۔35اےگیا تو ہمارا وجود مٹ جائیگا

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ ریاست کے ہر ایک پشتینی باشندے کو اتحاد و اتفاق سے کام لینے کی ضرورت کے ساتھ ساتھ دفعہ35Aاور دفعہ370کیخلاف ہورہی سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے کیلئے آگے آنا چاہئے ۔ یہ دفعات جموں وکشمیر کی پہچان، الگ آئین اور الگ جھنڈے کو آئین ہند میں تحفظ فراہم کرتی ہیں اور ان دفعات کا محافظ بن کر دفاع کرنا ہمارا فرض بنتا ہے۔وہ پارٹی عہدیداروں کے ساتھ تبادلہ خیال کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ دفعہ35A اور 370سے ہی آج تک جموں وکشمیر کی شناخت قائم ہے اور ان کے نہ رہنے سے ہمارا وجود ختم ہوجائے گا اور ہماری تہدیب و تمدن کا کہیں نام و نشان باقی نہیں رہے گا، جس کیلئے آنے والے نسلیں ہمیں معاف نہیں کریں گی۔انہوں نے ریاست کے کونے کونے میں نیشنل کانفرنس کی جانب 35Aسے متعلق جانکاری مہم پر اطمینان کا اظہار کیا اور عوام سے اپیل کی کہ وہ جانکاری کیمپوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور 35Aکی اہمیت اور افادیت دیگر لوگوں تک بھی پہنچائیں۔