عوامی وفود کا ڈاکٹر فاروق سے ملنے کا سلسلہ جاری

موجودہ نازک دور میں مذہبی ہم آہنگی کو بنائے رکھنے پر زور

تاریخ    19 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   


سرینگر//7ماہ کی نظربندی سے رہائی پانے کے بعد مسلسل چھٹے روز بھی کل پارٹی لیڈران، عہدیداران ، معزز شہریوں اور عوامی وفود کا صدرِ نیشنل کانفرنس سے ملنے کا سلسلہ جاری رہا۔ اس موقعے پر وفود سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ نیشنل کانفرنس کو روز او ل سے ہی لوگوں کی پشت پناہی حاصل رہی ہے اور عوامی تعاون و اشتراک کی بدولت ہی آج بھی نیشنل کانفرنس ایک چٹان کی طرح قائم و دائم ہے اور تینوں خطوں کے عوام دلوں میں بستی ہے۔ ہند، مسلم اور سکھ اتحاد پر زور دیتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ ریاست کا آپسی بھائی چارہ پوری دنیا کیلئے مثال رہا ہے اور موجودہ نازک دور میں ہمیں مذہبی ہم آہنگی اور رواداری کو بنائے رکھنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے لوگ بہت زیادہ مصائب و مشکلات سے دوچار ہیں۔ ہر ایک لحاظ سے مشکلات کے بھنور میں پھنسے ریاستی عوام پر اب کورونا وائرس کی صورت میں ایک اور مصیبت ٹوٹ پڑی ہے۔ ایسے میں ہمیں بارگاہِ الٰہی کی طرف رجوع کرنے کے ساتھ ساتھ ضروری احتیاطی تدابیر کرنے کی بھی ضرورت ہے۔ جن علاقوں کے وفود ڈاکٹر فاروق سے ملاقی ہوئے اُن میں کولگام ،ہندوارہ، بارہمولہ، بانڈی پورہ، ترال، پلوامہ، سرینگر ، شوپیان اور سمبل قابل ذکر ہیں۔ اس دوران پارٹی کی سینئر لیڈ رو سابق وزیر سکینہ ایتو، غلام حسن راہی، ایڈوکیٹ نیلوفر مسعود، ماسٹر عبدالعزیز، مشتاق احمد گورو کے علاوہ کانگریس لیڈران کا ایک وفد بھی ملاقی ہوا۔
 

تازہ ترین