھی کشمیری قیدیوں کو وادی منتقل کیا جائے کیونکہ کورنا وائرس کے پیش نظر والدین اپنے بچوں کے ساتھ ملاقات کرنے سے قاصر ہے کیونکہ سبھی ریاستوں نے ٹرول ایڈوائزری جاری کی ہوئی ہے۔  ادھر محبوبہ مفتی کی بیٹی التجا مفتی نے بھی مرکزی حکومت سے سبھی قیدیوں بشمول اُن کی ماں کی رہائی کا مطالبہ کیا۔ انہوںنے کہاکہ کورنا وائرس کے پیش نظر سبھی قیدیوں اور لیڈران کو رہا کیا جائے۔ انہوںنے کہاکہ ملک میں کورنا وائرس تیسرے سٹیج پر پہنچ گیا ہے لہذا اس وائرس کے پھیلنے کا خدشہ لاحق ہے جس کو مد نظر رکھتے ہوئے مرکزی حکومت کو سبھی قیدیوں کو رہا کرنا چاہئے جیسا کہ دوسرے کورنا وائرس متاثرہ ممالک نے کیا ہے۔ 

تازہ ترین