کورونا لہر کا قہر| 7ماہ بعد 5اموات، 1966متاثر

وادی میں 1077، سرینگر416کیساتھ سر فہرست،جموں میں889،ضلع خاص میں 434

تاریخ    14 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //تقریباً7ماہ بعد جموں کشمیر میں 24گھنٹوں کے دوران کورونا متاثرین میں تقریباً 2000کا اضافہ ہوا اور5لوگوں کی ہلاکت ہوئی۔ اس سے قبل 30مئی  2021کومتاثر ین کی تعداد 2256درج ہوئی تھی۔جموں و کشمیر میں مجموعی تعداد 3لاکھ  50ہزار کا ہندسہ پار کرکے 3لاکھ50ہزار 167ہوگئی ہے۔ اس دوران 7ماہ بعد کورونا وائرس سے 5افراد فوت ہوئے ۔ اس سے قبل 20مئی کو  6افراد فوت ہوئے تھے۔ متوفین کی مجموعی تعد4552ہوگئی ہے۔ جمعرات کو مزید1966افراد متاثر ہوئے جن میں جموں میں 889جبکہ کشمیر میں 1077افراد تھے۔ کشمیر کے 1077افراد میں 47بیرون ریاستوں سے سفر کرکے واپس لوٹے تھے جبکہ دیگر 1030افراد مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔سرینگر ضلع میں 416، بارہمولہ میں 316، بڈگام میں 159، پلوامہ میں 12، کپوارہ میں 26، اننت ناگ میں 39، بانڈی پورہ میں 53، گاندربل میں 7 جبکہ شوپیان میں 2افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ کشمیر میں کورونا وائرس متاثرین کی مجموعی تعداد 2لاکھ 19ہزار 317ہوگئی ہے۔ اس دوران وادی میں کورونا وائرس سے 3افراد فوت ہوگئے۔ مرنے والوں میں 2بڈگام جبکہ ایک کپوارہ سے تعلق رکھتا ہے۔ کشمیر میں متوفین کی مجموعی تعداد2339ہوگئی ہے۔  جمعرات کو جموں صوبے میں کورونا وائرس سے مزید 889افرادمتاثر ہوئے ہیںجن میں 83بیرون ریاستوں سے سفر کرکے واپس جموں پہنچے جبکہ 806افراد مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔ جموں صوبے میں مثبت قرار دئے گئے 889افراد میں سب سے زیادہ ضلع جموں میں 434،ادھمپور میں 136، راجوری میں55، ڈوڈہ میں 21، کٹھوعہ میں 49، سانبہ میں 36، پونچھ میں 26، رام بن میں 6 جبکہ ریاسی میں 107افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ جموں صوبے میں متاثرین کی مجموعی تعداد 1لاکھ 30ہزار کا ہندسہ پار کرکے 1لاکھ 30ہزار 850ہوگئی ہے۔ جموں صوبے میں جمعرات کو کورونا وائرس سے مزید 2افراد فوت ہوگئے۔ مرنے والوں میں ایک کا تعلق ضلع جموں جبکہ ایک اور راجوری میں فوت ہوا ہے۔ جموں صوبے میںمتوفین کی مجموعی تعداد 2213ہوگئی ہے۔  
 
 

۔2 لاکھ 47ہزار نئے کیس 

ملک میں 380ہلاکتیں

یو این آئی
 
نئی دہلی// ملک میں کورونا وبا کی تیسری لہر کے آنے کے بعد سے ہی صورتحال دھماکہ خیز بنی ہوئی ہے ۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا کے 2 لاکھ 47 ہزار 417 نئے کیسز سامنے آئے ہیں اور اس کے ساتھ ہی فعال کیسز کی کل تعداد 11لاکھ 17ہزار 531ہوگئی ہے ۔دریں اثنا، بدھ کو 76 لاکھ 32 ہزار 24 افراد کووڈ ویکسین لگائی گئی ہیں ۔ملک میں اب تک ایک ارب 54 کروڑ 61 لاکھ 39 ہزار 465 افراد کو ویکسین دی جا چکی ہے ۔مرکزی وزارت صحت کی طرف سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق، ملک میں اس وقت متاثرہ افراد کی کل تعداد بڑھ کر تین کروڑ 63 لاکھ 17 ہزار 927 ہو گئی ہے ۔اسی عرصے میں مزید 380 مریضوں کی موت کے بعد اموات کی کل تعداد 4,85,035 ہو گئی ہے ۔دوسری طرف ملک کی 27 ریاستوں میں کورونا کے نئے ویرینٹ اومیکرون کے 5488 متاثرین پائے گئے ہیں
 
 

اسپتال آنے والے مریض و تیماردار

 ماسک اورکورنا ٹیسٹ لازمی قرار

پرویز احمد 
 
سرینگر // ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر نے تمام سرکاری اسپتالوں میں داخل ہونے والے مریضوں اور تیمارداروں کیلئے کویڈ ٹیسٹ لازمی قرار دیا ہے۔ ڈاکٹر مشتاق احمد راتھر کی جانب سے جاری کئے گئے ایک سرکیولرمیں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس اور اومیکرون کی موجود گی کے بعد تمام چیف میڈیکل آفیسروں/میڈیکل سپر انٹنڈنٹوں اور بلاک میڈیکل آفیسروں کو ہدایت دی جاتی ہے کہ وہ اپنے زیر کنٹرول کام کرنے والے طبی اداروں میں کورونا مخالف ایس او پیز اور قوائد و ضوابط کے اطلاق کو یقینی بنائیں۔ سرکیولرمیں مزید کہا گیا ہے کہ وہ اس بات کو بھی یقینی بنائیں گے کہ تب تک کسی بھی مریض یا تیماردار کو اسپتال احاطے میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہوگی جب تک نہ ان کا RATٹیسٹ ہوگا  اور ماسک نہیں لگایا ہوگا۔ ایمرجنسی صورتحال میں ضروری پروٹوکال پر عمل کیا جانا چاہئے۔ ادھرڈائریکٹر شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ ڈاکٹر پرویز احمد کول نے سکمز صورہ اور سکمز میڈیکل کالج بمنہ میں تمام شعبہ جات کے سربراہان کو ہدایت دی ہے کہ وہ ہیلتھ ورکروںکا ڈیوٹی روسٹر تیار کرتے وقت ڈاکٹروں، نیم طبی عملہ اور دیگر عملہ کو کسی بھی صورتحال سے نپٹنے کیلئے تیار رکھیں۔ 
 
 

  ائر پورٹ پر’ ماسک نہیں تو داخلہ نہیں ‘

صرف 3گھنٹے قبل آنے کی اجازت

اشفاق سعید
 
 سرینگر //سرینگر بین الاقوامی ہوائی اڈے پر ایس او پیز کی خلاف ورزی پر500روپے جرمانہ ہو سکتا ہے جبکہ مسافروں سے کہا گیا ہے کہ انہیں پرواز اڑنے سے 3گھنٹے قبل ہی ہوائی اڈے میں داخل ہونا پڑیگا ۔سرینگر ائیرپورٹ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ کووڈ دوبارہ پھیل رہا ہے اور بھیڑ والے علاقوں میں انفیکشن زیادہ ہونے خطرہ لاحق ہے ۔ڈائریکٹر ائیرپورٹ اتھارٹی کلدیب سنگھ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ تمام مسافروں سے گزارش کی گئی ہے کہ وہ ہوائی اڈے پر سماجی فاصلہ برقرار رکھیں اور ہر وقت ماسک پہنیں۔ڈائریکٹر کے مطابق "ہم نو ماسک نو انٹری کے اصول پر عمل کررہے ہیں"۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی مسافر اپنا ماسک اتارتا ہے تو 500 روپے جرمانہ ہو گا ۔انہوں نے  کہا ہے کہ ہوائی اڈے پر داخلے کا وقت پرواز کی روانگی سے پہلے زیادہ سے زیادہ 3 گھنٹے ہے جبکہ کچھ ایک مسافر پرواز سے 7-8 گھنٹے پہلے آ رہے ہیں، اس سے ہوائی اڈے پر بھیڑ بڑھ جاتی ہے اور انفیکشن کا خطرہ بھی بڑھتا ہے۔انہوں نے مسافروں سے اپیل کی کہ وہ پرواز سے صرف تین گھنٹے پہلے ہوائی اڈے پر آئیں۔
 
 

۔366علاقے کنٹونمنٹ زون قرار

سرینگرمیں190علاقوں کی نشاندہی

نیوز ڈیسک
 
سرینگر// کئی دنوں سے کوروناوائرس کے یومیہ مثبت معاملات میں تیزی کیساتھ اضافہ ہونے کے بعدوادی میں366 علاقوںکو’ کنٹونمنٹ زون‘ کے زمرے میں لاکر وہاں لازمی اقدامات روبہ عمل لائے گئے ہیں ،اورایسے سبھی علاقوںمیں سرنو کوروناٹیسٹنگ کی کارروئی شروع کردی گئی ہے ۔اُن میں سے سرینگر میں190 ،  بڈگام میں70 ، بارہمولہ میں 38، گاندربل میں38،بانڈی پورہ میں11، پلوامہ میں7، کپوارہ میں6، کولگام میں3 ، شوپیان میں 2اور اننت ناگ میں 1علاقہ شامل ہے ۔حکام نے بتایاکہ ’کنٹونمنٹ زون‘کے زمرے میں لائے گئے سبھی علاقوں میں محدود بندشیں عائد کی گئی ہیں۔
 
 

جموں میں اومیکرون کے مزید 10معاملات

پرویز احمد 
 
سرینگر/ مزید 10کیسوں کی تصدیق کے ساتھ جموں و کشمیر میں اومیکرون معاملات کی تعداد 23ہوگئی ہے جن میں 3سیاحوں سمیت 5کشمیر جبکہ 18جموں صوبے میں متاثر ہوئے ہیں۔ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز جموں ڈاکٹر سلیم الرحمان نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ جموں میں جمعرات کو کورونا وائرس کے مزید 10کیسوں کی تصدیق ہوئی ۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ 11جنوری کو جموں و کشمیر میں اومیکرون سے 8افراد متاثر ہوئے تھے جن میں کشمیرکے 5جبکہ جموں کے 3افراد شامل تھے۔ کشمیر کے 5متاثرین میں 3 سیاح اور اوڑی کی ایک خاتون اور شوپیان کا رہنے والا ایک شخص شامل ہے۔   
 
 

۔65بچوں کے ٹیسٹ مثبت

گلمرگ سرمائی کھیل بند

ٹنگمرگ/مشتاق الحسن/ گلمرگ میں بچوں کے سرمائی کھیل مقابلے فوری طور پر بند کردیئے گئے ہیں۔ گلمرگ میں یوتھ سروسزاینڈ سپورٹس کی نگرانی میں اسکیٹنگ کی تربیت حاصل کرنے کیلئے مختلف سکولوں کے بچوں کو منتخب کیا گیا ہے جو اس وقت گلمرگ میں موجود ہیں۔ لیکن جمعرات کو وادی کے مختلف علاقوں سے آنے والے 65بچوں میں کورونا وائرس پایا گیا جس کے بعد سرمائی کھیل بند کئے گئے ہیں اورمثبت آنے والے بچوں کو قرنطین کیا گیا جبکہ جموں وکشمیر برانچ بینک گلمرگ کے عملے کے چند ملازمین کے کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد برانچ کو احتیاطی طور بند کیا گیا ہے۔
 
 

جے کے بینک یونسو لنگیٹ 2روز کیلئے بند 

اشرف چراغ 
 
کپوارہ// جمو ں و کشمیر بینک شاخ یونسو وہی پورہ لنگیٹ شاخ میں کئی ملازمین کے کو ڈ ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد دو روز کے لئے بند کیا گیاہے  ۔جمعہ کے روز مزکورہ بینک شاخ کے ملازمین کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد بینک شاخ کو دو روز تک مکمل طور بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا اور اس سلسلہ میں بلاک میڈیکل لنگیٹ کی ایک طبی ٹیم یونسو روانہ کی جارہی ہے اور متاثرہ ملازمین کے ساتھ رابطے میں آئے لوگو ں کا کو رونا ٹیسٹ کیا جائے گا تاکہ اس کو مزید پھیلنے سے روکا جائے ۔

تازہ ترین