۔5وارڈوں کے 14مقامات میں 10دنوں کیلئے بندشیں

سرینگر //ضلع انتظامیہ نے سرینگر کے 5وارڈوں کے تحت آنے والے14 علاقوں میں 10دنوں کیلئے کورونا کرفیو نافذ کردیا ہے۔ ضلع انتظامیہ کی جانب سے جاری کئے گئے حکم نامہ کے مطابق وارڈنمبر 11یعنی لال بازار، وارڈ نمبر 32حیدر پورہ، وارڈ نمبر 31چھانہ پورہ، وارڈ نمبر 27بمنہ ہمدانیہ کالونی اور وارڈ نمبر 24 بمنہ ہائوسنگ کالونی  کے علاقے شامل ہیں۔ حکم نامہ کے مطابق وارڈ نمبر 11لال بازار میںبٹہ کدل، عمر کالونی، باغوان پورہ، مولوی سٹاپ اور مل سٹاپ شامل ہیں جبکہ حیدر پورہ وارڈ نمبر 32میں شاہ انور کالونی، گرین ایونیو کالونی اور نورانی کالونی پیر باغ شامل ہے۔ اس کے علاوہ چھانہ پورہ وارڈ نمبر 31کے تحت ہمدانیہ کالونی، توحید آباد کالونی اور میتھن شامل ہیں۔ بمنہ وارڈ نمبر 27میں ہمدانیہ کالونی بمنہ، بلال کالونی اور ایس ڈی اے کالونی شامل ہے۔ ضلع انتظامیہ نے اپنے حکم نامہ میں لکھا ہے کہ پچھلے 17دنوں کے دوران کیسوں میں اضافہ کی وجہ سے انتظامیہ کو وائرس کی روکتھام کیلئے  اٹھانے پڑے ہیں۔ حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ جن علاقوں میں کورونا متاثرین کی تعداد زیادہ ہے ان علاقوں کو محدود پابندی والے علاقوں کے زمرے میں شامل کیا گیا ہے۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلائو کو روکنے کیلئے دفعہ144کے تحت لوگوں کے اجتماعات اور ٹرانسپورٹ کے نقل و حرکت کیلئے  عائد کیا گیا ہے کیونکہ جموں و کشمیر میں روزانہ مثبت آنے والے کیسوں کا 63فیصد متاثرین سرینگر ضلع سے ہیں۔ حکم نامہ مزید کہا گیا ہے کہ 9نومبر کو  رات 12بجے سے دس دنوں کیلئے کورونا کرفیو نافذ کیا گیا ہے۔ ان علاقوں میں لازمی خدمات کے علاوہ  علیحدہ کریانہ ، سبزی، گوشت اور دودھ فروخت کرنے والوں کو صبح 7بجے سے لیکر دن 11بجے تک کام کرنے کی اجازت ہوگی۔حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ سرکاری ملازمین کے نقل  و حرکت پر کوئی بھی پابندی عائد نہیں ہوگی اور ملازمین شناختی کارڈ پیش کرکے اپنے ڈیوٹیوں پر جاسکتے ہیں۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ تعمیراتی کاموں پر کوئی بھی پابندی عائد نہیں ہوگی لیکن  تمام تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ  تمام شاپنگ مال،بازار، سیلون، حجاموں کی دکانیں،  سنیما ہال، رستوران، سپورٹس کمپلکس، جیم، سیومنگ پول، پارکس اور زو بند رہیں گے۔  حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ ان علاقوں میں کسی بھی صورت میں اجتماعات کی اجازت نہیں ہوگی۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ شادیوں میں صرف 20لوگوں کو جمع ہونے کی اجازت دی جائے گی جبکہ تدفین کی رسومات میں صرف 10لوگوں کو جمع ہونے کی اجازت ہوگی۔  
 
 

شادی، سماجی اور مذہبی تقریبات

کورونا ٹیسٹنگ سہولیات دستیاب ہونگی

سرینگر /پرویز احمد /محکمہ صحت نے شادی ، سماجی مقامات اور مذہبی اجتماعات کی جگہوں میں کورونا ٹیسٹنگ سہولیات دستیاب رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیرڈاکٹر مشتاق احمد راتھر کی جانب سے جاری کئے گئے سرکیولر میں کہا گیا ہے کہ سرینگر شہر میں کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے تمام چیف میڈیکل افسروں، میڈیکل سپر انٹنڈنٹوں اور بلاک میڈیکل افسروں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ شادی، سماجی اور مذہبی تقریبات کے مقامات پر ٹیسٹنگ سہولیات قائم کرے تاکہ کورونا وائرس کیلئے وضع کئے گئے ایس او پیز کی عمل آوری کو یقینی بنایا جاسکے ۔حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ مذکورہ افسران اس حوالے سے حکمت عملی ترتیب دیں اور ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کو مطلع کریں گے۔