تازہ ترین

شاہراہ 3روز بعد ٹریفک کیلئے بحال

۔ 3500درماندہ گاڑیاں چھوڑ دی گئیں

تاریخ    15 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


محمد تسکین
بانہال // جموں سرینگر شاہراہ پر 3روز بعد یکطرفہ ٹریفک کیلئے بحال کی گئی۔ جمعہ کی سہ پہر دیر گئے تک قریب 3500گاڑیاں وادی کی طرف چھوڑ دی گئیں جو درماندہ تھیں۔شاہراہ پر آج یعنی سنیچر کو جموں سے صرف چھوٹی مسافر و پرائیویٹ گاڑیوں کو چلنے کی اجازت ہوگی۔جمعہ کی صبح چھوٹی مسافر گاڑیوں کو  پہلے میتراہ کی سابقہ شاہراہ کے راستے اور بعد میں موجودہ شاہراہ کے ذریعے چلنے کی اجازت دی گئی تھی  مہاڑ رام بن کی پسی  صاف کرکے جمعہ کی دوپہر بعد تک کم از کم اڑھائی ہزار مال گاڑیوں کو وادی کی طرف جانے کی اجازت دی گئی ۔ جمعہ کی صبح سے ہی بانہال اور قاضی گنڈ فورلین ٹنل سے شیر بی بی کے درمیان سڑک پر پیدا ہوئی پھسلن کی وجہ سے مال اور مسافر بردار ٹریفک کی نقل و حرکت سست رہی اور گاڑیاں کئی گھنٹوں تک جام میں پھنسی رہیں۔ سپر انٹنڈنٹ آف پولیس شبیر احمد ملک نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ مہاڑ کے مقام پر پسیوں کے گرنے کا سلسلہ جمعرات دیر رات تھم گیا۔ جموں سے کشمیر جانے والی قریب اڑھائی ہزار مال گاڑیوں کو وادی کی طرف اور دوپہر بعد وادی سے جموں جانے والی گاڑیوں کو جانے کی اجازت دی گئی۔ جمعہ شام تک ساڑھے تین ہزار سے زائد گاڑیاں چھوڑ دی گئیں۔ ہفتے کے روز چھوٹی مسافرر گاڑیوں کو جموں سے سرینگر کی طرف چلنے کی اجازت دی جائے گی  اور شاہراہ کی بہتر صورتحال کے پیش نظر جمعہ کی شام سے وادی  سے جموں کی طرف دو ہزار سے زائد درماندہ ٹرکوں کو جموں کی طرف جانے کا منصوبہ ہے ۔

تازہ ترین