ناظم زراعت نے سچیت گڑھ آرگینک باسمتی کلسٹر کا معائینہ کیا

تاریخ    9 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   


جموں //ناظم زراعت پی ایس راٹھورنے پیر کے روز یہاں سچیت گڑھ آرگنک باسمتی کلسٹر(SBRC)   میں اعلیٰ معیار کے آرگینک باسمتی چاول کے پیداوار میں کی جا رہی سر گرمیوں کا معاینہ کیا ۔انکے ہمراہ چیف اگریکلچرل افسر جموں ایف اے بھٹ اور ایگرو نامٹکس ایس اے ایس رین و دیگر فیلڈ افسرانبھی تھے۔بستی کوروتانہ میں معائنہ کرنے کے بعد انہوں نے کہا سبز کھاد کیلئے دھیانچھا فصل زمین کی زرخیزیت میں اضافہ کرتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ نے دھیانچھا فصل  بیج کے 51کوئینٹل 80 فیصدی سبسڈی پر مہیا کئے ہیں۔ انہوںنے اس موقعہ پر بتایا کہ SBRC کے آرگنک باسمتی اگانے والوں کیلئے اگریکلچر اینڈ پراسیسڈ فوڈپروڈکٹس ایکسپورٹ ڈیولپمنٹ اتھارٹی  (APEDA) کے اشتراک سے جلد ہی ایک تربیتی پروگرام منعقد کیا جائے گا، تاکہ آرگنک باسمتی اگانے والوں کو فیلڈ مارکیٹنگ اور برآمد  کرنے کے حالیہ طریقہ اکر کے بارے میں جانکاری ہو۔ یہ بات قابل ذکرہے کہ سچیت گڑھ آرگنک باسمتی کلسٹر(SBRC)   شالی پیدا کرنے کے 570 ہیکٹر پر پھیلی ہوئی ہے،جو 2016-17 میں آر ایس پورہ میں لانچ کی گئی،تاکہ کسانوں کو خوشبو دار باسمتی چاول کے پیداوار میں اضافہ ہو،تاکہ ساسے برا ٓمد کرنے سے اعلیٰ قیمت وصول ہو جائے۔اس موقعہ پر کسانوں نے متعدد مسائل ابھارے بشمول سرحد کے آخری گائوں میں نہر کے پانی کی عدم دستیابی کا مسلہ بھی اُٹھایا ،جس پر ناظم زراعت نے یہ معاملہ متعلقہ حکام کے ساتھ اُٹھانے کی یقین دہانی کی۔بعدا زاں ، ناظم زراعت نے سب ڈویژنل اگریکلچرل آفس ،آر ایس پورہ میں افسروں و فیلڈ عملہ کے ساتھ اجلاس منعقد کیا ،جس میں انہیں حالیہ تکنیک متعارف کی گئی۔اس موقعہ پر سب ڈویژنل اگریکلچر افسر روشن لعل بھگت، ایس ایم ایس راجن وارکو، ایس ایم ایس ونو دکنڈل،  اے ای او آر ایس پورہ اشونی کمار جوجرا کے علاوہ متعدد افسراں و فیلڈ عملہ بھی موجود تھا ۔
 

تازہ ترین