تازہ ترین

کشتواڑمیں آرایس ایس رہنماکی ہلاکت | خصوصی عدالت میں8 جنگجوئوں کے خلاف چالان پیش

21 مارچ 2020 (00 : 12 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر //قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے ) نے کشتواڑ میںآر ایس ایس لیڈر چندرکانت شرمااور اُس کے پی ایس او، کی ہلاکت میں ملوث آٹھ حزب جنگجوئوں کے خلاف خصوصی عدالت میں چالان پیش کیا۔ یو پی آئی کے مطابق کشتواڑ میں آر ایس ایس لیڈر چندر کانت شرما اور اُس کے پی ایس او، راجندر کمار کی ہلاکت میں ملوث 8حزب جنگجوئوں کے خلاف این آئی اے نے جموں کی خصوصی عدالت میں چارج شیٹ پیش کیا۔ این آئی اے کے مطابق اسامہ بن جاوید عرف اُسامہ ، ہارون عباس وانی ، ظاہر حسین ، نوشاد احمد بٹ ، ناشر احمد شیخ عرف ناصر ، آزاد حسین بگوان ، پرویز احمد اور رستم جو کہ حزب المجاہدین نامی عسکری تنظیم کے ساتھ وابستہ تھے ،کے خلاف عدالت میں چالان پیش کیا گیا ہے۔ این آئی اے کا مزید کہنا ہے کہ اُسامہ بن جاوید عرف اُسامہ 28فروری 2019کے روز بٹوٹ رام بن میں ایک تصادم کے دوران جاں بحق ہوا جبکہ ہارون عباس وانی کو یکم جنوری 2020اور ظاہر حسین کو 28ستمبر 2019کو تصادم آرائیوں کے دوران مار گرایا گیا ۔ این آئی اے چالان میں درج ہے کہ اُسامہ بن جاوید کشتواڑ میں حزب کا کمانڈر تھا اور اُس نے اپنے ساتھی کے ساتھ مل کر آر ایس ایس لیڈر کو قتل کرنے کا منصوبہ بنایا تاکہ ایک مخصوص طبقے کو خوف و ہراس میں مبتلا کیا جاسکے۔ این آئی اے کا مزید کہنا تھا کہ مارے گئے جنگجو کشتواڑ میں عسکریت کو مضبوط کرنے میں بھی پیش پیش رہے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ چارچ شیٹ میں جن دیگر افراد کا نام ہے وہ مہلوک جنگجوئوں کی مدد و اعانت کے کام پر مامور تھے اور اُن کیلئے وہ گاڑیاں ، موبائیل فون اور دوسرے سامان مہیا رکھتے تھے۔ بتادیں کہ گرفتار افراد کے خلاف پہلے 302,307,392,109آر پی سی 120,34ایکٹ کے تحت کیس درج کیا گیا ہے اور اُن کے خلاف یو اے پی کی دفعات 16,17,18,20,38,39کے تحت بھی کیس درج ہے۔