حکومت کالاک ڈائون کرنے پر غور

اسپتالوں میں پولیس تعینات کی جائیگی:فاروق خان

تاریخ    11 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے پیر کو کہا کہ’’ حکومت لاک ڈان نافذ کرنے پر غور کر رہی ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ ذمہ داری پوری طرح لوگوں پر ہے،اگر وہ اس بات پر عمل کرتے ہیں جو انہیں بار بار بتائی جاتی ہے، تو پھر لاک ڈان لگانے کی ضرورت نہیں ہوگی‘‘۔ ایگری کلچر کمپلیکس لال منڈی میںپریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے، مشیر نے کہا کہ اومیکرون کے خطرے کے پیش نظر، مثبت کیسوںکی شرح میں اضافہ ہوا ہے اور لوگ کویڈ سے متعلق مناسب رویہ کی پیروی نہ کرنے کے مکمل طور پر ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے کہا’’لوگوں کو اومیکرون اور کویڈسے دور رہنے کے لیے معیاری عملیاتی طریقہ کارپر عمل کرنے کی ضرورت ہے۔ان کا کہنا تھا’’ حکومت کووڈ کے پھیلا کو روکنے کے لیے اسپتالوں میں پولیس تعینات کرنے پر غور کر رہی ہے کیونکہ لوگ اسپتالوں میں کویڈ مناسب رویہ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے نظر آتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایس ایس پیز سے بات کی گئی ہے اور اگر ضرورت پڑی تو شہر کے تمام اسپتالوں کو کوویڈ معیاری عملیاتی طریقہ کار پر عمل درآمد کرانے کے لیے پولیس تعینات کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے برف باری کے بعد سرعت کے ساتھ بجلی بحال کرنے کے اپنے وعدے پر عمل کیا ،جس کے نتیجے میںپوری وادی میں بجلی کی سپلائی مکمل طور پر بحال ہوگئی جبکہ خطے کی تمام بڑی سڑکیں برف سے صاف کی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ جنوبی کشمیر میں ایک کو چھوڑ کر تمام 33 KV لائنوں کی مرمت کر دی گئی ہے جبکہ140 خراب شدہ ٹرانسفارمروں میں سے113 کو ٹھیک کیا گیا، جس سے بجلی بحال کر دی گئی ۔انہوں نے کہا کہ برف باری سے متاثر ہونے والی 5536 کلومیٹر لمبی سڑکوں میں سے 4886 کلومیٹر کو صاف کر دیا گیا ہے جبکہ کچھ اندرونی سڑکوں کو صاف کیا جا رہا ہے۔ مشیر نے کہا کہ کشمیر کے کسی بھی حصے میں پانی کی دستیابی کا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

تازہ ترین