۔4 روز بعدڈوڈہ میں موسم میں بدلاؤ | متواتر برفباری و بارشوں سے کئی تعمیرات کو پہنچا جزوی نقصان

ڈوڈہ //4روز سے جاری برفباری و بارشوں کے بعد منگل کو دوپہر تک مطلع ابر آلود رہا تاہم بعد دوپہر دوبارہ ڈوڈہ کے پہاڑی علاقوں برفباری و ہلکی بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا۔متواتر برفباری و بارشوں سے پہلے ہی عام زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ہے اور کئی تعمیرات کو بھی جزوی نقصان پہنچا ہے۔بھدرواہ، ٹھاٹھری ،گندوہ ،چلی پنگل ،کاہرہ ،فیگسو ،چرالہ ،گندنہ،بونجواہ سے مقامی لوگوں نے کہا کہ حالیہ دنوں کی بھاری برفباری سے رابطہ سڑکیں خستہ حال ہوئیں ہیں جبکہ نکاسی نظام، گلی کوچے و پگڈنڈی راستے بھی تباہ ہوئے ہیں۔نائب سرپنچ ہلارن چوہدری محمد شریف کے مطابق برفباری کے دوران عوامی مشکلات میں اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ علاقہ میں پانی کی اسکیموں کے ساتھ ساتھ بجلی کے ترسیلی نظام کو بھی نقصان پہنچا ہے جبکہ پکڈنڈی راستے تباہ ہوئے ہیں۔سرپنچ بدھلی دانش ملک کشمیر عظمیٰ کو بتایا مسلسل برفباری و بارشوں سے بالائی علاقوں میں رہائش پذیر آبادی گونا گوں مشکلات سے دوچار ہے۔ انہوں نے کہا کہ راستے بند رہنے سے غذائی اجناس کی بھی قلت پائی جاتی ہے۔ انہوں نے انتظامیہ سے برفباری کے دوران پیدا عوامی مسائل کا ترجیح بنیادوں پر ازالہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔33 کے وی کے ترسیلی نظام میں خرابی کے باعث سب ڈویژن گندوہ و ٹھاٹھری کے درجنوں دیہات میں دو روز بعد بجلی بحال کی گئی تاہم سہ پہر سے پھر بجلی کی آنکھ مچولی شروع ہوئی ہے۔بی ڈی سی چیئرمین چنگا محمد عباس راتھر ،ڈی ڈی سی کونسلر بھلیسہ چوہدری محمد اقبال کوہلی، بی ڈی سی چیئرمین جکیاس امینہ بیگم نے ضلع و مقامی انتظامیہ سے متاثرہ علاقوں میں پگڈنڈی راستوں کی مرمت کرنے و گلی کوچوں سے برف ہٹانے کے ساتھ ساتھ پانی، بجلی نظام کی بحالی و دیگر سہولیات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔