متوفی اہلکاروں کے ورثاء کی مالی امداد

ڈی جی پی نے70لاکھ روپے منظور کئے

تاریخ    8 جنوری 2022 (00 : 01 AM)   


جموں // متوفی  پولیس اہلکاروں و ایس پی اوز کے اہل خانہ کی فلاح و بہبود کی اپنی کوششوں کو جاری رکھتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے 67 لاکھ روپے کی  مالی امداد منظور کی ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے علاج ومعالجہ کے اخراجات پورا کرنے کے لئے ایک پولیس اہلکار کے حق میں تین لاکھ روپے کا فلاحی قرض بھی منظور کیا۔اس سلسلے  میں پولیس ہیڈ کوارٹرز کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پولیس سربراہ نے تین پولیس اہلکاروں جو دوران ڈیوٹی علالت  کے سبب  انتقال کر گئے تھے جن میں ایس آئی محمد ظفر اللہ، اے ایس آئی نثار احمد قریشی، اور ہیڈکانسٹیبل پون شرما شامل ہیں ،کے قانونی ورثا کے حق میں فی کس22 لاکھ روپے کی خصوصی فلاحی امداد منظور کی۔ یہ خصوصی فلاحی امداد کنٹریبیوٹری پولیس ویلفیئر فنڈ سے واگزار کی گئی ہے۔ان متوفی اہلکاروں کی آخری رسومات ادا کرنے کے لیے ان کے متعلقہ ڈی ڈی اوز کے ذریعے فوری امداد کے لیے ایک ایک لاکھ روپے کی رقم  ان کے ورثا کوپہلے ہی فراہم کر دی گئی تھی۔اس کے علاوہ پولیس ہیڈ کوارٹر کی جانب سے جاری کردہ ایک اور حکم نامہ کے تحت ڈائریکٹر جنرل آف پولیس نے جموں و کشمیر پولیس پریوار فنڈ سے مارے گئے ایک پولیس اہلکار کی بیوہ کے حق میں اس کے بیٹے کے علاج اور مالی اخراجات پورا کرنے کے لیے ایک لاکھ روپے کی رقم بطورمالی امداد منظور کی ہے۔ جبکہ سنٹرل پولیس ویلفیئر فنڈ سے ایک حاضر سروس پولیس اہلکار جو ایک موذی مرض میں مبتلا ہے ،کے حق میں علاج و معالجہ کے اخراجات پورا کرنے کے لئے  03لاکھ روپے کا فلاحی قرضہ منظور کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ پولیس ہیڈ کوارٹرز کی جانب سے اپنے ملازمین اور ان کے اہل خانہ کی فلاح و بہبود کیلئے کئی ایک اسکیمیں دردست لی گئی ہیں جن سے براہ راست ہزاروں کی تعداد میں پولیس اہلکار وافسران،ایس پی اوز اور ان کے اہل خانہ بھی مستفید ہو رہے ہیں۔

تازہ ترین