تازہ ترین

مارکیٹ میں غیر ملکی سیبوں کی یلغار

تاجراتحادفروٹ گرورس ایسوسی ایشن کے مطالبات کی حامی

تاریخ    15 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


سرینگر//باغبانی صنعت کو جموں کشمیر کی معیشت کیلئے شہ رگ قرار دیتے ہوے کشمیر ٹریڈ الائینس کے صدر اعجاز شہدار نے مرکزی حکومت اور لیفٹیننٹ گورنر انتظامیہ پر زور دیا کہ وہ اس شعبے اور کاروبار کو بچانے کیلئے عملی اقدامات کریں ۔اعجاز شہدار نے کہا کہ ایرانی سیبوں کے بازار میں آنے سے اس شعبے سے تعلق رکھنے والے تاجروں اور باغ مالکان کو نا قابل برداشت خسارے کا سامنا کرنا  پڑے گا۔اعجاز شہدار نے کشمیر ویلی فروٹ گرورس ڈیلرس ایسو ایشن کے صدر بشیر احمد بشیر کی طرف سے پیش کئے گئے مطالبات کی حمایت کا اعلان کرتے ہوے کہا کہ تاجربرادری انکی پشت پر ہے۔انہوں نے کہا کہ ما بعد سیلاب وادی کی معیشت پہلے ہی تباہ ہوچکی ہے اور اس طرح کے معاملات سے معیشی حالت تباہی کے دہانے پر پہنچ جاے گی۔کشمیر ٹریڈرس الائنس  کے صدر نے  کہا کہ جہاں مرکزی حکومت  میڈ ان انڈیا اور خود کفیل بھارت کی طرفدداری اور وکالت کرتی ہیں، وہی ایرانی سیبوں کی بازاروں میں موجودگی اس پہل پر سوالیہ  نشان لگاتی ہے۔شہدار نے کہا کہ کشمیری سیب پٹیوں پر18 فیصد جی ایس ٹی  عاید کیا گیا ہے، جس کی وجہ سے بازاروں میں انہیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
 

تازہ ترین