پونچھ میں آر پار گولہ باری | متعدد مکانات کو جزوی نقصان

18 مارچ 2020 (00 : 12 AM)   
(      )

حسین محتشم+جاوید اقبال
پونچھ//ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول کے شاہپور، ،کیرنی، مندھار ، قصبہ کیساتھاساتھ مینڈھر اور منکوٹ سیکٹروں میں گولہ باری کا تبادلہ ہوا ۔گذشتہ روز دیر رات گئے دونوں ممالک کی افواج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق پاکستانی فوج نے پیر اور منگل کی درمیانی شب حد متارکہ کے شاہپور، ،کیرنی، مندھار اور قصبہ سیکٹر میں بھارتی فوج کی چوکیوں اور رہائشی علاقوں کو نشانہ بنایا۔انہوں نے بتایا کہ بھارتی فوج نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین گولہ باری کا تبادلہ وقفہ وقفہ سے صبح ہو نے تک جاری رہا۔ دفاعی ذرائع نے بتایا کہ پاکستانی فوج کی طرف سے سرحد پار سے ہونے والی فائرنگ کا موثر جواب دیا گیا‘۔ ہند و پاک افواج کے درمیان ہونے والی گولہ باری میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے لیکن گولہ باری کی زد میں آئے رہائشی مکانوں کو شدید نقصان ہوا ہے۔ نمبردار امتیاز احمد اور احمد دین ولد جلال الدین نے کشمیرعظمی کو بتایا کہ گزشتہ شب ہونے والی گولہ باری کی زد میں آکر گاؤں کے مقامی شخص محمد مدثر ولد نور محمد،محمد شکور ولد محمد دین شیخ ،قلم دین ولد شمس دین، جمالدین ولد نور محمد اور محمد قیوم ولد محمد دین کے رہائشی مکانات کو شدید نقصان پہنچا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جانب سے رہائشی علاقوں  کو بھی نشانہ بنایا جاتا ہے جس کی وجہ سے عام لوگوں کا نقصان کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔ اسی طرح گزشتہ صبح چھ بجے مینڈھر اور منکوٹ سیکٹروں میں پاکستانی افواج کی جانب سے فوجی چوکیوں اور رہائشی علا قوں میں ایک گھنٹے تک شدید فائرنگ کی گئی جس کی وجہ سے لوگ کئی گھنٹوں تک اپنے گھروں میں محصور ہو کرہ رہ گئے ۔لوگوں نے انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ سرحدی علا قوں میں ابھی تک بنکروں کی تعمیر مکمل ہی نہیں کی جاسکی جس کی وجہ سے اچانک سے شرو ع ہونے والی فائرنگ کی وجہ سے وہ کئی گھنٹوں تک گھروں میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہتے ہیں ۔انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سرحدی علا قوں میں جلداز جلد بنکروں کی تعمیر عمل میں لائی جائے ۔
 

تازہ ترین