ٹرائیبل ریسرچ انسٹی ٹیوٹ نے قبائلی ایوارڈکیلئے نامزدگیوں کو مدعو کیا

تاریخ    12 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


جموں //جموں و کشمیر کے قبائلیوں کی تحقیق اور ترقی میں افراد ، این جی اوز اور اداروں کے تعاون کو تسلیم کرتے ہوئے ٹرائبل ریسرچ انسٹی ٹیوٹ جموں و کشمیر نے حکومت جموں و کشمیر کی طرف سے شروع کئے گئے قبائلی ایوارڈز کے پہلے ایڈیشن کیلئے نامزدگیوں کو مدعو کیا ہے ۔ قبائلی امور کے محکمہ کے سیکرٹری ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری جو کہ ڈائریکٹر ٹرائبل ریسرچ انسٹی ٹیوٹ جموں کا چارج بھی سنبھالے ہوئے ہیں نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے کہا کہ قبائلی ایوارڈز کا پہلا ایڈیشن قبائلی علاقوں میں افراد اور اداروں کی جانب سے دی گئی خدمات اور جموں و کشمیر یو ٹی میں قبائلیوں کی سماجی و اقتصادی حثیت کی تخلیق اور ترقی کو تسلیم کرنے کیلئے ایک قابل ذکر قدم ہے ۔ ڈاکٹر شاہد نے مزید بتایا کہ یو ٹی حکومت لفٹینٹ گورنر جموں و کشمیر کی قیادت میں منوج سنہا نے قبائلی برادریوں کی فلاح و بہبود کیلئے کئی اقدامات کئے ہیں اور اس میدان میں ان کی شراکت کو تسلیم کرنا ایک اور سنگ میل ہے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ بیسٹ ٹرائیبل اچیور کیٹیگری  کے تحت 10 ایوارڈز ( 5 مرد اور 5 خواتین ) دئیے جائیں گے جن میں 50000 روپے کا نقد انعام ، ایک توصیف اور ٹرافی جیسے کھیل ، تعلیم ، ثقافت، ادب ، سائینس ، ٹیکنالوجی ، انٹر پرنیور شپ اور حیاتیاتی تنوع جیسے مختلف شعبوں میں نمیاں کام کرنے پر دیا جائے گا ۔ اس موقع پر بتایا گیا کہ 2 ایوارڈ افراد ، پی آر آئیز ، این جی اوز اور کمیونٹی پر مبنی تنظیموں کیلئے مختص کئے گئے ہیں جو ان کی طرف سے درج فہرست قبائل کیلئے مثالی کمیونٹی خدمات انجام دے رہے ہیں اس کے علاوہ 2 بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والی گرام پنچائت بی ڈی سی ، ڈی ڈی سی جنہوں نے درج فہرست قبائل کی سماجی و اقتصادی حالت کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کیا ہے انہیں ایک لاکھ روپے کے نقد انعام ، ایک توصیف اور ٹرافی سے نوازا جائے گا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ متعلقہ پنچایت ایوارڈ کی رقم کمیونٹی کے اثاثوں کی تخلیق کیلئے استعمال کرے گی ۔ 

تازہ ترین