۔5جنگجو اور انکے معاونین گرفتار

اننت ناگ+بارہمولہ//بارہمولہ،پلوامہ اور اننت ناگ میں سیکورٹی فورسز اور جموں کشمیر پولیس نے مشتر کہ طور پر خصوصی کارروائیوں کے دوران دو سرگرم جنگجوئوں اور انکے 3معاونین کو ہتھیاروں سمیت گرفتار کیا ۔پولیس کے مطابق چیرداری بارہمولہ انکائونٹر کیس میں پولیس نے ملی ٹینٹوں کے تین ساتھیوں کو گرفتار کر کے ان سے ایک دستی بم اور 24 رانڈ برآمد کئے۔اکتوبر کے آخری ہفتے میں چیر داری حملے کے معاملے کی ایف آئی آر 232/21 کے تحت 307 آئی پی سی 7/27 اے ایکٹ کی تفتیش کے دوران، بارہمولہ پولیس نے کچھ مشتبہ افراد کے ارد گرد گھیرا تنگ کیا اور ان سے تحقیقات کے دوران ملی اطلاعات پر فورسز کی مشترکہ پارٹی نے  ملی ٹینٹوں کے 3ساتھیوں کو گرفتار کیا۔ اصغر مجید لون ولد عبدالمجید گلشن آباد آزاد گنج بارہمولہ،آصف گنائی ولد غلام رسول باغ اسلام بارہمولہ اورفیضان رسول گوجری ولد غلام رسول سید کریم بارہمولہ کو حراست میں لیا گیا۔ بالخصوص اصغر مجید کے انکشافات کی بنیاد پر مشترکہ فورسز کی پارٹی نے ایک دستی بم اور اے کے 47 کے 24 رانڈ برآمد کرلئے۔ مزید تحقیقات جاری ہیں۔ادھر پلوامہ پولیس نے پیر کے روز ایک سرگرم عسکریت پسند کو گرفتار کیا ۔گرفتار عسکریت پسند کی شناخت سرور احمد میر (22) ولد غلام محی الدین میر ساکن بٹھن کھریو کے طور پر کی گئی ۔احمد میر حال میں ہی لشکر طیبہ / ٹی آر ایف تنظیم میں شامل ہوا ہے اور وہ ایک سرگرم عسکریت پسند ہے۔ادھر جنوبی ضلع اننت ناگ میں پولیس اور3آر آرکی مشترکہ ٹیم نے عشمقام علاقے کے واہدان میں تلاشی کارروائی کے دوران ٹی آر ایف تنظیم سے وابستہ حافظ عبداللہ ملک ساکن گنجی پورہ نامی جنگجو کو ایک پستول اور 7 گولیوں سمیت گرفتار کیا ۔پولیس کے مطابق پوچھ گچھ کے دوران گرفتار جنگجو کی نشاندہی پر کٹسو جنگل سے مزید ایک اے کے 47، 02 میگزین اور 40 رانڈ  برآمد کیے گئے ۔پولیس کے مطابق جنگجو 25 ستمبر سے سرگرم تھا۔