۔4جی کی بحالی پر غور کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل

نئی دہلی//مرکزاورجموں و کشمیر انتظامیہ نے جمعرات کو عدالت عظمیٰ کو مطلع کیا کہ مرکزی زیرانتظام علاقہ میں 4جی انٹرنیٹ سروس بحال کرنے پرغور کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل دی گئی ہے ۔جموں کشمیرمیں تیزرفتارانٹر نیٹ خدمات گزشتہ برس5اگست سے معطل ہیں جب مرکز نے جموں کشمیرکاخصوصی درجہ ختم اورریاست کو دومرکزی زیرانتظام علاقوں جموں کشمیراورلداخ میں تقسیم کرنے کااعلان کیا۔اٹارنی جنرل کے کے وینوگوپال نے جسٹس این وی رمنا کی سربراہی میں بنچ کوبتایا کہ حکام نے کوئی توہین نہیں کی ہے کیوں کہ انہوں نے عدالت عظمیٰ کے11 کے حکم کی تعمیل کی ہے۔جسٹس آر ایس ریڈی اورجسٹس بی آر گوائی ،جو بنچ میں شامل ہیں ،نے مرکزاورجموں کشمیرانتظامیہ کوکمیٹی کی تشکیل اور اسکی طرف سے لئے گئے فیصلوں سے متعلق تفاصیل بیان حلفی میں پیش کرنے کی ہدایت دی۔عدالت عظمیٰ مرکزی داخلہ سیکریٹری اورجموں کشمیرکے چیف سیکریٹری  اورجموں کشمیرانتظامیہ کیخلاف  11مئی کے عدالتی احکامات جن میں مرکزی زیرانتظام علاقہ میں4جی انٹر نیٹ خدمات کی بحالی پرغور کرنے کیلئے ایک کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت دی گئی تھی،کی مبینہ دانستہ عدولی کرنے پرتوہین عدالت کی ایک عرضی کی سماعت کررہاتھا۔11مئی کوعدالت عظمیٰ نے حکم دیاتھا کہ مرکزی داخلہ سیکریٹری کی سربراہی میں ایک خصوصی کمیٹی تشکیل دی جائے جوجموں کشمیرمیں 4جی انٹر نیٹ خدمات کی بحالی پرغور کرے گی۔