تازہ ترین

چناب کے تینوں اضلاع میں برف و باراں،عام زندگی متاثر،سردی میں اضافہ

کھڑی تحصیل ہیڈ کواٹر سمیت کئی رابطے مسلسل منقطع، مہور۔گول سڑک رابطہ بھی ہنوز منقطع،عوام پریشان

تاریخ    24 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


عاصف بٹ
ضلع کشتواڑ کے بالائی علاقہ جات میں جم کربرفباری جبکہ میدانی علاقہ جات میں موسلادھاربارشوں سے عام زندگی بری طرح مفلوج ہوکر رہ گئی۔ جہاں جمعہ کو ضلع کے بالائی و میدانی علاقہ جات میں بارشیں ہوئی وہی سنیچر کو د ن بھر موسم ابرآلودرہاجبکہ ایتوار کو صبح سے ہی بالائی علاقہ جات میں برفباری کا سلسلہ شروع ہوا جو دن بھر جاری رہا جس دوران بالائی علاقہ جات میں کئی انچ تازہ برف جمع ہوئی۔ کشتواڑ کے دورافتادہ علاقہ جات مڑواہ ، واڑون ، دچھن ، کیشوان، چھاترو، چنگام ، سنتھن، مرگن ، پاڈر و دیگر مقامات پر کئی انچ تازہ برف جمع ہوئی جس سے ان علاقہ جات میں عام زندگی بری طرح مفلوج ہوکر رہ گئی اور لوگ گھروں کے اندر ہی محصور ہورکر رہ گئے۔مقامی لوگوں نے انتظامیہ سے مشکل حالات سے نمٹنے کیلئے ہر ممکنہ مدد فراہم کرنے کی اپیل کی ہے۔ان علاقہ جات میں بجلی کی عدم دستیابی کے سبب عوام کو کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ضلع کے میدانی علاقہ جات میں بارشوں کا سلسلہ دن بھر وقفے وقفے سے جاری رہا جسکے سبب سردی کی شدت میں بھی اضافہ ہوا اورلو گوں نے گھروں میں رہنے کو ہی ترجیح دی۔ بارشوں کے سبب قصبہ کی سڑکیں و گلی کوچے زیر آب آئے جسکے سبب نالیوں کا گندہ پانی سڑکوں پر جمع ہوگیا جسے چلنے میں کافی مشکلات پیش آئیں۔

محمد تسکین 

 سب ڈویژن بانہال کے کھڑی ، مہو منگت ، ترنہ ، ترگام ، سراچی ، پوگل پرستان ، کنڈہ ، سینا بتی ، مالیگام ، النباس اور نیل وغیرہ کے پہاڑی علاقوں میں ہفتے سے ایک فٹ سے زائد تازہ برفباری ہوئی ہے جس کی وجہ سے کھڑی مہو ، چملواس نیل اور بنکوٹ۔ منگت سمیت کئی رابطہ سڑکوں کی بحالی مزید تاخیر کا شکار ہوگئی  ہے۔ یہ رابطہ سڑکیں پچھلی برفباری کی وجہ سے منقطع ہوگئی تھیں اور انتظامیہ کی طرف سے بحالی کا کام شروع کرنے کے باوجود تازہ برفباری کی وجہ سے رابطہ سڑکوں کی بحالی ممکن نہیں ہو سکی ہے۔ اس دوران ریلوے تعمیراتی ایجنسی ارکان انٹرنیشنل کے زیر کنٹرول ناچلانہ۔ کھڑی رابطہ سڑک کا ایک بڑا حصہ ہرنیہال کے مقام پرپھر سے ڈھہ گیا ہے جس کی وجہ سے تحصیل ہیڈا کواٹر کھڑی کا رابطہ باقی ضلع سے منقطع ہوا ہے اور کھڑی مہو منگت کی ہزاروں کی آبادی محصور ہو کر رہ گئی ہے۔ مقامی لوگوں کا الزام ہے کہ ہرنیہال کے مقام سڑک کا ایک بڑا حصہ پچھلے کئی سال سے نکل رہا ہے اور ریلوے تعمیراتی کمپنی اس مقام پر مرمت کے نام لاکھوں روپئے کی رقم مبینہ طور پڑپ کر چکی ہے لیکن ناچلانہ۔ کھڑی سڑک کی حالت جوں کی توں ہے۔  

زاہدبشیر

گول وملحقہ جات میں تیسرے روزبھی برف باری اوربارشوں کاسلسلہ جاری رہاجس دوران گول کے تمام سڑک رابطے مسدودہوکررہ گئے۔اس دوران دگن ٹاپ پرتین فٹ کے قریب تازہ برف باری کی وجہ سے مہورگول سڑک رابطہ منقطع ہوچکاہے۔گول بازارمیں ایک فٹ کے قریب برف جمع ہوئی ہے جبکہ اس دوران ڈھیڈہ داچھن۔ گاگرہ کلی مستا۔گول موئلہ۔ مہاکنڈ وغیرہ کاسڑک رابطہ منقطع ہوا۔وہیں سنگلدان۔ داڑم۔اندھ وغیرہ۔علاقوں میں تین رو زسے لگاتار بارشیں ہورہی ہیں۔ برف باری اوربارشوں کے دوران دوسرے روز گول کے بہت سارے علاقے گھپ اندھیرے میں ڈوبے ہوئے ہیں۔

اشتیاق ملک

ضلع ڈوڈہ میںہفتہ کی شب ڈوڈہ، بھدرواہ، ٹھاٹھری ،گندوہ،بھلیسہ ،بھدرواہ ،عسر کے بالائی علاقوں میں ہلکی برفباری و بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا جو اتوار کو بھی وقفے وقفے سے جاری رہا۔مسلسل برفباری و بارشوں سے جہاں درجہ حرارت میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے وہیں عوامی مشکلات میں اضافہ ہوا ہے جبکہ پہلے سے ہی خستہ حال سڑکیں مزید ناگفتہ بہہ و پکڈنڈی راستے ،گلی کوچے و نکاسی نظام تباہ ہوئے ہیں۔اس دوران متعدد علاقوں سے ملی تفصیلات کے مطابق بالن لکڑی کے ساتھ ساتھ تیل خاکی کی بھی سخت قلت پائی جاتی ہے جبکہ بیشتر علاقوں میں پانی کی سکیمیں ناکارہ ہوچکی ہیں اور بجلی کے ترسیلی نظام کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ادھر انتظامیہ نے لوگوں سے خراب موسم کے دوران سفر نہ کرنے و کسی بھی ایمرجنسی کے دوران قائم کئے گئے کنٹرول روم کے نمبرات پر رابطہ کرنے کا مشورہ دیا ہے۔واضح رہے کہ دو ہفتے قبل ہوئی بھاری برفباری و بارشوں سے وادی چناب میں سینکڑوں تعمیرات کو جزوی نقصان پہنچا تھا جبکہ سڑک، پانی و بجلی نظام بھی بری طرح متاثر ہوا تھا۔
 

تازہ ترین