تازہ ترین

اننت ناگ ،ہندوارہ اور سرینگر میں آتشزدگی کی وارداتیں | دو شاپنگ کمپلیکس اورتین دکانیں خاکستر،کروڑوں کی املاک تباہ

تاریخ    9 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   
(عکاسی: میر وسیم)

عارف بلوچ+اشرف چراغ+بلال فرقانی
اننت ناگ+کپوارہ+سرینگر //اننت ناگ کی نئی بستی ،کپوارہ ضلع کے زلڈارہ ہنداورہ اور سرینگر کے کورٹ روڈ علاقے میں آتشزدگی کی وارداتوں میں دو شاپنگ کملیکس اور تین دکانیں خاکستر ہوگئیں جبکہ کروڑوں روپئے کی املاک بھی تباہ ہوگئی۔نئی بستی اننت ناگ میں جمعہ اور سنیچر کی درمانی رات کو آگ کی ایک ہولناک واردات میں 2شاپنگ کمپلیکس خاکستر ہوگئے جبکہ ایک ٹاٹا موبائل کو بھی شدید نقصان پہنچا ۔آگ بارہ بجے رات پہلوان کراکری نامی چار منزلہ شاپنگ کمپلیکس کے ایک الیکٹرک سامان سے بھرے گودام سے نمودار ہوئی جس کے شعلوں نے عمارت کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔آگ کی خبر ملتے ہی فائر سروس کی کئی فائر ٹینڈرجائے واردات پر پہنچے اور آگ بجھانے کی کارروائی شروع کی ۔آتشزدگی کی یہ واردات تجارتی لحاظ سے گنجان آبادی والے علاقے میں رونما ہوئی جس کی وجہ سے آگ تیزی سے پھیل گئی اور اس نے بڑے پیمانے پر تباہی مچا دی۔آ گ لگتے ہی نزدیکی دکانداروں نے اپنی دکانوں میں موجود قیمتی سامان باہر نکالتے ہوئے دیکھا گیا۔ کئی گھنٹوں کی مسلسل جدوجہد کے بعد آ گ پر قابو پا لیا گیا تاہم اس سے قبل بڑے پیمانے پر تباہی مچ گئی اور کروڑوں روپے کی املاک خاکستر ہو چکی تھی ۔آگ کی اس تباہ کن واردات میں 2شاپنگ کمپلیکس جن میں 9دکانیں خاکستر ہوگئیں۔پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے ۔ادھر محکمہ فائر اینڈ ایمر جنسی سروسز کا کہنا ہے کہ آ گ سے ہوئے نقصان کا فوری تخمینہ لگانا ممکن نہیں اور مکمل جائزہ لینے کے بعد ہی کوئی حتمی رائے قائم کی جاسکتی ہے۔انہوں نے بتایا کہ آگ لگنے کی وجہ فوری طور معلوم نہیں ہوسکی ہے۔انہوں نے کہا کہ آگ بجھانے کے دوران فائرسروس عملے کو سخت ترین مشکلات کا سامنا کرنا پڑا اور تقریبا تین گھنٹوں بعد آگ پر قابو پایا گیا۔اُدھر شمالی ضلع کپوارہ کے زچلڈارہ ہندوارہ میں جمعہ کی شب کو ایک درزی کی دکان سے آگ نمودار ہوئی جس کے بعد لوگو ں نے آگ کے شعلے دیکھ کر جائے واردات کی طرف دو ڑ پڑے اور بچائو کاروائی شروع کی جبکہ فائر سروس ٹینڈر بھی وہا ں پہنچ گئے اور بچائو کارروائی میں شامل ہوکر بازار میں دیگر دکانو ں کو بچا لیا ۔تاہم اس واردات میں محمد سلیمان اور اس کے بھائی کی درزی کی دو دکانیں مکمل طور خاکستر ہوگئیں جن میں لاکھو ں کی املاک راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئی ۔ادھر شہرکے کورٹ روڑ لا لچوک میں الیکٹرانکس کی ایک دکا ن میں بھی دوران شب آگ لگنے کے نتیجے میں لاکھوں روپے مالیت کا ساز و سامان خاکستر ہو گیا ۔ 7اور8جنوری کی درمیانی رات کو لالچوک میں واقع ایم ایس ٹینٹ کمیونکیشن نامی دکا ن میں آگ لگ گئی اوردکان میں موجود ایل ای ڈی ،موبائل فون ،سی سی ٹی وی کیمر ے ،لیڈ پینل اور دیگر الیکٹرانک ساز وسامان راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگیا ۔آگ لگنے کی وجوہات کے حوالے سے اگر چہ فوری طور کچھ معلوم نہیں ہوسکا تاہم خد شہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ یہ آگ شارٹ سر کٹ سے لگی ہے ۔ٹینٹ کمیو نکیشن کے مالک عبید احمد نے بتایا کہ ان کی دکا ن میں آگ لگنے کے نتیجے میں ایک کروڑ روپے سے زیا دہ ما لیت کا ساز وسامان خاکستر ہو گیا ۔