۔8 ریاستوں کے گورنروں کا تبادلہ

 نئی دہلی//صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے 8ریاستوں میں نئے گورنر کی تقرری کی ہے ۔مرکزی وزیر تھاورچند گہلوت کو کرناٹک کا گورنر مقرر کیا گیا ہے ، جبکہ ہماچل پردیش کے گورنر بندارو دتاتریہ کو ہریانہ منتقل کردیا گیا ہے ۔ہماچل پردیش کے گورنر بنڈارودتاتریہ کو ہریانہ کا نیا گورنر بنایاگیا ہے جبکہ آندھراپردیش بی جے پی لیڈر ہری بابو کمبھاپاٹی کو میزورم کا نیاگورنر مقررکیاگیا ہے۔راشٹرپتی بھون کی طرف سے منگل کو جاری کردہ ایک اعلامیے کے مطابق ، صدر رام ناتھ کووند نے مسٹر گہلوت کو کرناٹک کا گورنر مقرر کیا ہے ، جبکہ مسٹر دتاتریہ کو ہماچل پردیش سے ہریانہ منتقل کردیا گیا ہے ۔مسٹر کووند نے میزورم کے گورنر پی ایس سری دھرن پلئی کو گوا کا گورنر مقرر کیا گیا ہے ۔ ان کے تبادلے کی وجہ سے میزورم میں خالی جگہ کے لئے ہری بابو کمبمپٹی مقرر کیا گیا ہے ۔ہریانہ کے گورنر ستیندر نارائن آریہ کا تبادلہ تریپورہ کردیا گیا ہے ، جبکہ تریپورہ کے گورنر رمیش بیس اب جھارکھنڈ کے گورنر کا عہدہ سنبھالیں گے ۔صدر نے منگھو بھائی چھگن بھائی پٹیل کو مدھیہ پردیش کا گورنر مقرر کیا ہے جبکہ مسٹر راجندر وشوناتھ آرلیکر ہماچل پردیش کے نئے گورنر ہوں گے ۔ ان سب کی تقرریوں اور تبادلوں کا عہدہ سنبھالنے کے دن سے نافذ ہوگا۔صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے دفتر نے کہا کہ متعلقہ نئی ذمہ داریوں کے سنبھالنے کی تاریخ سے ان نئے گورنرس کی میعاد شروع ہوگی۔آندھراپردیش بی جے پی لیڈر ہری بابو کمبھاپاٹی کو میزورم کا نیاگورنر مقررکیاگیا ہے ۔ہری بابو 2014-19کے دوران وشاکھاپٹنم کے رکن پارلیمنٹ رہے ہیں۔