۔3ماہ میں عام انتخابات کرانا ناممکن:پاکستانی الیکشن کمیشن

یو این آئی
اسلام آباد//یو این آئی// پاکستان کے الیکشن کمیشن نے واضح کیا ہے کہ قانونی، آئینی اور دیگر چیلنجوں کے پیش نظر پارلیمنٹ تحلیل ہونے کے بعد تین ماہ کے اندر عام انتخابات کا انعقاد ممکن نہیں ہے ۔ یہ اطلاع منگل کو میڈیا میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ سے سامنے آئی ہے ۔الیکشن کمیشن نے ٹویٹ کیاکہ یہ واضح کرنا ضروری ہے کہ الیکشن کمیشن نے انتخابات کے حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے ۔ اس سے قبل میڈیا رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ الیکشن کمیشن نے پارلیمنٹ تحلیل ہونے کے بعد تین ماہ میں انتخابات کرانے سے نااہلی کا اظہار کیا ہے ۔ ڈان اخبار کے مطابق الیکشن کمیشن کے ایک سینئر عہدیدار نے کہا ہے کہ انتخابی حلقوں کی تازہ حد بندی اور ضلع اور حلقے کی بنیاد پر انتخابی فہرستوں کی تیاری بڑے چیلنجز ہیں جس کی وجہ سے عام انتخابات کے انعقاد میں تقریباً چھ ماہ کا وقت لگ سکتا ہے ۔اہلکار نے کہا کہ انتخابی عمل سے متعلق مواد کی خریداری، بیلٹ پیپرز کا بندوبست اور انتخابی عملے کی بھرتی اور تربیت بھی ایک بڑا چیلنج ہے ۔واضح رہے کہ جمعہ کو وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ صدر مملکت عارف علوی کو اسنیپ پول کرانے کی سفارش بھیج دی گئی ہے ۔