۔6جنگجو اورجے سی او سمیت 2فوجی جاں بحق

۔  24گھنٹوں کے دوران سیکورٹی ایجنسیوں کی قابل تحسین کارروائیاں: آئی جی پی

 
 راجوری +پلوامہ +قاضی گنڈ// سندر بنی راجوری ،پژھل پلوامہ اور زڈورہ قاضی گنڈ کولگام میں3 خونریزمعرکہ آرائیوں  کے دوران 6جنگجو اور ایک جونیر کمیشنڈ آفیسر سمیت 2فوجی اہلکار ہلاک جبکہ ایک رہائشی مکان تباہ ہوا۔اس طرح گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران سرکردہ کمانڈر سمیت7جنگجو ئوں کی ہلاکت ہوئی۔ ادھر جنوبی کشمیر کے دو اضلاع میں جمعرات کو انٹر نیٹ خدمات بند کی گئیں جس کے نتیجے میں طلاب آن لائن کلاسز نہیں دے سکے۔

راجوری 

راجوری ضلع کے سندر بنی علاقہ میں سیکورٹی فورسز کی جانب سے شروع کی گئی تلاشی مہم کے 9ویں روز ملی ٹینٹوں اور فوج کے درمیان ہوئی فائرنگ میں 2غیر ملکی جنگجو اور جونیئر کمیشنڈ آفیسر سمیت2فوجی اہلکار ہلاک ہو گئے ۔غور طلب ہے کہ سندر بنی کے ددال گائوں میں سیکورٹی فورسز نے ایک مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع ملنے کے بعد تلاشی مہم شروع کی تھی ۔فوج نے جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ ملی ٹینٹوں کی جانب سے کی گئی دراندزی کے سلسلہ میں ایک خفیہ اطلاع موصول ہوئی تھی جسکے بعد 29جون کو سندربنی میں ایک تلاشی مہم شروع کر دی گئی تھی ۔انہوں نے بتایا کہ 8جولائی کو ملی ٹینٹوں کیساتھ ددال گائوں کے جنگلات میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس کے دوران 2غیر ملکی ملی ٹینٹ ہلاک ہوئے ہیں جبکہ ان کے قبضہ سے اسلحہ بارود بھی ضبط کر لیا گیا ہے ۔فوج کے پی آر او نے جاری بیان میں کہاکہ فائرنگ کت تبادلے میں 2فوجی اہلکار بھی ہلاک ہوئے جن کی شناخت نائب صوبدار سراجتھی ایم اور سپاہی موروپورولو جسونت ریڈی کے طورپر ہوئی ہے۔غور طلب ہے کہ گزشتہ ہفتے منگل کو شروع تلاشی مہم کے دوران رواں ہفتے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب طرفین کے مابین گولہ باری کا تبادلہ ہوا جبکہ اس سے قبل گزشتہ ہفتے ہوئی فائرنگ کے دوران ایک فوجی اہلکار زخمی ہوا تھا ۔

پلوامہ

 پلوامہ کے پژھل گائوں میں جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد 55آر آر ، 183بٹالین سی آر پی ایف اور پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ نے بدھ کی شب ساڑھے 11بجے محاصرہ کیا اور تلاشی کارروائی کا آغاز کیا۔ ابتدائی طور پر فائرنگ کا معمولی تبادلہ ہوا جس کے بعد سیکورٹی فورسز نے محصور دونوں جنگجوئوں کو ہتھیار ڈالنے کی پیش کش کی۔ قریب اڈھائی گھنٹے تک دونوں جنگجوئوں سے بار بار سرنڈر کرنے کی اپیلیں کی گئیں لیکن انہوں نے ایسا کرنے سے انکار کردیا جس کے بعد آپریشن کا آغاز کیا گیا۔لیکن اس سے قبل فورسز نے گائوں میں مقام جھڑپ کے ا ردگرد روشنیوں کا انتظام کیا۔ صبح کے وقت تک جھڑپ جاری رہی جس کے دوران فورسز نے اس مکان کو بارودی دھماکہ سے اڑا دیا جس میں دو جنگجو موجود تھے۔دھماکہ سے مکان مکمل طور پر تباہ ہوا اور بعد میں ملبہ سے دونوں جنگجوئوں کی لاشیں بر آمد کی گئیں۔پولیس نے مہلوک جنگجوئوں کی شناخت کفایت رمضان صوفی ولد محمد رمضان صوفی ساکن پدگام پورہ ڈانگر پورہ اونتی پورہ( سرگرم21دسمبر 2020) اورعنایت احمد ڈار ولد عبدالاحد ڈار ساکن سانبورہ پلوامہ( سرگرم13مئی) کے طور پر ہوئی ہے۔

کولگام

پولیس کے مطابق بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب پولیس اور فسٹ آر آر نے مشترکہ طور پر جنگجوئوں کی نقل و حرکت کے حوالے سے اطلاع ملنے کے بعد زڈورہ میر بازار میں ناکہ لگایا۔اس دوران فرہ گائوں سے زڈورہ کی طرف ایک مشتبہ گاڑی آرہی تھی، جسے دور سے ہی رکنے کا اشارہ کیا گیا، جس میں سوار 2جنگجو گاڑی سے باہر آئے اور انہوں نے اندھا دھند فائرنگ کی جس کے جواب میں فورسز نے بھی کارروائی کی اور فائرنگ کے تبادلے میں دو جنگجو جاں بحق ہوئے۔پولیس کا کہنا ہے کہ تاہم گاڑی سوار گاڑی سمیت یہاں سے فرار ہوا۔پولیس نے کہا ہے کہ بعد میں مہلوک جنگجوئوں کی شناخت نثار احمد پنڈت ولد محمد ایوب ساکن ریڈ ونی کولگام( 6مئی 2021) اورشہباز احمد شاہ ولد غلام حسن ساکن کاترسو کولگام(8جولائی 2020) کے طور پر ہوئی۔یاد رہے کہ پولیس نے بدھ کو ہی معراج الدین حلوائی عرف عبید نامی حزب المجاہدین کے اعلیٰ کمانڈر کو جاں بحق کیاتھا۔ اسی دوران مسلح جھڑپوں کے سایھ ہی کولگام اور پلوامہ ضلع میں انٹر نیٹ خدمات معطل کی گئی ۔

پولیس

انسپکٹر جنرل پولیس وجے کمار نے بتایا کہ پلوامہ اور کولگام جھڑپوںمیں جاں بحق جنگجوئوںکا تعلق لشکر سے تھا۔وجے کمار نے کہا کہ پلوامہ اور کولگام معرکوں میںمارے گئے جنگجوئوںکا تعلق عسکری تنظیم لشکر طیبہ سے تھا اور وہ چاروں مقامی تھے ۔ انہوںنے کہا کہ کولگام جھڑپ میںمارے گئے دو جنگجو سرینگر جموں شاہراہ پر بڑے حملے کو انجام دینے کی تاک میں تھے اور وہ اس کیلئے تیاری کر رہے تھے ۔ آئی جی پی نے مزید کہا کہ پولیس و سیکورٹی فورسز نے مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد دوران شب پلوامہ اور کولگام علاقوں میں جنگجوئوںمخالف آپریشن شروع کیے جس دوران انہوں نے دونوںمقامات پر کامیابی حاصل ہوئی او ر دونوں علاقوں میں مسلح جھڑپوںکے دوران چار جنگجوئوں کو ہلاک کیا گیا ۔  انسپکٹر جنرل پولیس وجے کمار نے کہا کہ وادی میں پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران پانچ جنگجو مارے گئے ہیں۔ان کا کہنا تھا’’پولیس اور دیگر سکیورٹی فورسز ان کارروائیوں کے لئے مبارکبادی کے مستحق ہیں کیوں کہ ان کے دوران ہمارا یا عوام کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا‘‘۔
 
 

راج بھون اور سیول سیکریٹریٹ جموں ’نو فلائی زون‘ قرار

جموں/ سید امجد شاہ/ ضلعی انتظامیہ جموں نے جمعرات کو راج بھون اور سول سکریٹریٹ جموں کو "نو فلائی زون" قرار دیا۔ یہ اقدام حالیہ ڈرون حملوں کے پیش نظر لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کو’’ملک دشمن عناصر" کی طرف سے خطرے کی بنا پر لیا گیا ہے۔اس سلسلے میں جاری ایک حکم نامے میں کہا گیا ہے ’’ملک دشمن عناصرحالیہ ڈرون حملوں کی وجہ سے پیدا ہونے والے حفاظتی خطرے کے پیش نظر ، راج بھون اور سول سیکرٹریٹ جموں میں حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے ضروری حفاظتی اقدامات کرنا لازمی ہیں‘‘۔یہ حکمنامہ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ جموں کے انشول گرگ نے جاری کیا ہے۔آرڈر کے مطابق راج بھون اور سول سیکرٹریٹ جموں کے اوپر فضائی حدود کو 'نو فلائی زون' قرار دیا گیا ہے جہاں ڈرون اور بغیر پائلٹ کی فضائی گاڑیوں (یو اے وی) کی پروازوں کو فوری طور پر ممنوع قرار دیا گیا ہے۔آرڈر میں مزید کہا گیا "جن علاقوں / مقامات پر مختلف تقریبات کے لئے لیفٹیننٹ گورنر کو جانا ہو،اْنہیں تقاریب کے اختتام تک'نو فلائی زون' قرار دیا گیاہے۔ڈی سی جموں کے مطابق ، ضلع جموں کے تمام علاقوں / مقامات پر ڈرون اڑانے پر مکمل پابندی ہوگی۔
 
 

 ماگام میں جنگجوئوں  کا اعانت کار گرفتار

اوڑی میں ایک اور گائیڈ حراست میں لیا گیا

ارشاد احمد+ظفر اقبال
 
گاندربل+اوڑی//پولیس نے بڈگام میں لشکرطیبہ کے ایک بالائی ورکر کو گرفتار کرکے دھماکہ خیز مواداور قابل اعتراض دستاویز برآمد کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ پولیس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ارچندھرماگام ریلوے کراسنگ پر پولیس نے ناکہ بٹھایا اور ایک شخص کو مشکوک حالت میں پایا ۔ مذکورہ شخص نے فرار ہونے کی کوشش کی تاہم اسے پکڑ لیاگیا۔ بیگ کی تلاشی کے دوران 1.2کلوگرام دھماکہ خیز مواد اور2الیکٹرانک ڈیٹونیٹر برآمد کئے گئے۔ پولیس نے گرفتار کئے گئے شہری کی شناخت دانش احمد ڈار ولدمحمد اشرف ڈار ساکن چکسری پٹن کے بطور کی ہے۔ اس سلسلہ میں پولیس نے ایف آئی آر زیر نمبر154/2021درج کرکے معاملہ کی مزید تحقیقات شروع کی ہے۔ادھربارہمولہ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے اوڑی سیکٹر میں ایک اور گائیڈ کوگرفتارکیا ۔ اس سے قبل 2جولائی کوتین نوجوانوں اورایک گائیڈ کوگرفتارکیاگیاتھا۔ پولیس  کے مطابق2جولائی کو3 نوجوان، پرویز احمد حجام نامی گائیڈ کیساتھ گوہالن سیکٹر کے راستے سرحد پار کرنے کی غرض سے پہنچے تھے۔جنہیں حراست میں لیا گیا تھا اور مذکورہ گائیڈ کی نشاندہی پراسکے ساتھی محمد مجنون شیخ ولد اقلی شیخ ساکن بونیار نامی ایک اور گائیڈ کو بھی گرفتار کر کے اس کی تحویل سے کچھ قابل اعتراض مواد برآمد کیا۔